Search hadith by
Hadith Book
Search Query
Search Language
English Arabic Urdu
Search Type Basic    Case Sensitive
 

Sahih Bukhari

Blood Money (Ad-Diyat)

كتاب الديات

حَدَّثَنَا قُتَيْبَةُ بْنُ سَعِيدٍ، حَدَّثَنَا جَرِيرٌ، عَنِ الأَعْمَشِ، عَنْ أَبِي وَائِلٍ، عَنْ عَمْرِو بْنِ شُرَحْبِيلَ، قَالَ قَالَ عَبْدُ اللَّهِ قَالَ رَجُلٌ يَا رَسُولَ اللَّهِ أَىُّ الذَّنْبِ أَكْبَرُ عِنْدَ اللَّهِ قَالَ ‏"‏ أَنْ تَدْعُوَ لِلَّهِ نِدًّا، وَهْوَ خَلَقَكَ ‏"‏‏.‏ قَالَ ثُمَّ أَىٌّ قَالَ ‏"‏ ثُمَّ أَنْ تَقْتُلَ وَلَدَكَ، أَنْ يَطْعَمَ مَعَكَ ‏"‏‏.‏ قَالَ ثُمَّ أَىٌّ قَالَ ‏"‏ ثُمَّ أَنْ تُزَانِيَ بِحَلِيلَةِ جَارِكَ ‏"‏‏.‏ فَأَنْزَلَ اللَّهُ عَزَّ وَجَلَّ تَصْدِيقَهَا ‏{‏وَالَّذِينَ لاَ يَدْعُونَ مَعَ اللَّهِ إِلَهًا آخَرَ وَلاَ يَقْتُلُونَ النَّفْسَ الَّتِي حَرَّمَ اللَّهُ إِلاَّ بِالْحَقِّ وَلاَ يَزْنُونَ وَمَنْ يَفْعَلْ ذَلِكَ‏ يَلْقَ أَثَامًا}‏ الآيَةَ‏.‏


Chapter: “… And whoever kills a believer intentionally, his recompense is Hell …”

Narrated `Abdullah: A man said, "O Allah's Messenger (PBUH)! Which sin is the greatest in Allah's Sight?" The Prophet (PBUH) said, "To set up a rival unto Allah though He Alone created you . " The man said, "What is next?" The Prophet (PBUH) said, "To kill your son lest he should share your food with you." The man said, "What is next?" The Prophet said, "To commit illegal sexual intercourse with the wife of your neighbor." So Allah revealed in confirmation of this narration:-- 'And those who invoke not with Allah, any other god. Nor kill, such life as Allah has forbidden except for just cause nor commit illegal sexual intercourse. And whoever does this shall receive the punishment.' (25.68) ھم سے قتیبھ بن سعید نے بیان کیا ، کھا ھم سے جریر بن عبدالحمید نے بیان کیا ، ان سے اعمش نے ، ان سے ابووائل نے ، ان سے عمرو بن شرجیل نے بیان کیا ، ان سے حضرت عبداللھ بن مسعود رضی اللھ عنھما نے بیان کیا کھ ایک صاحب یعنی خود آپ نے کھا یا رسول اللھ ! صلی اللھ علیھ وسلم اللھ کے نزدیک کون سا گناھ سب سے بڑا ھے ؟ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا یھ کھ تم اللھ کا کسی کو شریک ٹھھراؤ جبکھ اس نے تمھیں پیدا کیا ھے ۔ پوچھا پھر کون ؟ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا پھر یھ کھ تم اپنے لڑکے کو اس ڈر سے مارڈالو کھ وھ تمھارے ساتھ کھانا کھائے گا ۔ پوچھا پھر کون ؟ فرمایا پھر یھ کھ تم اپنے پڑوسی کی بیوی سے زنا کرو ۔ پھر اللھ تعالیٰ نے اس کی تصدیق میں یھ آیت نازل کی ” اور وھ لوگ جو اللھ کے ساتھ کسی دوسرے معبود کو نھیں پکارتے اور نھ کسی ایسے انسان کی ناحق جان لیتے ھیں جسے اللھ نے حرام کیا اور نھ زنا کرتے ھیں اور جو کوئی ایسا کرے گا “ آخر آیت تک ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 87 Hadith no 6861
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 83 Hadith no 1


حَدَّثَنَا عَلِيٌّ، حَدَّثَنَا إِسْحَاقُ بْنُ سَعِيدِ بْنِ عَمْرِو بْنِ سَعِيدِ بْنِ الْعَاصِ، عَنْ أَبِيهِ، عَنِ ابْنِ عُمَرَ ـ رضى الله عنهما ـ قَالَ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ لَنْ يَزَالَ الْمُؤْمِنُ فِي فُسْحَةٍ مِنْ دِينِهِ، مَا لَمْ يُصِبْ دَمًا حَرَامًا ‏"‏‏.‏

Narrated Ibn `Umar: Allah's Messenger (PBUH) said, "A faithful believer remains at liberty regarding his religion unless he kills somebody unlawfully." ھم سے علی بن جعد نے بیان کیا ، کھا ھم سے اسحاق بن سعید بن عمرو بن سعد بن العاص رضی اللھ عنھما نے بیان کیا ، ان سے ان کے والد نے اور ان سے ابن عمر رضی اللھ عنھما نے بیان کیا کھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا مومن اس وقت تک اپنے دین کے بارے میں برابر کشادھ رھتا ھے ( اسے ھر وقت مغفرت کی امید رھتی ھے ) جب تک ناحق خون نھ کرے جھاں ناحق کیا تو مغفرت کا دروازھ تنگ ھو جاتا ھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 87 Hadith no 6862
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 83 Hadith no 2


حَدَّثَنِي أَحْمَدُ بْنُ يَعْقُوبَ، حَدَّثَنَا إِسْحَاقُ، سَمِعْتُ أَبِي يُحَدِّثُ، عَنْ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ عُمَرَ، قَالَ إِنَّ مِنْ وَرْطَاتِ الأُمُورِ الَّتِي لاَ مَخْرَجَ لِمَنْ أَوْقَعَ نَفْسَهُ فِيهَا، سَفْكَ الدَّمِ الْحَرَامِ بِغَيْرِ حِلِّهِ‏.‏

Narrated `Abdullah bin `Umar: One of the evil deeds with bad consequence from which there is no escape for the one who is involved in it is to kill someone unlawfully. مجھ سے احمد بن یعقوب نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے اسحاق نے بیان کیا ، انھوں نے کھا میں نے اپنے والد سے سنا ، وھ حضرت عبداللھ بن عمر رضی اللھ عنھما سے بیان کرتے تھے کھ ھلاکت کا بھنور جس میں گرنے کے بعد پھر نکلنے کی امید نھیں ھے وھ ناحق خون کرنا ھے ۔ جس کو اللھ تعالیٰ نے حرام کیا ھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 87 Hadith no 6863
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 83 Hadith no 3


حَدَّثَنَا عُبَيْدُ اللَّهِ بْنُ مُوسَى، عَنِ الأَعْمَشِ، عَنْ أَبِي وَائِلٍ، عَنْ عَبْدِ اللَّهِ، قَالَ قَالَ النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ أَوَّلُ مَا يُقْضَى بَيْنَ النَّاسِ فِي الدِّمَاءِ ‏"‏‏.‏

Narrated `Abdullah: The Prophet (PBUH) said, "The first cases to be decided among the people (on the Day of Resurrection) will be those of blood-shed." ھم سے عبیداللھ بن موسیٰ نے بیان کیا ، ان سے اعمش نے ، ان سے ابووائل نے اور ان سے عبداللھ رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا سب سے پھلے ( قیامت کے دن ) لوگوں کے درمیان خون خرابے کے فیصلھ جات کئے جائیں گے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 87 Hadith no 6864
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 83 Hadith no 4


حَدَّثَنَا عَبْدَانُ، حَدَّثَنَا عَبْدُ اللَّهِ، حَدَّثَنَا يُونُسُ، عَنِ الزُّهْرِيِّ، حَدَّثَنَا عَطَاءُ بْنُ يَزِيدَ، أَنَّ عُبَيْدَ اللَّهِ بْنَ عَدِيٍّ، حَدَّثَهُ أَنَّ الْمِقْدَادَ بْنَ عَمْرٍو الْكِنْدِيَّ حَلِيفَ بَنِي زُهْرَةَ حَدَّثَهُ وَكَانَ، شَهِدَ بَدْرًا مَعَ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم أَنَّهُ قَالَ يَا رَسُولَ اللَّهِ إِنْ لَقِيتُ كَافِرًا فَاقْتَتَلْنَا، فَضَرَبَ يَدِي بِالسَّيْفِ فَقَطَعَهَا، ثُمَّ لاَذَ بِشَجَرَةٍ وَقَالَ أَسْلَمْتُ لِلَّهِ‏.‏ آقْتُلُهُ بَعْدَ أَنْ قَالَهَا قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ لاَ تَقْتُلْهُ ‏"‏‏.‏ قَالَ يَا رَسُولَ اللَّهِ فَإِنَّهُ طَرَحَ إِحْدَى يَدَىَّ، ثُمَّ قَالَ بَعْدَ مَا قَطَعَهَا، آقْتُلُهُ قَالَ ‏"‏ لاَ تَقْتُلْهُ، فَإِنْ قَتَلْتَهُ فَإِنَّهُ بِمَنْزِلَتِكَ قَبْلَ أَنْ تَقْتُلَهُ، وَأَنْتَ بِمَنْزِلَتِهِ قَبْلَ أَنْ يَقُولَ كَلِمَتَهُ الَّتِي قَالَ ‏"‏‏.‏ وَقَالَ حَبِيبُ بْنُ أَبِي عَمْرَةَ عَنْ سَعِيدٍ، عَنِ ابْنِ عَبَّاسٍ، قَالَ قَالَ النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم لِلْمِقْدَادِ ‏"‏ إِذَا كَانَ رَجُلٌ مُؤْمِنٌ يُخْفِي إِيمَانَهُ مَعَ قَوْمٍ كُفَّارٍ، فَأَظْهَرَ إِيمَانَهُ، فَقَتَلْتَهُ، فَكَذَلِكَ كُنْتَ أَنْتَ تُخْفِي إِيمَانَكَ بِمَكَّةَ مِنْ قَبْلُ ‏"‏‏.‏

Narrated Al-Miqdad bin `Amr Al-Kindi: An ally of Bani Zuhra who took part in the battle of Badr with the Prophet, that he said, "O Allah's Apostle! If I meet an unbeliever and we have a fight, and he strikes my hand with the sword and cuts it off, and then takes refuge from me under a tree, and says, 'I have surrendered to Allah (i.e. embraced Islam),' may I kill him after he has said so?" Allah's Messenger (PBUH) said, "Do not kill him." Al- Miqdad said, "But O Allah's Messenger (PBUH)! He had chopped off one of my hands and he said that after he had cut it off. May I kill him?" The Prophet (PBUH) said. "Do not kill him for if you kill him, he would be in the position in which you had been before you kill him, and you would be in the position in which he was before he said the sentence." The Prophet (PBUH) also said to Al-Miqdad, "If a faithful believer conceals his faith (Islam) from the disbelievers, and then when he declares his Islam, you kill him, (you will be sinful). Remember that you were also concealing your faith (Islam) at Mecca before." ھم سے عبدان نے بیان کیا ، کھا ھم سے عبداللھ بن مبارک نے بیان کیا ، کھا ھم کو یونس نے خبر دی ، ان سے زھری نے ، کھا مجھ سے عطاء بن یزید نے بیان کیا ، ان سے عبیداللھ بن عدی نے بیان کیا ، ان سے بنی زھرھ کے حلیف مقداد بن عمرو الکندی رضی اللھ عنھ نے بیان کیا وھ بدر کی لڑائی میں نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم کے ساتھ شریک تھے کھ آپ نے پوچھا یا رسول اللھ ! اگر جنگ کے دوران میری کسی کافر سے مڈبھیڑ ھو جائے اور ھم ایک دوسرے کو قتل کرنے کی کوشش کرنے لگیں پھر وھ میرے ھاتھ پر اپنی تلوار مار کر اسے کاٹ دے اور اس کے بعد کسی درخت کی آڑ لے کر کھے کھ میں اللھ پر ایمان لایا تو کیا میں اسے اس کے اس اقرار کے بعد قتل کر سکتا ھوں ؟ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ اسے قتل نھ کرنا ۔ انھوں نے عرض کیا یا رسول اللھ ! اس نے تو میرا ھاتھ بھی کاٹ ڈالا اور یھ اقرار اس وقت کیا جب اسے یقین ھو گیا کھ اب میں اسے قتل ھی کر دوں گا ؟ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا اسے قتل نھ کرنا کیونکھ اگر تم نے اسے اسلام لانے کے بعد قتل کر دیا تو وھ تمھارے مرتبھ میں ھو گا جو تمھارا اسے قتل کرنے سے پھلے تھا یعنی معصوم معلوم الدم اور تم اس کے مرتبھ میں ھو گے جو اس کا اس کلمھ کے اقرار سے پھلے تھا جو اس نے اب کیا ھے ( یعنی ظالم مباح الدم ) ۔ اور حبیب بن ابی عمرھ نے بیان کیا ، ان سے سعید بن جبیر نے اور ان سے ابن عباس رضی اللھ عنھما نے بیان کیا کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے حضرت مقداد رضی اللھ عنھ سے فرمایا تھا کھ اگر کوئی مسلمان کافروں کے ساتھ رھتا ھو پھر وھ ڈر کے مارے اپنا ایمان چھپاتا ھو ، اگر وھ اپنا ایمان ظاھر کر دے اور تو اس کو مار ڈالے یھ کیوں کر درست ھو گا خود تو بھی تو مکھ میں پھلے اپنا ایمان چھپاتا تھا ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 87 Hadith no 6865, 6866
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 83 Hadith no 5


حَدَّثَنَا قَبِيصَةُ، حَدَّثَنَا سُفْيَانُ، عَنِ الأَعْمَشِ، عَنْ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ مُرَّةَ، عَنْ مَسْرُوقٍ، عَنْ عَبْدِ اللَّهِ ـ رضى الله عنه ـ عَنِ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم قَالَ ‏"‏ لاَ تُقْتَلُ نَفْسٌ إِلاَّ كَانَ عَلَى ابْنِ آدَمَ الأَوَّلِ كِفْلٌ مِنْهَا ‏"‏‏.‏

Narrated `Abdullah: The Prophet (PBUH) said, "No human being is killed unjustly, but a part of responsibility for the crime is laid on the first son of Adam who invented the tradition of killing (murdering) on the earth. (It is said that he was Qabil). ھم سے قبیصھ نے بیان کیا ، کھا ھم سے سفیان بن عیینھ نے بیان کیا ، ان سے اعمش نے ، ان سے عبداللھ ابن مرھ نے ، ان سے مسروق نے اور ان سے حضرت عبداللھ بن مسعود رضی اللھ عنھما نے کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا جو جان ناحق قتل کی جائے اس کے ( گناھ کا ) ایک حصھ آدم علیھ السلام کے پھلے بیٹے ( قابیل پر ) پڑتا ھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 87 Hadith no 6867
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 83 Hadith no 6



Copyrights: if you have any objection regarding any shared content on pdf9.com please click here.