Search hadith by
Hadith Book
Search Query
Search Language
English Arabic Urdu
Search Type Basic    Case Sensitive
 

Sahih Bukhari

Agriculture

كتاب المزارعة

حَدَّثَنَا مُوسَى بْنُ إِسْمَاعِيلَ، حَدَّثَنَا جُوَيْرِيَةُ، عَنْ نَافِعٍ، عَنْ عَبْدِ اللَّهِ ـ رضى الله عنه ـ عَنِ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم أَنَّهُ حَرَّقَ نَخْلَ بَنِي النَّضِيرِ وَقَطَعَ، وَهْىَ الْبُوَيْرَةُ، وَلَهَا يَقُولُ حَسَّانُ وَهَانَ عَلَى سَرَاةِ بَنِي لُؤَىٍّ حَرِيقٌ بِالْبُوَيْرَةِ مُسْتَطِيرٌ‏.‏

Narrated `Abdullah: The Prophet (PBUH) got the date palm trees of the tribe of Bani-An-Nadir burnt and the trees cut down at a place called Al-Buwaira . Hassan bin Thabit said in a poetic verse: "The chiefs of Bani Lu'ai found it easy to watch fire spreading at Al-Buwaira." ھم سے موسیٰ بن اسماعیل نے بیان کیا ، کھ ھم سے جویریھ نے بیان کیا ، ان سے نافع نے ، اور ان سے عبداللھ بن عمر رضی اللھ عنھما نے بیان کیا کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے بنی نضیر کے کھجوروں کے باغ جلا دیئے اور کاٹ دیئے ۔ ان ھی کے باغات کا نام بویرھ تھا ۔ اور حسان رضی اللھ عنھ کا یھ شعر اسی کے متعلق ھے ۔ بنی لوی ( قریش ) کے سرداروں پر ( غلبھ کو ) بویرھ کی آگ نے آسان بنا دیا جو ھر طرف پھیلتی ھی جا رھی تھی ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 41 Hadith no 2326
Web reference: Sahih Bukhari Volume 3 Book 39 Hadith no 519


حَدَّثَنَا مُحَمَّدٌ، أَخْبَرَنَا عَبْدُ اللَّهِ، أَخْبَرَنَا يَحْيَى بْنُ سَعِيدٍ، عَنْ حَنْظَلَةَ بْنِ قَيْسٍ الأَنْصَارِيِّ، سَمِعَ رَافِعَ بْنَ خَدِيجٍ، قَالَ كُنَّا أَكْثَرَ أَهْلِ الْمَدِينَةِ مُزْدَرَعًا، كُنَّا نُكْرِي الأَرْضَ بِالنَّاحِيَةِ مِنْهَا مُسَمًّى لِسَيِّدِ الأَرْضِ، قَالَ فَمِمَّا يُصَابُ ذَلِكَ وَتَسْلَمُ الأَرْضُ، وَمِمَّا يُصَابُ الأَرْضُ وَيَسْلَمُ ذَلِكَ، فَنُهِينَا، وَأَمَّا الذَّهَبُ وَالْوَرِقُ فَلَمْ يَكُنْ يَوْمَئِذٍ‏.‏

Narrated Rafi` bin Khadij: We worked on farms more than anybody else in Medina. We used to rent the land at the yield of specific delimited portion of it to be given to the landlord. Sometimes the vegetation of that portion was affected by blights etc., while the rest remained safe and vice versa, so the Prophet (PBUH) forbade this practice. At that time gold or silver were not used (for renting the land). If they provided the seeds, they would get so-and-so much. ھم سے محمد نے بیان کیا ، کھا ھم کو عبداللھ نے خبر دی ، کھا ھم کو یحییٰ بن سعید نے خبر دی ، انھیں حنظلھ بن قیس انصاری نے ، انھوں نے رافع بن خدیج رضی اللھ عنھ سے سنا ، وھ بیان کرتے تھے کھ مدینھ میں ھمارے پاس کھیت دوسروں سے زیادھ تھے ۔ ھم کھیتوں کو اس شرط کے ساتھ دوسروں کو جوتنے اور بونے کے لیے دیا کرتے تھے کھ کھیت کے ایک مقررھ حصے ( کی پیداوار ) مالک زمین لے گا ۔ بعض دفعھ ایسا ھوتا کھ خاص اسی حصے کی پیداوار ماری جاتی اور سارا کھیت سلامت رھتا ۔ اور بعض دفعھ سارے کھیت کی پیداوار ماری جاتی اور یھ خاص حصھ بچ جاتا ۔ اس لیے ھمیں اس طرح کے معاملھ کرنے سے روک دیا گیا اور سونا اور چاندی کے بدلھ ٹھیکھ دینے کا تو اس وقت رواج ھی نھ تھا ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 41 Hadith no 2327
Web reference: Sahih Bukhari Volume 3 Book 39 Hadith no 520


حَدَّثَنَا إِبْرَاهِيمُ بْنُ الْمُنْذِرِ، حَدَّثَنَا أَنَسُ بْنُ عِيَاضٍ، عَنْ عُبَيْدِ اللَّهِ، عَنْ نَافِعٍ، أَنَّ عَبْدَ اللَّهِ بْنَ عُمَرَ ـ رضى الله عنهما ـ أَخْبَرَهُ أَنَّ النَّبِيَّ صلى الله عليه وسلم عَامَلَ خَيْبَرَ بِشَطْرِ مَا يَخْرُجُ مِنْهَا مِنْ ثَمَرٍ أَوْ زَرْعٍ، فَكَانَ يُعْطِي أَزْوَاجَهُ مِائَةَ وَسْقٍ ثَمَانُونَ وَسْقَ تَمْرٍ وَعِشْرُونَ وَسْقَ شَعِيرٍ، فَقَسَمَ عُمَرُ خَيْبَرَ، فَخَيَّرَ أَزْوَاجَ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم أَنْ يُقْطِعَ لَهُنَّ مِنَ الْمَاءِ وَالأَرْضِ، أَوْ يُمْضِيَ لَهُنَّ، فَمِنْهُنَّ مَنِ اخْتَارَ الأَرْضَ وَمِنْهُنَّ مَنِ اخْتَارَ الْوَسْقَ، وَكَانَتْ عَائِشَةُ اخْتَارَتِ الأَرْضَ‏.‏

Narrated `Abdullah bin `Umar: The Prophet (PBUH) concluded a contract with the people of Khaibar to utilize the land on the condition that half the products of fruits or vegetation would be their share. The Prophet (PBUH) used to give his wives one hundred Wasqs each, eighty Wasqs of dates and twenty Wasqs of barley. (When `Umar became the Caliph) he gave the wives of the Prophet (PBUH) the option of either having the land and water as their shares, or carrying on the previous practice. Some of them chose the land and some chose the Wasqs, and `Aisha chose the land. ھم سے ابراھیم بن منذر نے بیان کیا ، کھا ھم سے انس بن عیاض نے بیان کیا ، ان سے عبیداللھ عمری نے ، ان سے نافع نے اور انھیں عبداللھ بن عمر رضی اللھ عنھما نے خبر دی کھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم نے ( خیبر کے یھودیوں سے ) وھاں ( کی زمین میں ) پھل کھیتی اور جو بھی پیداوار ھو اس کے آدھے حصے پر معاملھ کیا تھا ۔ آپ صلی اللھ علیھ وسلم اس میں سے اپنی بیویوں کو سو وسق دیتے تھے ۔ جس میں اسی وسق کھجور ھوتی اور بیس وسق جو ۔ حضرت عمر رضی اللھ عنھ نے ( اپنے عھد خلافت میں ) جب خیبر کی زمین تقسیم کی تو ازواج مطھرات کو آپ نے اس کا اختیار دیا کھ ( اگر وھ چاھیں تو ) انھیں بھی وھاں کا پانی اور قطعھ زمین دے دیا جائے ۔ یا وھی پھلی صورت باقی رکھی جائے ۔ چنانچھ بعض نے زمین لینا پسند کیا ۔ اور بعض نے ( پیداوار سے ) وسق لینا پسند کیا ۔ حضرت عائشھ رضی اللھ عنھا نے زمین ھی لینا پسند کیا تھا ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 41 Hadith no 2328
Web reference: Sahih Bukhari Volume 3 Book 39 Hadith no 521


حَدَّثَنَا مُسَدَّدٌ، حَدَّثَنَا يَحْيَى بْنُ سَعِيدٍ، عَنْ عُبَيْدِ اللَّهِ، حَدَّثَنِي نَافِعٌ، عَنِ ابْنِ عُمَرَ ـ رضى الله عنهما ـ قَالَ عَامَلَ النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم خَيْبَرَ بِشَطْرِ مَا يَخْرُجُ مِنْهَا مِنْ ثَمَرٍ أَوْ زَرْعٍ‏.‏


Chapter: The contract of share-cropping

Narrated Ibn `Umar: The Prophet (PBUH) made a deal with the people of Khaibar that they would have half the fruits and vegetation of the land they cultivated. ھم سے مسدد نے بیان کیا ، کھا کھ ھم سے یحییٰ بن سعید نے بیان کیا ، ان سے عبیداللھ نے ، ان سے نافع نے ، اور ان سے عبداللھ بن عمر رضی اللھ عنھما نے کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے خیبر کے پھل اور اناج کی آدھی پیداوار پر وھاں کے رھنے والوں سے معاملھ کیا تھا ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 41 Hadith no 2329
Web reference: Sahih Bukhari Volume 3 Book 39 Hadith no 522


حَدَّثَنَا عَلِيُّ بْنُ عَبْدِ اللَّهِ، حَدَّثَنَا سُفْيَانُ، قَالَ عَمْرٌو قُلْتُ لِطَاوُسٍ لَوْ تَرَكْتَ الْمُخَابَرَةَ فَإِنَّهُمْ يَزْعُمُونَ أَنَّ النَّبِيَّ صلى الله عليه وسلم نَهَى عَنْهُ‏.‏ قَالَ أَىْ عَمْرُو، إِنِّي أُعْطِيهِمْ وَأُغْنِيهِمْ، وَإِنَّ أَعْلَمَهُمْ أَخْبَرَنِي ـ يَعْنِي ابْنَ عَبَّاسٍ ـ رضى الله عنهما ـ أَنَّ النَّبِيَّ صلى الله عليه وسلم لَمْ يَنْهَ عَنْهُ، وَلَكِنْ قَالَ ‏"‏ أَنْ يَمْنَحَ أَحَدُكُمْ أَخَاهُ خَيْرٌ لَهُ مِنْ أَنْ يَأْخُذَ عَلَيْهِ خَرْجًا مَعْلُومًا ‏"‏‏.‏

Narrated `Amr: I said to Tawus, "I wish you would give up Mukhabara (Sharecropping), for the people say that the Prophet forbade it." On that Tawus replied, "O `Amr! I give the land to sharecroppers and help them. No doubt; the most learned man, namely Ibn `Abbas told me that the Prophet (PBUH) had not forbidden it but said, 'It is more beneficial for one to give his land free to one's brother than to charge him a fixed rental." ھم سے علی بن عبداللھ نے بیان کیا ، کھا ھم سے سفیان بن عیینھ نے بیان کیا ، کھ عمرو بن دینار نے کھا کھ میں نے طاؤس سے عرض کیا ، کاش ! آپ بٹائی کا معاملھ چھوڑ دیتے ، کیونکھ ان لوگوں ( رافع بن خدیج اور جابر بن عبداللھ رضی اللھ عنھم وغیرھ ) کا کھنا ھے کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے اس سے منع فرمایا ھے ۔ اس پر طاؤس نے کھا کھ میں تو لوگوں کو زمین دیتا ھوں اور ان کا فائدھ کرتا ھوں ۔ اور صحابھ میں جو بڑے عالم تھے انھوں نے مجھے خبر دی ھے ۔ آپ کی مراد ابن عباس رضی اللھ عنھما سے تھی کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے اس سے نھیں روکا ۔ بلکھ آپ نے صرف یھ فرمایا تھا کھ اگر کوئی شخص اپنے بھائی کو ( اپنی زمین ) مفت دیدے تو یھ اس سے بھتر ھے کھ اس کا محصول لے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 41 Hadith no 2330
Web reference: Sahih Bukhari Volume 3 Book 39 Hadith no 523


حَدَّثَنَا ابْنُ مُقَاتِلٍ، أَخْبَرَنَا عَبْدُ اللَّهِ، أَخْبَرَنَا عُبَيْدُ اللَّهِ، عَنْ نَافِعٍ، عَنِ ابْنِ عُمَرَ ـ رضى الله عنهما ـ أَنَّ رَسُولَ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم أَعْطَى خَيْبَرَ الْيَهُودَ عَلَى أَنْ يَعْمَلُوهَا وَيَزْرَعُوهَا، وَلَهُمْ شَطْرُ مَا خَرَجَ مِنْهَا‏.‏


Chapter: Share-cropping with the Jews

Narrated Ibn `Umar: Allah's Messenger (PBUH) gave the land of Khaibar to the Jew's on the condition that they work on it and cultivate it, and be given half of its yield. ھم سے محمد بن مقاتل نے بیان کیا ، انھوں نے کھا کھ ھم کو عبداللھ بن مبارک نے خبر دی ، انھیں عبیداللھ نے خبر دی ، انھیں نافع نے اور ان سے عبداللھ بن عمر رضی اللھ عنھما نے بیان کیا کھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم نے خیبر کی زمین یھودیوں کو اس شرط پر سونپی تھی کھ اس میں محنت کریں اور جوتیں بوئیں اور اس کی پیداوار کا آدھا حصھ لیں ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 41 Hadith no 2331
Web reference: Sahih Bukhari Volume 3 Book 39 Hadith no 524



@2019 Copyrights: if you have any objection regarding any shared content on pdf9.com please click here.