Search hadith by
Hadith Book
Search Query
Search Language
English Arabic Urdu
Search Type Basic    Case Sensitive
 

Sahih Bukhari

Blood Money (Ad-Diyat)

كتاب الديات

حَدَّثَنَا مُوسَى بْنُ إِسْمَاعِيلَ، حَدَّثَنَا جُوَيْرِيَةُ، عَنْ نَافِعٍ، عَنْ عَبْدِ اللَّهِ ـ رضى الله عنه ـ عَنِ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم قَالَ ‏"‏ مَنْ حَمَلَ عَلَيْنَا السِّلاَحَ فَلَيْسَ مِنَّا ‏"‏‏.‏ رَوَاهُ أَبُو مُوسَى عَنِ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم‏.‏

Narrated `Abdullah: The Prophet (PBUH) said, "Whoever carries arms against us, is not from us." ھم سے موسیٰ بن اسماعیل نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے جویریھ نے بیان کیا ، ان سے نافع نے بیان کیا اور ان سے عبداللھ رضی اللھ عنھ نے کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا جس نے ھم پر ھتھیار اٹھایا وھ ھم میں سے نھیں ھے ۔ حضرت ابوموسیٰ رضی اللھ عنھ نے بھی نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم سے یھ حدیث روایت کی ھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 87 Hadith no 6874
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 83 Hadith no 13


حَدَّثَنَا عَبْدُ الرَّحْمَنِ بْنُ الْمُبَارَكِ، حَدَّثَنَا حَمَّادُ بْنُ زَيْدٍ، حَدَّثَنَا أَيُّوبُ، وَيُونُسُ، عَنِ الْحَسَنِ، عَنِ الأَحْنَفِ بْنِ قَيْسٍ، قَالَ ذَهَبْتُ لأَنْصُرَ هَذَا الرَّجُلَ، فَلَقِيَنِي أَبُو بَكْرَةَ فَقَالَ أَيْنَ تُرِيدُ قُلْتُ أَنْصُرُ هَذَا الرَّجُلَ‏.‏ قَالَ ارْجِعْ فَإِنِّي سَمِعْتُ رَسُولَ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم يَقُولُ ‏"‏ إِذَا الْتَقَى الْمُسْلِمَانِ بِسَيْفَيْهِمَا فَالْقَاتِلُ وَالْمَقْتُولُ فِي النَّارِ ‏"‏‏.‏ قُلْتُ يَا رَسُولَ اللَّهِ هَذَا الْقَاتِلُ فَمَا بَالُ الْمَقْتُولِ قَالَ ‏"‏ إِنَّهُ كَانَ حَرِيصًا عَلَى قَتْلِ صَاحِبِهِ ‏"‏‏.‏

Narrated Al-Ahnaf bin Qais: I went to help that man (i.e., `Ali), and on the way I met Abu Bakra who asked me, "Where are you going?" I replied, "I am going to help that man." He said, "Go back, for I heard Allah's Messenger (PBUH) saying, 'If two Muslims meet each other with their swords then (both) the killer and the killed one are in the (Hell) Fire.' I said, 'O Allah's Messenger (PBUH)! It is alright for the killer, but what about the killed one?' He said, 'The killed one was eager to kill his opponent." ھم سے عبدالرحمٰن بن المبارک نے بیان کیا ، کھا ھم سے حماد بن زید نے ، کھا ھم سے ایوب اور یونس نے ، ان سے امام حسن بصری نے ، ان سے احنف بن قیس نے کھ میں ان صاحب ( علی بن ابی طالب رضی اللھ عنھ ) کی جنگ جمل میں مدد کے لیے تیار تھا کھ ابوبکرھ رضی اللھ عنھ سے میری ملاقات ھوئی ۔ انھوں نے پوچھا ، کھا کا ارادھ ھے ؟ میں نے کھا کھ ان صاحب کی مدد کے لیے جانا چاھتا ھوں ۔ انھوں نے فرمایا کھ واپس چلے جاؤ میں نے رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم سے سنا ھے آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم فرماتے تھے کھ جب دو مسلمان تلوار کھینچ کر ایک دوسرے سے بھڑ جائیں تو قاتل اور مقتول دونوں دوزخ میں جاتے ھیں ۔ میں نے عرض کیا یا رسول اللھ ! ایک تو قاتل تھا لیکن مقتول کو سزا کیوں ملے گی ؟ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا وھ بھی اپنے قاتل کے قتل پر آمادھ تھا ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 87 Hadith no 6875
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 83 Hadith no 14


حَدَّثَنَا حَجَّاجُ بْنُ مِنْهَالٍ، حَدَّثَنَا هَمَّامٌ، عَنْ قَتَادَةَ، عَنْ أَنَسِ بْنِ مَالِكٍ ـ رضى الله عنه ـ أَنَّ يَهُودِيًّا، رَضَّ رَأْسَ جَارِيَةٍ بَيْنَ حَجَرَيْنِ، فَقِيلَ لَهَا مَنْ فَعَلَ بِكِ هَذَا أَفُلاَنٌ أَوْ فُلاَنٌ حَتَّى سُمِّيَ الْيَهُودِيُّ، فَأُتِيَ بِهِ النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم فَلَمْ يَزَلْ بِهِ حَتَّى أَقَرَّ بِهِ، فَرُضَّ رَأْسُهُ بِالْحِجَارَةِ‏.‏


Chapter: To question the killer till he confesses

Narrated Anas bin Malik: A Jew crushed the head of a girl between two stones, and the girl was asked, "Who has done that to you, so-and-so or so and so?" (Some names were mentioned for her) till the name of that Jew was mentioned (whereupon she agreed). The Jew was brought to the Prophet (PBUH) and the Prophet (PBUH) kept on questioning him till he confessed, whereupon his head was crushed with stones. ھم سے حجاج بن منھال نے بیان کیا ، کھا ھم سے ھمام بن یحییٰ نے بیان کیا ، ان سے قتادھ نے اور ان سے انس بن مالک رضی اللھ عنھ نے کھ ایک یھودی نے ایک لڑکی کا سردوپتھروں کے درمیان رکھ کر کچل دیا پھر اس لڑکی سے پوچھا گیا کھ یھ کس نے کیا ھے ؟ فلاں نے ، فلاں نے ؟ آخر جب اس یھودی کا نام لیاگیا ( تولڑکی نے سر کے اشارھ سے ھاں کھا ) پھر یھودی کو نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم کے یھاں لایا گیا اور اس سے پوچھ گچھ کی جاتی رھی یھاں تک کھ اس نے جرم کا اقرار کر لیا چنانچھ کا سر بھی پتھروں سے کچلاگیا ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 87 Hadith no 6876
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 83 Hadith no 15


حَدَّثَنَا مُحَمَّدٌ، أَخْبَرَنَا عَبْدُ اللَّهِ بْنُ إِدْرِيسَ، عَنْ شُعْبَةَ، عَنْ هِشَامِ بْنِ زَيْدِ بْنِ أَنَسٍ، عَنْ جَدِّهِ، أَنَسِ بْنِ مَالِكٍ قَالَ خَرَجَتْ جَارِيَةٌ عَلَيْهَا أَوْضَاحٌ بِالْمَدِينَةِ ـ قَالَ ـ فَرَمَاهَا يَهُودِيٌّ بِحَجَرٍ ـ قَالَ ـ فَجِيءَ بِهَا إِلَى النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم وَبِهَا رَمَقٌ فَقَالَ لَهَا رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ فُلاَنٌ قَتَلَكِ ‏"‏‏.‏ فَرَفَعَتْ رَأْسَهَا، فَأَعَادَ عَلَيْهَا قَالَ ‏"‏ فُلاَنٌ قَتَلَكِ ‏"‏‏.‏ فَرَفَعَتْ رَأْسَهَا، فَقَالَ لَهَا فِي الثَّالِثَةِ ‏"‏ فُلاَنٌ قَتَلَكِ ‏"‏‏.‏ فَخَفَضَتْ رَأْسَهَا، فَدَعَا بِهِ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم فَقَتَلَهُ بَيْنَ الْحَجَرَيْنِ‏.‏


Chapter: If someone kills with a stone or with a stick

Narrated Anas bin Malik: A girl wearing ornaments, went out at Medina. Somebody struck her with a stone. She was brought to the Prophet (PBUH) while she was still alive. Allah's Messenger (PBUH) asked her, "Did such-and-such a person strike you?" She raised her head, denying that. He asked her a second time, saying, "Did so-and-so strike you?" She raised her head, denying that. He said for the third time, "Did so-and-so strike you?" She lowered her head, agreeing. Allah's Messenger (PBUH) then sent for the killer and killed him between two stones. ھم سے محمد نے بیان کیا ، کھا ھم کو عبداللھ بن ادریس نے خبر دی ، انھیں شعبھ نے ، انھیں ھشام بن زید بن انس نے ، ان سے ان کے دادا انس بن مالک رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ مدینھ منورھ میں ایک لڑکی چاندی کے زیور پھنے باھرنکلی ۔ راوی نے بیان کیا کھ پھر اسے ایک یھودی نے پتھر سے ماردیا ۔ جب اسے نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم کے پاس لایا گیا تو ابھی اس میں جان باقی تھی ۔ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے پوچھا تمھیں فلاں نے مارا ھے ؟ اس پر لڑکی نے اپنا سر ( انکار کے لیے ) اٹھایا پھر آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے پوچھا تمھیں فلاں نے مارا ھے ؟ لڑکی نے اس پر بھی اٹھایا ۔ تیسری مرتبھ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے پوچھا فلاں نے تمھیں مارا ھے ؟ اس پر لڑکی نے اپنا سر نیچے کی طرف جھکالیا ( اقرار کرتے ھوئے جھکالیا ) چنانچھ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے اس شخص کو بلایا تب آپ صلی اللھ علیھ وسلم نے دو پتھروں سے کچل کر اسے قتل کرایا ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 87 Hadith no 6877
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 83 Hadith no 16


حَدَّثَنَا عُمَرُ بْنُ حَفْصٍ، حَدَّثَنَا أَبِي، حَدَّثَنَا الأَعْمَشُ، عَنْ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ مُرَّةَ، عَنْ مَسْرُوقٍ، عَنْ عَبْدِ اللَّهِ، قَالَ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ لاَ يَحِلُّ دَمُ امْرِئٍ مُسْلِمٍ يَشْهَدُ أَنْ لاَ إِلَهَ إِلاَّ اللَّهُ وَأَنِّي رَسُولُ اللَّهِ إِلاَّ بِإِحْدَى ثَلاَثٍ النَّفْسُ بِالنَّفْسِ وَالثَّيِّبُ الزَّانِي، وَالْمَارِقُ مِنَ الدِّينِ التَّارِكُ الْجَمَاعَةَ ‏"‏‏.‏


Chapter: “Life for life, eye for eye, nose for nose, ear for ear, tooth for tooth and wounds equal for equal”

Narrated `Abdullah: Allah's Messenger (PBUH) said, "The blood of a Muslim who confesses that none has the right to be worshipped but Allah and that I am His Apostle, cannot be shed except in three cases: In Qisas for murder, a married person who commits illegal sexual intercourse and the one who reverts from Islam (apostate) and leaves the Muslims." ھم سے عمر بن حفص نے بیان کیا ، کھا ھم سے میرے والد نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے اعمش نے بیان کیا ، ان سے عبداللھ بن مرھ نے بیان کیا ، ان سے مسروق نے بیان کیا اور ان سے عبداللھ رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کسی مسلمان کا خون جو کلمھ لا الھٰ الا اللھ محمد رسول اللھ کا ماننے والا ھو حلال نھیں ھے البتھ تین صورتوں میں جائز ھے ۔ جان کے بدلھ جان لینے والا ، شادی شدھ ھو کر زنا کرنے والا اور اسلام سے نکل جانے والا ( مرتد ) جماعت کو چھوڑ دینے والا ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 87 Hadith no 6878
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 83 Hadith no 17


حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ بَشَّارٍ، حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ جَعْفَرٍ، حَدَّثَنَا شُعْبَةُ، عَنْ هِشَامِ بْنِ زَيْدٍ، عَنْ أَنَسٍ ـ رضى الله عنه ـ أَنَّ يَهُودِيًّا، قَتَلَ جَارِيَةً عَلَى أَوْضَاحٍ لَهَا، فَقَتَلَهَا بِحَجَرٍ، فَجِيءَ بِهَا إِلَى النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم وَبِهَا رَمَقٌ فَقَالَ ‏"‏ أَقَتَلَكِ فُلاَنٌ ‏"‏‏.‏ فَأَشَارَتْ بِرَأْسِهَا أَنْ لاَ، ثُمَّ قَالَ الثَّانِيَةَ، فَأَشَارَتْ بِرَأْسِهَا أَنْ لاَ، ثُمَّ سَأَلَهَا الثَّالِثَةَ فَأَشَارَتْ بِرَأْسِهَا أَنْ نَعَمْ، فَقَتَلَهُ النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم بِحَجَرَيْنِ‏.‏


Chapter: Whoever punished with a stone

Narrated Anas: A Jew killed a girl so that he may steal her ornaments. He struck her with a stone, and she was brought to the Prophet (PBUH) while she was still alive. The Prophet (PBUH) asked her, "Did such-and-such person strike you?" She gestured with her head, expressing denial. He asked her for the second time, and she again gestured with her head, expressing denial. When he asked her for the third time, she beckoned, "Yes." So the Prophet (PBUH) killed him (the Jew) with two stones. ھم سے محمد بن بشار نے بیان کیا ، کھا ھم سے محمد بن جعفر نے بیان کیا ، ان سے شعبھ نے بیان کیا ، ان سے ھشام بن زید اور ان سے حضرت انس رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ ایک یھودی نے ایک لڑکی کو اس کے چاندی کے زیور کے لالچ میں مارڈالا تھا ۔ اس نے لڑکی کو پتھر سے مارا پھر لڑکی نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم کے پاس لائی گئی تو اس کے جسم میں جان باقی تھی ۔ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے پوچھا کیا تمھیں فلاں نے مارا ھے ؟ اس نے سر کے اشارھ سے انکار کیا ۔ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے دوبارھ پوچھا ، کیا تمھیں فلاں نے مارا ھے ؟ اس مرتبھ بھی اس نے سر کے اشارے سے انکار کیا ۔ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے جب تیسری مرتبھ پوچھا تو اس نے سر کے اشارھ سے اقرار کیا ۔ چنانچھ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے یھودی کو دوپتھروں میں کچل کر قتل کر دیا ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 87 Hadith no 6879
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 83 Hadith no 18



@2019 Copyrights: if you have any objection regarding any shared content on pdf9.com please click here.