Search hadith by
Hadith Book
Search Query
Search Language
English Arabic Urdu
Search Type Basic    Case Sensitive
 

Sahih Bukhari

Agriculture

كتاب المزارعة

حَدَّثَنَا أَحْمَدُ بْنُ الْمِقْدَامِ، حَدَّثَنَا فُضَيْلُ بْنُ سُلَيْمَانَ، حَدَّثَنَا مُوسَى، أَخْبَرَنَا نَافِعٌ، عَنِ ابْنِ عُمَرَ ـ رضى الله عنهما ـ قَالَ كَانَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم‏.‏ وَقَالَ عَبْدُ الرَّزَّاقِ أَخْبَرَنَا ابْنُ جُرَيْجٍ قَالَ حَدَّثَنِي مُوسَى بْنُ عُقْبَةَ عَنْ نَافِعٍ عَنِ ابْنِ عُمَرَ أَنَّ عُمَرَ بْنَ الْخَطَّابِ ـ رضى الله عنهما ـ أَجْلَى الْيَهُودَ وَالنَّصَارَى مِنْ أَرْضِ الْحِجَازِ، وَكَانَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم لَمَّا ظَهَرَ عَلَى خَيْبَرَ أَرَادَ إِخْرَاجَ الْيَهُودِ مِنْهَا، وَكَانَتِ الأَرْضُ حِينَ ظَهَرَ عَلَيْهَا لِلَّهِ وَلِرَسُولِهِ صلى الله عليه وسلم وَلِلْمُسْلِمِينَ، وَأَرَادَ إِخْرَاجَ الْيَهُودِ، مِنْهَا فَسَأَلَتِ الْيَهُودُ رَسُولَ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم لِيُقِرَّهُمْ بِهَا أَنْ يَكْفُوا عَمَلَهَا وَلَهُمْ نِصْفُ الثَّمَرِ، فَقَالَ لَهُمْ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ نُقِرُّكُمْ بِهَا عَلَى ذَلِكَ مَا شِئْنَا ‏"‏‏.‏ فَقَرُّوا بِهَا حَتَّى أَجْلاَهُمْ عُمَرُ إِلَى تَيْمَاءَ وَأَرِيحَاءَ‏.‏


Chapter: The lease can be continued according to the approval of both the parties

Narrated Ibn `Umar: `Umar expelled the Jews and the Christians from Hijaz. When Allah's Messenger (PBUH) had conquered Khaibar, he wanted to expel the Jews from it as its land became the property of Allah, His Apostle, and the Muslims. Allah's Messenger (PBUH) intended to expel the Jews but they requested him to let them stay there on the condition that they would do the labor and get half of the fruits. Allah's Messenger (PBUH) told them, "We will let you stay on thus condition, as long as we wish." So, they (i.e. Jews) kept on living there until `Umar forced them to go towards Taima' and Ariha'. ھم سے احمد بن مقدام نے بیان کیا ، انھوں نے کھا کھ ھم سے فضیل بن سلیمان نے بیان کیا ، ان سے موسیٰ بن عقبھ نے بیان کیا کھ انھیں نافع نے خبر دی ، اور ان سے حضرت عبداللھ بن عمر رضی اللھ عنھما نے بیان کیا کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے ( جب خیبر پر ) فتح حاصل کی تھی ( دوسری سند ) اور عبدالرزاق نے کھا کھ ھم کو ابن جریج نے خبر دی ، کھا کھ مجھ سے موسیٰ بن عقبھ نے بیان کیا ، ان سے نافع نے ، ان سے ابن عمر رضی اللھ عنھما نے کھ عمر بن خطاب رضی اللھ عنھ نے یھودیوں اور عیسائیوں کو سر زمین حجاز سے نکال دیا تھا اور جب نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے خیبر پر فتح پائی تو آپ نے بھی یھودیوں کو وھاں سے نکالنا چاھا تھا ۔ جب آپ کو وھاں فتح حاصل ھوئی تو اس کی زمین اللھ اور اس کے رسول صلی اللھ علیھ وسلم اور مسلمانوں کی ھو گئی تھی ۔ آپ کا ارادھ یھودیوں کو وھاں سے باھر کرنے کا تھا ، لیکن یھودیوں نے رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم سے درخواست کی کھ آپ ھمیں یھیں رھنے دیں ۔ ھم ( خیبر کی اراضی کا ) سارا کام خود کریں گے اور اس کی پیداوار کا نصف حصھ لے لیں گے ۔ اس پر رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ اچھا جب تک ھم چاھیں تمھیں اس شرط پر یھاں رھنے دیں گے ۔ چنانچھ وھ لوگ وھیں رھے اور پھر عمر رضی اللھ عنھ نے انھیں تیماء اور اریحاء کی طرف جلا وطن کر دیا ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 41 Hadith no 2338
Web reference: Sahih Bukhari Volume 3 Book 39 Hadith no 531


حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ مُقَاتِلٍ، أَخْبَرَنَا عَبْدُ اللَّهِ، أَخْبَرَنَا الأَوْزَاعِيُّ، عَنْ أَبِي النَّجَاشِيِّ، مَوْلَى رَافِعِ بْنِ خَدِيجٍ سَمِعْتُ رَافِعَ بْنَ خَدِيجِ بْنِ رَافِعٍ، عَنْ عَمِّهِ، ظُهَيْرِ بْنِ رَافِعٍ قَالَ ظُهَيْرٌ لَقَدْ نَهَانَا رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم عَنْ أَمْرٍ كَانَ بِنَا رَافِقًا‏.‏ قُلْتُ مَا قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم فَهْوَ حَقٌّ‏.‏ قَالَ دَعَانِي رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم قَالَ ‏"‏ مَا تَصْنَعُونَ بِمَحَاقِلِكُمْ ‏"‏‏.‏ قُلْتُ نُؤَاجِرُهَا عَلَى الرُّبُعِ وَعَلَى الأَوْسُقِ مِنَ التَّمْرِ وَالشَّعِيرِ‏.‏ قَالَ ‏"‏ لا تَفْعَلُوا ازْرَعُوهَا أَوْ أَزْرِعُوهَا أَوْ أَمْسِكُوهَا ‏"‏‏.‏ قَالَ رَافِعٌ قُلْتُ سَمْعًا وَطَاعَةً‏.‏


Chapter: To share the yields and fruits

Narrated Rafi` bin Khadij: My uncle Zuhair said, "Allah's Messenger (PBUH) forbade us to do a thing which was a source of help to us." I said, "Whatever Allah's Messenger (PBUH) said was right." He said, "Allah's Messenger (PBUH) sent for me and asked, 'What are you doing with your farms?' I replied, 'We give our farms on rent on the basis that we get the yield produced at the banks of the water streams (rivers) for the rent, or rent it for some Wasqs of barley and dates.' Allah's Messenger (PBUH) said, 'Do not do so, but cultivate (the land) yourselves or let it be cultivated by others gratis, or keep it uncultivated.' I said, 'We hear and obey.' ھم سے محمد بن مقاتل نے بیان کیا ، کھا کھ ھم کو عبداللھ بن مبارک نے خبر دی ، انھیں امام اوزاعی نے خبر دی ، انھیں رافع بن خدیج رضی اللھ عنھ کے غلام ابونجاشی نے ، انھوں نے رافع بن خدیج بن رافع رضی اللھ عنھ سے سنا ، اور انھوں نے اپنے چچا ظھیر بن رافع رضی اللھ عنھ سے ، ظھیر رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے ھمیں ایک ایسے کام سے منع کیا تھا جس میں ھمارا ( بظاھر ذاتی ) فائدھ تھا ۔ اس پر میں نے کھا کھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم نے جو کچھ بھی فرمایا وھ حق ھے ۔ ظھیر رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ مجھے رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم نے بلایا اور دریافت فرمایا کھ تم لوگ اپنے کھیتوں کا معاملھ کس طرح کرتے ھو ؟ میں نے کھا کھ ھم اپنے کھیتوں کو ( بونے کے لیے ) نھر کے قریب کی زمین کی شرط پر دے دیتے ھیں ۔ اسی طرح کھجور اور جَو کے چند وسق پر ۔ یھ سن کر آپ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ ایسا نھ کرو ۔ یا خود اس میں کھیتی کیا کرو یا دوسروں سے کراؤ ۔ ورنھ اسے یوں خالی ھی چھوڑ دو ۔ رافع رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ میں نے کھا ( آپ صلی اللھ علیھ وسلم کا یھ فرمان ) میں نے سنا اور مان لیا ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 41 Hadith no 2339
Web reference: Sahih Bukhari Volume 3 Book 39 Hadith no 532


حَدَّثَنَا عُبَيْدُ اللَّهِ بْنُ مُوسَى، أَخْبَرَنَا الأَوْزَاعِيُّ، عَنْ عَطَاءٍ، عَنْ جَابِرٍ ـ رضى الله عنه ـ قَالَ كَانُوا يَزْرَعُونَهَا بِالثُّلُثِ وَالرُّبُعِ وَالنِّصْفِ فَقَالَ النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ مَنْ كَانَتْ لَهُ أَرْضٌ فَلْيَزْرَعْهَا أَوْ لِيَمْنَحْهَا، فَإِنْ لَمْ يَفْعَلْ فَلْيُمْسِكْ أَرْضَهُ ‏"‏‏.‏ وَقَالَ الرَّبِيعُ بْنُ نَافِعٍ أَبُو تَوْبَةَ حَدَّثَنَا مُعَاوِيَةُ، عَنْ يَحْيَى، عَنْ أَبِي سَلَمَةَ، عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ ـ رضى الله عنه ـ قَالَ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ مَنْ كَانَتْ لَهُ أَرْضٌ فَلْيَزْرَعْهَا أَوْ لِيَمْنَحْهَا أَخَاهُ، فَإِنْ أَبَى فَلْيُمْسِكْ أَرْضَهُ ‏"‏‏.‏

Narrated Jabir: The people used to rent their land for cultivation for one-third, one-fourth or half its yield. The Prophet said, "Whoever has land should cultivate it himself or give it to his (Muslim) brother gratis; otherwise keep it uncultivated." Narrated Abu Huraira: Allah's Messenger (PBUH) said, "Whoever has land should cultivate it himself or give it to his (Muslim) brother gratis; otherwise he should keep it uncultivated." ھم سے عبیداللھ بن موسیٰ نے بیان کیا ، انھوں نے کھا کھ ھم کو امام اوزاعی نے خبر دی ، اور ان سے جابر رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ صحابھ تھائی ، چوتھائی یا نصف پر بٹائی کا معاملھ کیا کرتے تھے ۔ پھر نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ جس کے پاس زمین ھو تو اسے خود بوئے ورنھ دوسروں کو بخش دے ۔ اگر یھ بھی نھیں کر سکتا تو اسے یوں ھی خالی چھوڑ دے ۔ اور ربیع بن نافع ابوتوبھ نے کھا کھ ھم سے معاویھ بن سلام نے بیان کیا ، ان سے یحییٰ بن ابی کثیر نے ، ان سے ابوسلمھ نے اور ان سے ابوھریرھ رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا ، جس کے پاس زمین ھو تو وھ خود بوئے ورنھ اپنے کسی ( مسلمان ) بھائی کو بخش دے ، اور اگر یھ نھیں کر سکتا تو اسے یوں ھی خالی چھوڑ دے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 41 Hadith no 2340, 2341
Web reference: Sahih Bukhari Volume 3 Book 39 Hadith no 533


حَدَّثَنَا قَبِيصَةُ، حَدَّثَنَا سُفْيَانُ، عَنْ عَمْرٍو، قَالَ ذَكَرْتُهُ لِطَاوُسٍ فَقَالَ يُزْرِعُ، قَالَ ابْنُ عَبَّاسٍ ـ رضى الله عنهما ـ إِنَّ النَّبِيَّ صلى الله عليه وسلم لَمْ يَنْهَ عَنْهُ وَلَكِنْ قَالَ ‏"‏ أَنْ يَمْنَحَ أَحَدُكُمْ أَخَاهُ خَيْرٌ لَهُ مِنْ أَنْ يَأْخُذَ شَيْئًا مَعْلُومًا ‏"‏‏.‏

Narrated `Amr: When I mentioned it (i.e. the narration of Rafi` 'bin Khadij: no. 532) to Tawus, he said, "It is permissible to rent the land for cultivation, for Ibn `Abbas said, 'The Prophet (PBUH) did not forbid that, but said: One had better give the land to one's brother gratis rather than charge a certain amount for it.' " ھم سے قبیصھ نے بیان کیا ، کھا کھ ھم سے سفیان ثوری نے بیان کیا ، ان سے عمرو بن دینار نے بیان کیا کھ میں نے اس کا ( یعنی رافع بن خدیج رضی اللھ عنھ کی مذکورھ حدیث کا ) ذکر طاؤس سے کیا تو انھوں نے کھا کھ ( بٹائی وغیرھ پر ) کاشت کرا سکتا ھے ابن عباس رضی اللھ عنھما نے فرمایا تھا کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے اس سے منع نھیں کیا تھا ۔ البتھ آپ صلی اللھ علیھ وسلم نے یھ فرمایا تھا کھ اپنے کسی بھائی کو زمین بخشش کے طور پر دے دینا اس سے بھتر ھے کھ اس پر کوئی محصول لے ۔ ( یھ اس صورت میں کھ زمیندار کے پاس فالتو زمین بیکار پڑی ھو ) ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 41 Hadith no 2342
Web reference: Sahih Bukhari Volume 3 Book 39 Hadith no 534


حَدَّثَنَا سُلَيْمَانُ بْنُ حَرْبٍ، حَدَّثَنَا حَمَّادٌ، عَنْ أَيُّوبَ، عَنْ نَافِعٍ، أَنَّ ابْنَ عُمَرَ ـ رضى الله عنهما ـ كَانَ يُكْرِي مَزَارِعَهُ عَلَى عَهْدِ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم وَأَبِي بَكْرٍ وَعُمَرَ وَعُثْمَانَ وَصَدْرًا مِنْ إِمَارَةِ مُعَاوِيَةَ‏.‏ ثُمَّ حُدِّثَ عَنْ رَافِعِ بْنِ خَدِيجٍ، أَنَّ النَّبِيَّ صلى الله عليه وسلم نَهَى عَنْ كِرَاءِ الْمَزَارِعِ، فَذَهَبَ ابْنُ عُمَرَ إِلَى رَافِعٍ فَذَهَبْتُ مَعَهُ، فَسَأَلَهُ فَقَالَ نَهَى النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم عَنْ كِرَاءِ الْمَزَارِعِ‏.‏ فَقَالَ ابْنُ عُمَرَ قَدْ عَلِمْتَ أَنَّا كُنَّا نُكْرِي مَزَارِعَنَا عَلَى عَهْدِ رَسُولِ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم بِمَا عَلَى الأَرْبِعَاءِ وَبِشَىْءٍ مِنَ التِّبْنِ‏.‏

Narrated Nafi`: Ibn `Umar used to rent his farms in the time of Abu Bakr, `Umar, `Uthman, and in the early days of Muawiya. Then he was told the narration of Rafi` 'bin Khadij that the Prophet (PBUH) had forbidden the renting of farms. Ibn `Umar went to Rafi` and I accompanied him. He asked Rafi` who replied that the Prophet had forbidden the renting of farms. Ibn `Umar said, "You know that we used to rent our farms in the lifetime of Allah's Messenger (PBUH) for the yield of the banks of the water streams (rivers) and for certain amount of figs. ھم سے سلیمان بن حرب نے بیان کیا ، انھوں نے کھا کھ ھم سے حماد بن زید نے بیان کیا ، انھوں نے کھا کھ ھم سے ایوب سختیانی نے بیان کیا ، ان سے نافع نے بیان کیا کھ ابن عمر رضی اللھ عنھما اپنے کھیتوں کو نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم ، ابوبکر ، عمر ، عثمان رضی اللھ عنھم کے عھد میں اور معاویھ رضی اللھ عنھ کے ابتدائی عھد خلافت میں کرایھ پر دیتے تھے ۔ پھر رافع بن خدیج رضی اللھ عنھ کے واسطھ سے بیان کیا گیا کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے کھیتوں کو کرایھ پر دینے سے منع کیا تھا ۔ ( یھ سن کر ) ابن عمر رضی اللھ عنھما رافع بن خدیج رضی اللھ عنھ کے پاس گئے ۔ میں بھی ان کے ساتھ تھا ۔ ابن عمر رضی اللھ عنھما نے ان سے پوچھا تو انھوں نے فرمایا کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے کھیتوں کو کرایھ پر دینے سے منع فرمایا ۔ اس پر ابن عمر رضی اللھ عنھما نے کھا کھ آپ کو معلوم ھے نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم کے عھد میں ھم اپنے کھیتوں کو اس پیداوار کے بدل جو نالیوں پر ھو اور تھوڑی گھاس کے بدل دیا کرتے تھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 41 Hadith no 2343, 2344
Web reference: Sahih Bukhari Volume 3 Book 39 Hadith no 535


حَدَّثَنَا يَحْيَى بْنُ بُكَيْرٍ، حَدَّثَنَا اللَّيْثُ، عَنْ عُقَيْلٍ، عَنِ ابْنِ شِهَابٍ، أَخْبَرَنِي سَالِمٌ، أَنَّ عَبْدَ اللَّهِ بْنَ عُمَرَ ـ رضى الله عنهما ـ قَالَ كُنْتُ أَعْلَمُ فِي عَهْدِ رَسُولِ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم أَنَّ الأَرْضَ تُكْرَى‏.‏ ثُمَّ خَشِيَ عَبْدُ اللَّهِ أَنْ يَكُونَ النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم قَدْ أَحْدَثَ فِي ذَلِكَ شَيْئًا لَمْ يَكُنْ يَعْلَمُهُ، فَتَرَكَ كِرَاءَ الأَرْضِ‏.‏

Narrated Salim: `Abdullah bin `Umar said, "I knew that the land was rented for cultivation in the lifetime of Allah's Apostle ." Later on Ibn `Umar was afraid that the Prophet (PBUH) had forbidden it, and he had no knowledge of it, so he gave up renting his land. ھم سے یحییٰ بن بکیر نے بیان کیا ، انھوں نے کھا کھ ھم سے لیث بن سعد نے بیان کیا ، ان سے عقیل نے بیان کیا ، ان سے ابن شھاب نے ، انھیں سالم نے خبر دی کھ عبداللھ بن عمر رضی اللھ عنھما نے بیان کیا کھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم کے زمانھ میں مجھے معلوم تھا کھ زمین کو بٹائی پر دیا جاتا تھا ۔ پھر انھیں ڈر ھوا کھ ممکن ھے کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے اس سلسلے میں کوئی نئی ھدایت فرمائی ھو جس کا علم انھیں نھ ھوا ھو ۔ چنانچھ انھوں نے ( احتیاطاً ) زمین کو بٹائی پر دینا چھوڑ دیا ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 41 Hadith no 2345
Web reference: Sahih Bukhari Volume 3 Book 39 Hadith no 536



Copyrights: if you have any objection regarding any shared content on pdf9.com please click here.