Search hadith by
Hadith Book
Search Query
Search Language
English Arabic Urdu
Search Type Basic    Case Sensitive
 

Sahih Bukhari

Fighting for the Cause of Allah (Jihaad)

كتاب الجهاد والسير

حَدَّثَنَا عَبْدُ اللَّهِ بْنُ يُوسُفَ، عَنْ مَالِكٍ، عَنْ إِسْحَاقَ بْنِ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ أَبِي طَلْحَةَ، عَنْ أَنَسِ بْنِ مَالِكٍ ـ رضى الله عنه ـ أَنَّهُ سَمِعَهُ يَقُولُ كَانَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم يَدْخُلُ عَلَى أُمِّ حَرَامٍ بِنْتِ مِلْحَانَ، فَتُطْعِمُهُ، وَكَانَتْ أُمُّ حَرَامٍ تَحْتَ عُبَادَةَ بْنِ الصَّامِتِ، فَدَخَلَ عَلَيْهَا رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم فَأَطْعَمَتْهُ وَجَعَلَتْ تَفْلِي رَأْسَهُ، فَنَامَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم ثُمَّ اسْتَيْقَظَ وَهُوَ يَضْحَكُ‏.‏ قَالَتْ فَقُلْتُ وَمَا يُضْحِكُكَ يَا رَسُولَ اللَّهِ قَالَ ‏"‏ نَاسٌ مِنْ أُمَّتِي عُرِضُوا عَلَىَّ، غُزَاةً فِي سَبِيلِ اللَّهِ، يَرْكَبُونَ ثَبَجَ هَذَا الْبَحْرِ، مُلُوكًا عَلَى الأَسِرَّةِ، أَوْ مِثْلُ الْمُلُوكِ عَلَى الأَسِرَّةِ ‏"‏‏.‏ شَكَّ إِسْحَاقُ‏.‏ قَالَتْ فَقُلْتُ يَا رَسُولَ اللَّهِ ادْعُ اللَّهَ أَنْ يَجْعَلَنِي مِنْهُمْ‏.‏ فَدَعَا لَهَا رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم ثُمَّ وَضَعَ رَأْسَهُ، ثُمَّ اسْتَيْقَظَ وَهُوَ يَضْحَكُ فَقُلْتُ وَمَا يُضْحِكُكَ يَا رَسُولَ اللَّهِ قَالَ ‏"‏ نَاسٌ مِنْ أُمَّتِي عُرِضُوا عَلَىَّ، غُزَاةً فِي سَبِيلِ اللَّهِ ‏"‏‏.‏ كَمَا قَالَ فِي الأَوَّلِ‏.‏ قَالَتْ فَقُلْتُ يَا رَسُولَ اللَّهِ، ادْعُ اللَّهَ أَنْ يَجْعَلَنِي مِنْهُمْ‏.‏ قَالَ ‏"‏ أَنْتِ مِنَ الأَوَّلِينَ ‏"‏‏.‏ فَرَكِبَتِ الْبَحْرَ فِي زَمَانِ مُعَاوِيَةَ بْنِ أَبِي سُفْيَانَ، فَصُرِعَتْ عَنْ دَابَّتِهَا حِينَ خَرَجَتْ مِنَ الْبَحْرِ، فَهَلَكَتْ‏.‏

Narrated Anas bin Malik: Allah's Messenger (PBUH) used to visit Umm Haram bint Milhan, who would offer him meals. Umm Haram was the wife of Ubada bin As-Samit. Allah's Messenger (PBUH), once visited her and she provided him with food and started looking for lice in his head. Then Allah's Messenger (PBUH) slept, and afterwards woke up smiling. Umm Haram asked, "What causes you to smile, O Allah's Messenger (PBUH)?" He said. "Some of my followers who (in a dream) were presented before me as fighters in Allah's cause (on board a ship) amidst this sea caused me to smile; they were as kings on the thrones (or like kings on the thrones)." (Ishaq, a sub-narrator is not sure as to which expression the Prophet (PBUH) used.) Umm Haram said, "O Allah's Messenger (PBUH)! Invoke Allah that he makes me one of them. Allah's Messenger (PBUH) invoked Allah for her and slept again and woke up smiling. Once again Umm Haram asked, "What makes you smile, O Allah's Messenger (PBUH)?" He replied, "Some of my followers were presented to me as fighters in Allah's Cause," repeating the same dream. Umm Haram said, "O Allah's Messenger (PBUH)! Invoke Allah that He makes me one of them." He said, "You are amongst the first ones." It happened that she sailed on the sea during the Caliphate of Mu'awiya bin Abi Sufyan, and after she disembarked, she fell down from her riding animal and died. ھم سے عبداللھ بن یوسف نے بیان کیا امام مالک سے ‘ انھوں نے اسحاق بن عبداللھ بن ابی طلحھ سے انھوں نے انس بن مالک رضی اللھ عنھ سے سنا ‘ آپ بیان کرتے کھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم ام حرام رضی اللھ عنھا کے یھاں تشریف لے جایا کرتے تھے ( یھ انس کی خالھ تھیں جو عبادھ بن صامت کے نکاح میں تھیں ) ایک دن رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم تشریف لے گئے تو انھوں نے آپ صلی اللھ علیھ وسلم کی خدمت میں کھانا پیش کیا اور آپ صلی اللھ علیھ وسلم کے سر سے جوئیں نکالنے لگیں ‘ اس عرصے میں آپ صلی اللھ علیھ وسلم سو گئے ‘ جب بیدار ھوئے تو آپ صلی اللھ علیھ وسلم مسکرا رھے تھے ۔ ام حرام رضی اللھ عنھا نے بیان کیا میں نے پوچھا یا رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم ! کس بات پر آپ ھنس رھے ھیں ؟ آپ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ میری امت کے کچھ لوگ میرے سامنے اس طرح پیش کئے گئے کھ وھ اللھ کے راستے میں غزوھ کرنے کے لئے دریا کے بیچ میں سوار اس طرح جا رھے ھیں جس طرح بادشاھ تخت پر ھوتے ھیں یا جیسے بادشاھ تخت رواں پر سوار ھوتے ھیں یھ شک اسحاق راوی کو تھا ۔ انھوں نے بیان کیا کھ میں نے عرض کیا یا رسول اللھ ! آپ صلی اللھ علیھ وسلم دعا فرمایئے کھ اللھ مجھے بھی انھیں میں سے کر دے ‘ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم نے ان کے لئے دعا فرمائی پھر آپ صلی اللھ علیھ وسلم اپنا سر رکھ کر سو گئے ‘ اس مرتبھ بھی آپ بیدار ھوئے تو مسکرا رھے تھے ۔ میں نے پوچھا یا رسول اللھ ! کس بات پر آپ ھنس رھے ھیں ؟ آپ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا میری امت کے کچھ لوگ میرے سامنے اس طرح پیش کئے گئے کھ وھ اللھ کی راھ میں غزوھ کے لئے جا رھے ھیں پھلے کی طرح ‘ اس مرتبھ بھی فرمایا انھوں نے بیان کیا کھ میں نے عرض کیا یا رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم ! اللھ سے میرے لئے دعا کیجئے کھ مجھے بھی انھیں میں سے کر دے ۔ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے اس پر فرمایا کھ تو سب سے پھلی فوج میں شامل ھو گی ( جو بحری راستے سے جھاد کرے گی ) چنانچھ حضرت معاویھ رضی اللھ عنھ کے زمانھ میں ام حرام رضی اللھ عنھا نے بحری سفر کیا پھر جب سمندر سے باھر آئیں تو ان کی سواری نے انھیں نیچے گرا دیا اور اسی حادثھ میں ان کی وفات ھو گئی ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 56 Hadith no 2788
Web reference: Sahih Bukhari Volume 4 Book 52 Hadith no 47


حَدَّثَنَا يَحْيَى بْنُ صَالِحٍ، حَدَّثَنَا فُلَيْحٌ، عَنْ هِلاَلِ بْنِ عَلِيٍّ، عَنْ عَطَاءِ بْنِ يَسَارٍ، عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ ـ رضى الله عنه ـ قَالَ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ مَنْ آمَنَ بِاللَّهِ وَبِرَسُولِهِ وَأَقَامَ الصَّلاَةَ وَصَامَ رَمَضَانَ، كَانَ حَقًّا عَلَى اللَّهِ أَنْ يُدْخِلَهُ الْجَنَّةَ جَاهَدَ فِي سَبِيلِ اللَّهِ، أَوْ جَلَسَ فِي أَرْضِهِ الَّتِي وُلِدَ فِيهَا ‏"‏‏.‏ فَقَالُوا يَا رَسُولَ اللَّهِ أَفَلاَ نُبَشِّرُ النَّاسَ‏.‏ قَالَ ‏"‏ إِنَّ فِي الْجَنَّةِ مِائَةَ دَرَجَةٍ أَعَدَّهَا اللَّهُ لِلْمُجَاهِدِينَ فِي سَبِيلِ اللَّهِ، مَا بَيْنَ الدَّرَجَتَيْنِ كَمَا بَيْنَ السَّمَاءِ وَالأَرْضِ، فَإِذَا سَأَلْتُمُ اللَّهَ فَاسْأَلُوهُ الْفِرْدَوْسَ، فَإِنَّهُ أَوْسَطُ الْجَنَّةِ وَأَعْلَى الْجَنَّةِ، أُرَاهُ فَوْقَهُ عَرْشُ الرَّحْمَنِ، وَمِنْهُ تَفَجَّرُ أَنْهَارُ الْجَنَّةِ ‏"‏‏.‏ قَالَ مُحَمَّدُ بْنُ فُلَيْحٍ عَنْ أَبِيهِ ‏"‏ وَفَوْقَهُ عَرْشُ الرَّحْمَنِ ‏"‏‏.‏

Narrated Abu Huraira: The Prophet (PBUH) said, "Whoever believes in Allah and His Apostle, offer prayer perfectly and fasts the month of Ramadan, will rightfully be granted Paradise by Allah, no matter whether he fights in Allah's Cause or remains in the land where he is born." The people said, "O Allah's Messenger (PBUH) ! Shall we acquaint the people with the is good news?" He said, "Paradise has one-hundred grades which Allah has reserved for the Mujahidin who fight in His Cause, and the distance between each of two grades is like the distance between the Heaven and the Earth. So, when you ask Allah (for something), ask for Al-firdaus which is the best and highest part of Paradise." (i.e. The sub-narrator added, "I think the Prophet also said, 'Above it (i.e. Al-Firdaus) is the Throne of Beneficent (i.e. Allah), and from it originate the rivers of Paradise.") ھم سے یحییٰ بن صالح نے بیان کیا ‘ کھا ھم سے فلیح نے بیان کیا ‘ ان سے ھلال بن علی نے ‘ ان سے عطاء بن یسار نے اور ان سے ابوھریرھ رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا جو شخص اللھ اور اس کے رسول پر ایمان لائے اور نماز قائم کرے اور رمضان کے روزے رکھے تو اللھ تعالیٰ پر حق ھے کھ وھ جنت میں داخل کرے گا خواھ اللھ کے راستے میں وھ جھاد کرے یا اسی جگھ پڑا رھے جھاں پیدا ھوا تھا ۔ صحابھ نے عرض کیا یا رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم کیا ھم لوگوں کو اس کی بشارت نھ دے دیں ۔ آپ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ جنت میں سو درجے ھیں جو اللھ تعالیٰ نے اپنے راستے میں جھاد کرنے والوں کے لئے تیار کئے ھیں ‘ ان کے دو درجوں میں اتنا فاصلھ ھے جتنا آسمان و زمین میں ھے ۔ اس لئے جب اللھ تعالیٰ سے مانگنا ھو تو فردوس مانگو کیونکھ وھ جنت کا سب سے درمیانی حصھ اور جنت کے سب سے بلند درجے پر ھے ۔ یحییٰ بن صالح نے کھا کھ میں سمجھتا ھوں یوں کھا کھ اس کے اوپر پروردگار کا عرش ھے اور وھیں سے جنت کی نھریں نکلتی ھیں ۔ محمد بن فلیح نے اپنے والد سے وفوقھ عرش الرحمن ھی کی روایت کی ھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 56 Hadith no 2790
Web reference: Sahih Bukhari Volume 4 Book 52 Hadith no 48


حَدَّثَنَا مُوسَى، حَدَّثَنَا جَرِيرٌ، حَدَّثَنَا أَبُو رَجَاءٍ، عَنْ سَمُرَةَ، قَالَ النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ رَأَيْتُ اللَّيْلَةَ رَجُلَيْنِ أَتَيَانِي فَصَعِدَا بِي الشَّجَرَةَ، فَأَدْخَلاَنِي دَارًا هِيَ أَحْسَنُ وَأَفْضَلُ، لَمْ أَرَ قَطُّ أَحْسَنَ مِنْهَا قَالاَ أَمَّا هَذِهِ الدَّارُ فَدَارُ الشُّهَدَاءِ ‏"‏‏.‏

Narrated Samura: The Prophet (PBUH) said, "Last night two men came to me (in a dream) and made me ascend a tree and then admitted me into a better and superior house, better of which I have never seen. One of them said, 'This house is the house of martyrs." ھم سے موسیٰ بن اسماعیل نے بیان کیا ‘ کھا ھم سے جریر نے ‘ کھا ھم سے ابورجاء نے ‘ ان سے سمرھ بن جندب رضی اللھ عنھ نے کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا ، میں نے رات میں دو آدمی دیکھے جو میرے پاس آئے پھر وھ مجھے لے کر ایک درخت پر چڑھے اور اس کے بعد مجھے ایک ایسے مکان میں لے گئے جو نھایت خوبصورت اور بڑا پاکیزھ تھا ، ایسا خوبصورت مکان میں نے کبھی نھیں دیکھا تھا ۔ ان دونوں نے کھا کھ یھ گھر شھیدوں کا ھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 56 Hadith no 2791
Web reference: Sahih Bukhari Volume 4 Book 52 Hadith no 49


حَدَّثَنَا مُعَلَّى بْنُ أَسَدٍ، حَدَّثَنَا وُهَيْبٌ، حَدَّثَنَا حُمَيْدٌ، عَنْ أَنَسِ بْنِ مَالِكٍ ـ رضى الله عنه ـ عَنِ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم قَالَ ‏"‏ لَغَدْوَةٌ فِي سَبِيلِ اللَّهِ أَوْ رَوْحَةٌ خَيْرٌ مِنَ الدُّنْيَا وَمَا فِيهَا ‏"‏‏.‏


Chapter: To proceed in Allah's Cause

Narrated Anas bin Malik: The Prophet (PBUH) said, "A single endeavor (of fighting) in Allah's Cause in the forenoon or in the afternoon is better than the world and whatever is in it." ھم سے معلی بن اسد نے بیان کیا ‘ کھا ھم سے وھب بن خالد نے ( فضل جھاد میں ) بیان کیا ‘ کھا ھم سے حمید طویل نے اور ان سے انس بن مالک رضی اللھ عنھ نے کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا اللھ کے راستے میں گزرنے والی ایک صبح یا ایک شام دنیا سے اور جو کچھ دنیا میں ھے سب سے بھتر ھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 56 Hadith no 2792
Web reference: Sahih Bukhari Volume 4 Book 52 Hadith no 50


حَدَّثَنَا إِبْرَاهِيمُ بْنُ الْمُنْذِرِ، حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ فُلَيْحٍ، قَالَ حَدَّثَنِي أَبِي، عَنْ هِلاَلِ بْنِ عَلِيٍّ، عَنْ عَبْدِ الرَّحْمَنِ بْنِ أَبِي عَمْرَةَ، عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ ـ رضى الله عنه ـ عَنِ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم قَالَ ‏"‏لَقَابُ قَوْسٍ فِي الْجَنَّةِ خَيْرٌ مِمَّا تَطْلُعُ عَلَيْهِ الشَّمْسُ وَتَغْرُبُ ‏"‏‏.‏ وَقَالَ ‏"‏ لَغَدْوَةٌ أَوْ رَوْحَةٌ فِي سَبِيلِ اللَّهِ خَيْرٌ مِمَّا تَطْلُعُ عَلَيْهِ الشَّمْسُ وَتَغْرُبُ ‏"‏‏.‏

Narrated Abu Huraira: The Prophet (PBUH) said, "A place in Paradise as small as a bow is better than all that on which the sun rises and sets (i.e. all the world)." He also said, "A single endeavor in Allah's Cause in the afternoon or in the forenoon is better than all that on which the sun rises and sets." سے ابراھیم بن المنذر نے بیان کیا ‘ انھوں نے کھا ھم سے محمد بن فلیح نے بیان کیا ‘ انھوں نے کھا مجھ سے میرے والد نے بیان کیا ھلال بن علی سے ‘ ان سے عبدالرحمٰن بن ابی نمرھ نے اور ان سے ابوھریرھ رضی اللھ عنھ نے کھ نبی کرم صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا جنت میں ایک ( کمان ) ھاتھ جگھ دنیا کی ان تمام چیزوں سے بھتر ھے جن پر سورج طلوع اور غروب ھوتا ھے اور آپ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا اللھ کے راستے میں ایک صبح یا ایک شام چلنا ان سب چیزوں سے بھتر ھے جن پر سورج طلوع اور غروب ھوتا ھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 56 Hadith no 2793
Web reference: Sahih Bukhari Volume 4 Book 52 Hadith no 51


حَدَّثَنَا قَبِيصَةُ، حَدَّثَنَا سُفْيَانُ، عَنْ أَبِي حَازِمٍ، عَنْ سَهْلِ بْنِ سَعْدٍ ـ رضى الله عنه ـ عَنِ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم قَالَ ‏"‏ الرَّوْحَةُ وَالْغَدْوَةُ فِي سَبِيلِ اللَّهِ أَفْضَلُ مِنَ الدُّنْيَا وَمَا فِيهَا ‏"‏‏.‏

Narrated Sahl bin Sa`d: The Prophet (PBUH) said, "A single endeavor in Allah's Cause in the afternoon and in the forenoon is better than the world and whatever is in it." ھم سے قبیصھ نے بیان کیا ‘ انھوں نے کھا کھ ھم سے سفیان نے بیان کیا انھوں نے ابوحازم سے اور ان سے سھل بن سعد رضی اللھ عنھ نے کھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا اللھ کے راستے میں گزرنے والی ایک صبح و شام دنیا اور جو کچھ دنیا میں ھے سب سے بڑھ کر ھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 56 Hadith no 2794
Web reference: Sahih Bukhari Volume 4 Book 52 Hadith no 52



@2019 Copyrights: if you have any objection regarding any shared content on pdf9.com please click here.