Search hadith by
Hadith Book
Search Query
Search Language
English Arabic Urdu
Search Type Basic    Case Sensitive
 

Sahih Bukhari

Hajj (Pilgrimage)

كتاب الحج

حَدَّثَنِي عَلِيُّ بْنُ مُسْلِمٍ، حَدَّثَنَا عَبْدُ اللَّهِ بْنُ نُمَيْرٍ، حَدَّثَنَا عُبَيْدُ اللَّهِ، عَنْ نَافِعٍ، عَنِ ابْنِ عُمَرَ ـ رضى الله عنهما ـ قَالَ لَمَّا فُتِحَ هَذَانِ الْمِصْرَانِ أَتَوْا عُمَرَ فَقَالُوا يَا أَمِيرَ الْمُؤْمِنِينَ، إِنَّ رَسُولَ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم حَدَّ لأَهْلِ نَجْدٍ قَرْنًا، وَهُوَ جَوْرٌ عَنْ طَرِيقِنَا، وَإِنَّا إِنْ أَرَدْنَا قَرْنًا شَقَّ عَلَيْنَا‏.‏ قَالَ فَانْظُرُوا حَذْوَهَا مِنْ طَرِيقِكُمْ‏.‏ فَحَدَّ لَهُمْ ذَاتَ عِرْقٍ‏.‏


Chapter: The Miqat for the people of ‘Iraq is Dhat-‘Irq

Narrated Ibn `Umar: When these two towns (Basra and Kufa) were captured, the people went to `Umar and said, "O the Chief of the faithful believers! The Prophet (PBUH) fixed Qarn as the Miqat for the people of Najd, it is beyond our way and it is difficult for us to pass through it." He said, "Take as your Miqat a place situated opposite to Qarn on your usual way. So, he fixed Dhatu-Irq (as their Miqat)." ھم سے علی بن مسلم نے بیان کیا ، کھا کھ ھم سے عبداللھ بن نمیر نے بیان کیا ، کھا کھ ھم سے عبیداللھ عمری نے نافع سے بیان کیا اور ان سے عبداللھ بن عمر رضی اللھ عنھما نے کھ جب یھ دو شھر ( بصرھ اور کوفھ ) فتح ھوئے تو لوگ حضرت عمر رضی اللھ عنھ کے پاس آئے اور کھا کھ یا امیرالمؤمنین رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم نے نجد کے لوگوں کے لیے احرام باندھنے کی جگھ قرن منازل قرار دی ھے اور ھمارا راستھ ادھر سے نھیں ھے ، اگر ھم قرن کی طرف جائیں تو ھمارے لیے بڑی دشواری ھو گی ۔ اس پر حضرت عمر رضی اللھ عنھ نے فرمایا کھ پھر تم لوگ اپنے راستے میں اس کے برابر کوئی جگھ تجویز کر لو ۔ چنانچھ ان کے لیے ذات عرق کی تعیین کر دی ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 25 Hadith no 1531
Web reference: Sahih Bukhari Volume 2 Book 26 Hadith no 606


حَدَّثَنَا عَبْدُ اللَّهِ بْنُ يُوسُفَ، أَخْبَرَنَا مَالِكٌ، عَنْ نَافِعٍ، عَنْ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ عُمَرَ ـ رضى الله عنهما ـ أَنَّ رَسُولَ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم أَنَاخَ بِالْبَطْحَاءِ بِذِي الْحُلَيْفَةِ فَصَلَّى بِهَا‏.‏ وَكَانَ عَبْدُ اللَّهِ بْنُ عُمَرَ ـ رضى الله عنهما ـ يَفْعَلُ ذَلِكَ‏.‏

Narrated Nafi`: `Abdullah bin `Umar' said, "Allah's Messenger (PBUH) made his camel sit (i.e. he dismounted) at Al-Batha' in Dhul-Hulaifa and offered the prayer." `Abdullah bin `Umar used to do the same. ھم سے عبداللھ بن یوسف نے بیان کیا ، انھوں نے کھا کھ ھمیں امام مالک نے خبر دی ، انھیں نافع نے ، انھیں عبداللھ بن عمر رضی اللھ عنھما نے کھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم نے مقام ذوالحلیفھ کے پتھریلے میدان میں اپنی سواری روکی اور پھر وھیں آپ صلی اللھ علیھ وسلم نے نماز پڑھی ۔ عبداللھ بن عمر رضی اللھ عنھما بھی ایسا ھی کیا کرتے تھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 25 Hadith no 1532
Web reference: Sahih Bukhari Volume 2 Book 26 Hadith no 607


حَدَّثَنَا إِبْرَاهِيمُ بْنُ الْمُنْذِرِ، حَدَّثَنَا أَنَسُ بْنُ عِيَاضٍ، عَنْ عُبَيْدِ اللَّهِ، عَنْ نَافِعٍ، عَنْ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ عُمَرَ ـ رضى الله عنهما ـ أَنَّ رَسُولَ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم كَانَ يَخْرُجُ مِنْ طَرِيقِ الشَّجَرَةِ، وَيَدْخُلُ مِنْ طَرِيقِ الْمُعَرَّسِ، وَأَنَّ رَسُولَ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم كَانَ إِذَا خَرَجَ إِلَى مَكَّةَ يُصَلِّي فِي مَسْجِدِ الشَّجَرَةِ، وَإِذَا رَجَعَ صَلَّى بِذِي الْحُلَيْفَةِ بِبَطْنِ الْوَادِي، وَبَاتَ حَتَّى يُصْبِحَ‏.‏


Chapter: The going of the Prophet (saws) (for Hajj)

Narrated Ibn `Umar: Allah's Messenger (PBUH) used to go (for Hajj) via Ash-Shajara way and return via Muarras way; and no doubt, whenever Allah's Messenger (PBUH) went to Mecca, he used to offer the prayer in the Mosque of Ash-Shajara; and on his return, he used to offer the prayer at Dhul-Hulaifa in the middle of the valley, and pass the night there till morning. ھم سے ابراھیم بن المنذر نے بیان کیا ، انھوں نے کھا کھ ھم سے انس بن عیاض نے بیان کیا ، ان سے عبیداللھ عمری نے بیان کیا ، ان سے نافع نے بیان کیا اور ان سے عبداللھ بن عمر رضی اللھ عنھما نے بیان کیا کھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم شجرھ کے راستے سے گزرتے ھوئے ” معرس “ کے راستے سے مدینھ آتے ۔ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم جب مکھ جاتے تو شجرھ کی مسجد میں نماز پڑھتے لیکن واپسی میں ذوالحلیفھ کے نشیب میں نماز پڑھتے ۔ آپ صلی اللھ علیھ وسلم رات وھیں گزارتے تاآنکھ صبح ھو جاتی ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 25 Hadith no 1533
Web reference: Sahih Bukhari Volume 2 Book 26 Hadith no 608


حَدَّثَنَا الْحُمَيْدِيُّ، حَدَّثَنَا الْوَلِيدُ، وَبِشْرُ بْنُ بَكْرٍ التِّنِّيسِيُّ، قَالاَ حَدَّثَنَا الأَوْزَاعِيُّ، قَالَ حَدَّثَنِي يَحْيَى، قَالَ حَدَّثَنِي عِكْرِمَةُ، أَنَّهُ سَمِعَ ابْنَ عَبَّاسٍ ـ رضى الله عنهما ـ يَقُولُ إِنَّهُ سَمِعَ عُمَرَ ـ رضى الله عنه ـ يَقُولُ سَمِعْتُ النَّبِيَّ صلى الله عليه وسلم بِوَادِي الْعَقِيقِ يَقُولُ ‏"‏ أَتَانِي اللَّيْلَةَ آتٍ مِنْ رَبِّي فَقَالَ صَلِّ فِي هَذَا الْوَادِي الْمُبَارَكِ وَقُلْ عُمْرَةً فِي حَجَّةٍ ‏"‏‏.‏


Chapter: "Al-'Aqiq is a blessed valley."

Narrated `Umar: In the valley of Al-`Aqiq I heard Allah's Messenger (PBUH) saying, "To night a messenger came to me from my Lord and asked me to pray in this blessed valley and to assume Ihram for Hajj and `Umra together. " ھم سے ابوبکر عبداللھ حمیدی نے بیان کیا ، کھا کھ ھم سے ولید اور بشر بن بکر تنیسی نے بیان کیا ، انھوں نے کھا کھ ھم سے امام اوزاعی نے بیان کیا ، کھا کھ ھم سے یحییٰ بن ابی کثیر نے بیان کیا ، ان سے عکرمھ نے بیان کیا ، انھوں نے حضرت عبداللھ بن عباس رضی اللھ عنھما سے سنا ، وھ بیان کرتے تھے کھ میں نے عمر رضی اللھ عنھ سے سنا ، ان کا بیان تھا کھ میں نے رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم سے وادی عقیق میں سنا ۔ آپ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا تھا کھ رات میرے پاس میرے رب کا ایک فرشتھ آیا اور کھا کھ اس ” مبارک وادی “ میں نماز پڑھ اور اعلان کر کھ عمرھ حج میں شریک ھو گیا ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 25 Hadith no 1534
Web reference: Sahih Bukhari Volume 2 Book 26 Hadith no 609


حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ أَبِي بَكْرٍ، حَدَّثَنَا فُضَيْلُ بْنُ سُلَيْمَانَ، حَدَّثَنَا مُوسَى بْنُ عُقْبَةَ، قَالَ حَدَّثَنِي سَالِمُ بْنُ عَبْدِ اللَّهِ، عَنْ أَبِيهِ ـ رضى الله عنه ـ عَنِ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم أَنَّهُ رُئِيَ وَهُوَ فِي مُعَرَّسٍ بِذِي الْحُلَيْفَةِ بِبَطْنِ الْوَادِي قِيلَ لَهُ إِنَّكَ بِبَطْحَاءَ مُبَارَكَةٍ‏.‏ وَقَدْ أَنَاخَ بِنَا سَالِمٌ، يَتَوَخَّى بِالْمُنَاخِ الَّذِي كَانَ عَبْدُ اللَّهِ يُنِيخُ، يَتَحَرَّى مُعَرَّسَ رَسُولِ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم وَهُوَ أَسْفَلُ مِنَ الْمَسْجِدِ الَّذِي بِبَطْنِ الْوَادِي، بَيْنَهُمْ وَبَيْنَ الطَّرِيقِ وَسَطٌ مِنْ ذَلِكَ‏.‏

Narrated Musa bin `Uqba: Salim bin `Abdullah's father said, "The Prophet (PBUH) said that while resting in the bottom of the valley at Muarras in Dhul-Hulaifa, he had been addressed in a dream: 'You are verily in a blessed valley.' " Salim made us to dismount from our camels at the place where `Abdullah used to dismount, aiming at the place where Allah's Messenger (PBUH) had rested and it was below the Mosque situated in the middle of the valley in between them (the residence) and the road. ھم سے محمد بن ابی بکر مقدمی نے بیان کیا ، کھا کھ ھم سے فضیل بن سلیمان نے بیان کیا ، کھا کھ ھم سے موسیٰ بن عقبھ نے بیان کیا ، کھا کھ ھم سے سالم بن عبداللھ بن عمر نے بیان کیا اور ان سے ان کے والد نے نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم کے حوالھ سے کھ معرس کے قریب ذوالحلیفھ کی بطن وادی ( وادی عقیق ) میں آپ صلی اللھ علیھ وسلم کو خواب دکھایا گیا ۔ ( جس میں ) آپ صلی اللھ علیھ وسلم سے کھا گیا تھا کھ آپ اس وقت ” بطحاء مبارکھ “ میں ھیں ۔ موسیٰ بن عقبھ نے کھا کھ سالم نے ھم کو بھی وھاں ٹھھرایا وھ اس مقام کو ڈھونڈ رھے تھے جھاں عبداللھ اونٹ بٹھایا کرتے تھے یعنی جھاں آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم رات کو اترا کرتے تھے ۔ وھ مقام اس مسجد کے نیچے کی طرف میں ھے جو نالے کے نشیب میں ھے ۔ اترنے والوں اور راستے کے بیچوں بیچ ( وادی عقیق مدینھ سے چار میل بقیع کی جانب ھے ) ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 25 Hadith no 1535
Web reference: Sahih Bukhari Volume 2 Book 26 Hadith no 610


قَالَ أَبُو عَاصِمٍ أَخْبَرَنَا ابْنُ جُرَيْجٍ، أَخْبَرَنِي عَطَاءٌ، أَنَّ صَفْوَانَ بْنَ يَعْلَى، أَخْبَرَهُ أَنَّ يَعْلَى قَالَ لِعُمَرَ ـ رضى الله عنه ـ أَرِنِي النَّبِيَّ صلى الله عليه وسلم حِينَ يُوحَى إِلَيْهِ قَالَ فَبَيْنَمَا النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم بِالْجِعْرَانَةِ، وَمَعَهُ نَفَرٌ مِنْ أَصْحَابِهِ، جَاءَهُ رَجُلٌ فَقَالَ يَا رَسُولَ اللَّهِ كَيْفَ تَرَى فِي رَجُلٍ أَحْرَمَ بِعُمْرَةٍ، وَهْوَ مُتَضَمِّخٌ بِطِيبٍ فَسَكَتَ النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم سَاعَةً فَجَاءَهُ الْوَحْىُ، فَأَشَارَ عُمَرُ ـ رضى الله عنه ـ إِلَى يَعْلَى، فَجَاءَ يَعْلَى، وَعَلَى رَسُولِ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم ثَوْبٌ قَدْ أُظِلَّ بِهِ فَأَدْخَلَ رَأْسَهُ، فَإِذَا رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم مُحْمَرُّ الْوَجْهِ، وَهُوَ يَغِطُّ ثُمَّ سُرِّيَ عَنْهُ فَقَالَ ‏"‏ أَيْنَ الَّذِي سَأَلَ عَنِ الْعُمْرَةِ ‏"‏ فَأُتِيَ بِرَجُلٍ فَقَالَ ‏"‏ اغْسِلِ الطِّيبَ الَّذِي بِكَ ثَلاَثَ مَرَّاتٍ، وَانْزِعْ عَنْكَ الْجُبَّةَ، وَاصْنَعْ فِي عُمْرَتِكَ كَمَا تَصْنَعُ فِي حَجَّتِكَ ‏"‏‏.‏ قُلْتُ لِعَطَاءٍ أَرَادَ الإِنْقَاءَ حِينَ أَمَرَهُ أَنْ يَغْسِلَ ثَلاَثَ مَرَّاتٍ قَالَ نَعَمْ‏.‏


Chapter: To wash the perfume thrice of Ihram

Narrated Safwan bin Ya'la: Ya'la said to 'Umar, "Show me the Prophet (PBUH) when he is being inspired Divinely." While the Prophet (PBUH) was at Ji'rana (in the company of some of his Companions) a person came and asked, "O Allah's Messenger! What is your verdict regarding that person who assumes Ihram for 'Umra and is scented with perfume ?" The Prophet (PBUH) kept quiet for a while and he was Divinely inspired (then). 'Umar beckoned Ya'la. So he came, and the Allah's Messenger (PBUH) was shaded with sheet. Ya'la put his head in and saw that the face of Allah's Messenger was red and he was snoring. When the state of the Prophet (PBUH) was over, he (PBUH) asked, "Where is the person who asked about 'Umra?" Then that person was brought and the Prophet (PBUH) said, "Wash the perfume off your body thrice and take off the cloak and do the same in 'Umra as you do in Hajj." ھم سے محمد نے بیان کیا ، کھا کھ ھم سے ابوعاصم ، ضحاک بن مخلد نبیل نے بیان کیا ، کھا کھ ھمیں ابن جریج نے خبر دی کھا کھ مجھے عطاء بن ابی رباح نے خبرد ی ، انھیں صفوان بن یعلیٰ نے ، کھا کھ ان کے باپ یعلیٰ بن امیھ نے حضرت عمر رضی اللھ عنھ سے کھا کھ کبھی آپ مجھے نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم کو اس حال میں دکھایئے جب آپ صلی اللھ علیھ وسلم پر وحی نازل ھو رھی ھو ۔ انھوں نے بیان کیا کھ ایک بار رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم جعرانھ میں اپنے اصحاب کی ایک جماعت کے ساتھ ٹھھرے ھوئے تھے کھ ایک شخص نے آ کر پوچھا یا رسول اللھ ! اس شخص کے متعلق آپ کا کیا حکم ھے جس نے عمرھ کا احرام اس طرح باندھا کھ اس کے کپڑے خوشبو میں بسے ھوئے ھوں ۔ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم اس پر تھوڑی دیر کے لیے چپ ھو گئے ۔ پھر آپ صلی اللھ علیھ وسلم پر وحی نازل ھوئی تو حضرت عمر رضی اللھ عنھ نے یعلیٰ رضی اللھ عنھ کو اشارھ کیا ۔ یعلیٰ آئے تو رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم پر ایک کپڑا تھا جس کے اندر آپ صلی اللھ علیھ وسلم تشریف رکھتے تھے ۔ انھوں نے کپڑے کے اندر اپنا سر کیا تو کیا دیکھتے ھیں کھ روئے مبارک سرخ ھے اور آپ صلی اللھ علیھ وسلم خراٹے لے رھے ھیں ۔ پھر یھ حالت ختم ھوئی تو آپ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ وھ شخص کھاں ھے جس نے عمرھ کے متعلق پوچھا تھا ۔ شخص مذکور حاضر کیا گیا تو آپ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ جو خوشبو لگا رکھی ھے اسے تین مرتبھ دھو لے اور اپنا جبھ اتار دے ۔ عمرھ میں بھی اسی طرح کر جس طرح حج میں کرتے ھو ۔ میں نے عطاء سے پوچھا کھ کیا آنحضور صلی اللھ علیھ وسلم کے تین مرتبھ دھونے کے حکم سے پوری طرح صفائی مراد تھی ؟ تو انھوں نے کھا کھ ھاں ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 25 Hadith no 1536
Web reference: Sahih Bukhari Volume 2 Book 26 Hadith no 610



@2019 Copyrights: if you have any objection regarding any shared content on pdf9.com please click here.