Search hadith by
Hadith Book
Search Query
Search Language
English Arabic Urdu
Search Type Basic    Case Sensitive
 

Sahih Bukhari

Hunting, Slaughtering

كتاب الذبائح والصيد

حَدَّثَنَا أَبُو نُعَيْمٍ، حَدَّثَنَا زَكَرِيَّاءُ، عَنْ عَامِرٍ، عَنْ عَدِيِّ بْنِ حَاتِمٍ ـ رضى الله عنه ـ قَالَ سَأَلْتُ النَّبِيَّ صلى الله عليه وسلم عَنْ صَيْدِ الْمِعْرَاضِ قَالَ ‏"‏ مَا أَصَابَ بِحَدِّهِ فَكُلْهُ، وَمَا أَصَابَ بِعَرْضِهِ فَهْوَ وَقِيذٌ ‏"‏‏.‏ وَسَأَلْتُهُ عَنْ صَيْدِ الْكَلْبِ فَقَالَ ‏"‏ مَا أَمْسَكَ عَلَيْكَ فَكُلْ، فَإِنَّ أَخْذَ الْكَلْبِ ذَكَاةٌ، وَإِنْ وَجَدْتَ مَعَ كَلْبِكَ أَوْ كِلاَبِكَ كَلْبًا غَيْرَهُ فَخَشِيتَ أَنْ يَكُونَ أَخَذَهُ مَعَهُ، وَقَدْ قَتَلَهُ، فَلاَ تَأْكُلْ، فَإِنَّمَا ذَكَرْتَ اسْمَ اللَّهِ عَلَى كَلْبِكَ وَلَمْ تَذْكُرْهُ عَلَى غَيْرِهِ ‏"‏‏.‏

Narrated Adi bin Hatim: I asked the Prophet (PBUH) about the game killed by a Mi'rad (i.e. a sharp-edged piece of wood or a piece of wood provided with a sharp piece of iron used for hunting). He said, "If the game is killed with its sharp edge, eat of it, but if it is killed with its shaft, with a hit by its broad side then the game is (unlawful to eat) for it has been beaten to death." I asked him about the game killed by a trained hound. He said, "If the hound catches the game for you, eat of it, for killing the game by the hound, is like its slaughtering. But if you see with your hound or hounds another dog, and you are afraid that it might have shared in hunting the game with your hound and killed it, then you should not eat of it, because you have mentioned Allah's name on (sending) your hound only, but you have not mentioned it on some other hound. ھم سے ابونعیم فضل بن دکین نے بیان کیا ، کھا ھم سے زکریابن ابی زائدھ نے بیان کیا ، ان سے عامر شعبی نے ، ان سے عدی بن حاتم رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ میں نے نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم سے بے پر کے تیر یا لکڑی یا گز سے شکار کے بارے میں پوچھا تو آپ نے فرمایا کھ اگر اس کی نوک شکار کو لگ جائے تو کھا لو لیکن اگر اس کی عرض کی طرف سے شکار کو لگے تو وھ نھ کھاؤ کیونکھ وھ موقوذھ ھے اور میں نے آپ سے کتے کے شکار کے بارے میں سوال کیا تو آپ نے فرمایا کھ جسے وھ تمھارے لیے رکھے ( یعنی وھ خود نھ کھائے ) اسے کھا لو کیونکھ کتے کا شکار کو پکڑ لینا یھ بھی ذبح کرنا ھے اور اگر تم اپنے کتے یا کتوں کے ساتھ کوئی دوسرا کتا بھی پاؤ اور تمھیں اندیشھ ھو کھ تمھارے کتے نے شکار اس دوسرے کے ساتھ پکڑا ھو گا اورکتا شکار کو مار چکا ھو تو ایسا شکار نھ کھاؤ کیونکھ تم نے اللھ کا نام ( بسم اللھ پڑھ کر ) اپنے کتے پر لیا تھا دوسرے کتے پر نھیں لیا تھا ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 72 Hadith no 5475
Web reference: Sahih Bukhari Volume 7 Book 67 Hadith no 384


حَدَّثَنَا سُلَيْمَانُ بْنُ حَرْبٍ، حَدَّثَنَا شُعْبَةُ، عَنْ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ أَبِي السَّفَرِ، عَنِ الشَّعْبِيِّ، قَالَ سَمِعْتُ عَدِيَّ بْنَ حَاتِمٍ ـ رضى الله عنه ـ قَالَ سَأَلْتُ رَسُولَ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم عَنِ الْمِعْرَاضِ فَقَالَ ‏"‏ إِذَا أَصَبْتَ بِحَدِّهِ فَكُلْ، فَإِذَا أَصَابَ بِعَرْضِهِ فَقَتَلَ فَإِنَّهُ وَقِيذٌ، فَلاَ تَأْكُلْ ‏"‏‏.‏ فَقُلْتُ أُرْسِلُ كَلْبِي‏.‏ قَالَ ‏"‏ إِذَا أَرْسَلْتَ كَلْبَكَ وَسَمَّيْتَ، فَكُلْ ‏"‏‏.‏ قُلْتُ فَإِنْ أَكَلَ قَالَ ‏"‏ فَلاَ تَأْكُلْ، فَإِنَّهُ لَمْ يُمْسِكْ عَلَيْكَ، إِنَّمَا أَمْسَكَ عَلَى نَفْسِهِ ‏"‏‏.‏ قُلْتُ أُرْسِلُ كَلْبِي فَأَجِدُ مَعَهُ كَلْبًا آخَرَ‏.‏ قَالَ ‏"‏ لاَ تَأْكُلْ، فَإِنَّكَ إِنَّمَا سَمَّيْتَ عَلَى كَلْبِكَ، وَلَمْ تُسَمِّ عَلَى آخَرَ ‏"‏‏.‏

Narrated `Adi bin Hatim: I asked Allah's Messenger (PBUH) about the Mi'rad. He said, "If you hit the game with its sharp edge, eat it, but if the Mi'rad hits the game with its shaft with a hit by its broad side do not eat it, for it has been beaten to death with a piece of wood. (i.e. unlawful)." I asked, "If I let loose my trained hound after a game?" He said, "If you let loose your trained hound after game, and mention the name of Allah, then you can eat." I said, "If the hound eats of the game?" He said "Then you should not eat of it, for the hound has hunted the game for itself and not for you." I said, "Some times I send my hound and then I find some other hound with it?" He said "Don't eat the game, as you have mentioned the Name of Allah on your dog only and not on the other." ھم سے سلیمان بن حرب نے بیان کیا ، کھا ھم سے شعبھ نے بیان کیا ، ان سے عبداللھ بن ابی سفر نے ، ان سے شعبی نے کھا کھ میں نے حضرت عدی بن حاتم رضی اللھ عنھ سے سنا ، انھوں نے بیان کیا کھ میں نے رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم سے بے پر کے تیر یا لکڑی گز سے شکار کے بارے میں پوچھا تو آپ نے فرمایا کھ جب تم اس کی نوک سے شکار کومار لو تو اسے کھاؤ لیکن اگر اس کی عرض کی طرف سے شکار کو لگے اور اس سے وھ مر جائے تو وھ موقوذھ ( مردار ) ھے اسے نھ کھاؤ ۔ میں نے سوال کیا کھ میںاپنا کتا بھی ( شکار کے لیے ) دوڑاتا ھوں ؟ آپ نے فرمایا کھ جب تم اپنے کتے پر بسم اللھ پڑھ کرشکار کے پیچھے دوڑاؤ تو وھ شکار کھا سکتے ھو ۔ میں نے پوچھااور اگر وھ کتا شکار میں سے کھا لے ؟ آپ نے فرمایا کھ پھر نھ کھاؤ کیونکھ وھ شکار اس نے تمھارے لیے نھیںپکڑا تھا ، صرف اپنے لیے پکڑا تھا ۔ میں نے پوچھا میں بعض وقت اپنا کتا چھوڑتا ھوں اور بعد میں اس کے ساتھ دوسرا کتا بھی پاتا ھوں ؟ آپ نے فرمایا کھ پھر ( اس کا شکار ) نھ کھاؤ کیونکھ تم نے بسم اللھ صرف ا پنے کتے پر پڑھی ھے ، دوسرے پر نھیں پڑھی ھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 72 Hadith no 5476
Web reference: Sahih Bukhari Volume 7 Book 67 Hadith no 385


حَدَّثَنَا قَبِيصَةُ، حَدَّثَنَا سُفْيَانُ، عَنْ مَنْصُورٍ، عَنْ إِبْرَاهِيمَ، عَنْ هَمَّامِ بْنِ الْحَارِثِ، عَنْ عَدِيِّ بْنِ حَاتِمٍ ـ رضى الله عنه ـ قَالَ قُلْتُ يَا رَسُولَ اللَّهِ إِنَّا نُرْسِلُ الْكِلاَبَ الْمُعَلَّمَةَ‏.‏ قَالَ ‏"‏ كُلْ مَا أَمْسَكْنَ عَلَيْكَ ‏"‏‏.‏ قُلْتُ وَإِنْ قَتَلْنَ قَالَ ‏"‏ وَإِنْ قَتَلْنَ ‏"‏‏.‏ قُلْتُ وَإِنَّا نَرْمِي بِالْمِعْرَاضِ‏.‏ قَالَ ‏"‏ كُلْ مَا خَزَقَ، وَمَا أَصَابَ بِعَرْضِهِ فَلاَ تَأْكُلْ ‏"‏‏.‏


Chapter: The game killed by the broad side of Al- Mi'rad

Narrated Adi bin Hatim: I said, "O Allah's Messenger (PBUH)! We let loose our trained hounds after a game?" He said, "Eat what they hunt for you." I said, "Even if they killed (the game)?" He replied, 'Even if they killed (the game)." I said, 'We also hit (the game) with the Mi'rad?" He said, "Eat of the animal which the Mi'rad kills by piercing its body, but do not eat of the animal which is killed by the broad side of the Mi'rad.'' ھم سے قبیصھ بن عقبھ نے بیان کیا ، کھا ھم سے سفیان ثوری نے بیان کیا ، ان سے منصور بن معتمر نے ، ان سے ابراھیم نخعی نے ، ان سے ھمام بن حارث نے اور ان سے عدی بن حاتم رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ میں نے عرض کیا یا رسول اللھ ! ھم سکھائے ھوئے کتے ( شکار پر ) چھوڑتے ھیں ؟ آپ نے فرمایا کھ جو شکار وھ صرف تمھارے لیے رکھے اسے کھاؤ ۔ میں نے عرض کیا اگرچھ کتے شکار کو مار ڈالیں ۔ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا ( ھاں ) اگرچھ مار ڈالیں ! میں نے عرض کیا کھ ھم بے پر کے تیر یا لکڑی سے شکار کرتے ھیں ؟ آپ نے فرمایا کھ اگر ان کی دھاراس کو زخمی کر کے پھاڑ ڈالے تو کھاؤ لیکن اگر ان کے عرض سے شکار مارا جائے تو اسے نھ کھاؤ ( وھ مر دار ھے )

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 72 Hadith no 5477
Web reference: Sahih Bukhari Volume 7 Book 67 Hadith no 386


حَدَّثَنَا عَبْدُ اللَّهِ بْنُ يَزِيدَ، حَدَّثَنَا حَيْوَةُ، قَالَ أَخْبَرَنِي رَبِيعَةُ بْنُ يَزِيدَ الدِّمَشْقِيُّ، عَنْ أَبِي إِدْرِيسَ، عَنْ أَبِي ثَعْلَبَةَ الْخُشَنِيِّ، قَالَ قُلْتُ يَا نَبِيَّ اللَّهِ إِنَّا بِأَرْضِ قَوْمٍ أَهْلِ الْكِتَابِ، أَفَنَأْكُلُ فِي آنِيَتِهِمْ وَبِأَرْضِ صَيْدٍ، أَصِيدُ بِقَوْسِي وَبِكَلْبِي الَّذِي لَيْسَ بِمُعَلَّمٍ، وَبِكَلْبِي الْمُعَلَّمِ، فَمَا يَصْلُحُ لِي قَالَ ‏"‏ أَمَّا مَا ذَكَرْتَ مِنْ أَهْلِ الْكِتَابِ فَإِنْ وَجَدْتُمْ غَيْرَهَا فَلاَ تَأْكُلُوا فِيهَا، وَإِنْ لَمْ تَجِدُوا فَاغْسِلُوهَا وَكُلُوا فِيهَا، وَمَا صِدْتَ بِقَوْسِكَ فَذَكَرْتَ اسْمَ اللَّهِ فَكُلْ، وَمَا صِدْتَ بِكَلْبِكَ الْمُعَلَّمِ فَذَكَرْتَ اسْمَ اللَّهِ فَكُلْ، وَمَا صِدْتَ بِكَلْبِكَ غَيْرَ مُعَلَّمٍ فَأَدْرَكْتَ ذَكَاتَهُ فَكُلْ ‏"‏‏.‏

Narrated Abu Tha`laba Al-Khushani: I said, "O Allah's Prophet! We are living in a land ruled by the people of the Scripture; Can we take our meals in their utensils? In that land there is plenty of game and I hunt the game with my bow and with my hound that is not trained and with my trained hound. Then what is lawful for me to eat?" He said, "As for what you have mentioned about the people of the Scripture, if you can get utensils other than theirs, do not eat out of theirs, but if you cannot get other than theirs, wash their utensils and eat out of it. If you hunt an animal with your bow after mentioning Allah's Name, eat of it. and if you hunt something with your trained hound after mentioning Allah's Name, eat of it, and if you hunt something with your untrained hound (and get it before it dies) and slaughter it, eat of it." ھم سے عبداللھ بن یزید مقبری نے بیان کیا ، کھا ھم سے حیوھ بن شریح نے بیان کیا ، کھا کھ مجھے ربیعھ بن یزید دمشقی نے خبر دی ، انھیں ابو ادریس عائذ اللھ خولانی نے ، انھیں حضرت ابو ثعلبھ خشنی رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ میں نے عرض کیا اے اللھ کے نبی ! ھم اھل کتاب کے گاؤں میں رھتے ھیں تو کیا ھم ان کے برتن میں کھا سکتے ھیں ؟ اور ھم ایسی زمین میں رھتے ھیں جھاں شکار بھت ھوتا ھے ۔ میں تیر کمان سے بھی شکار کرتا ھوں اور اپنے اس کتے سے بھی جو سکھایا ھوا نھیں ھے اور اس کتے سے بھی جو سکھایا ھوا ھے تو اس میں سے کس کا کھانا میرے لیے جائز ھے ۔ آپ نے فرمایا کھ تم نے جو اھل کتاب کے برتن کا ذکر کیا ھے تو اگر تمھیں اس کے سوا کوئی اور برتن مل سکے تو اس میں نھ کھاؤ لیکن تمھیں کوئی دوسرا برتن نھ ملے تو ان کے برتن کو خوب دھوکر اس میں کھا سکتے ھو اور جو شکار تم اپنی تیر کمان سے کرو اور ( تیر پھینکتے وقت ) اللھ کانام لیا ھو تو ( اس کا شکار ) کھا سکتے ھو اور جو شکار تم نے غیر سدھائے ھوئے کتے سے کیا ھو اور شکار خود ذبح کیا ھو تو اسے کھا سکتے ھو ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 72 Hadith no 5478
Web reference: Sahih Bukhari Volume 7 Book 67 Hadith no 387


حَدَّثَنَا يُوسُفُ بْنُ رَاشِدٍ، حَدَّثَنَا وَكِيعٌ، وَيَزِيدُ بْنُ هَارُونَ ـ وَاللَّفْظُ لِيَزِيدَ ـ عَنْ كَهْمَسِ بْنِ الْحَسَنِ، عَنْ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ بُرَيْدَةَ، عَنْ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ مُغَفَّلٍ، أَنَّهُ رَأَى رَجُلاً يَخْذِفُ فَقَالَ لَهُ لاَ تَخْذِفْ فَإِنَّ رَسُولَ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم نَهَى عَنِ الْخَذْفِ ـ أَوْ كَانَ يَكْرَهُ الْخَذْفَ ـ وَقَالَ ‏"‏ إِنَّهُ لاَ يُصَادُ بِهِ صَيْدٌ وَلاَ يُنْكَى بِهِ عَدُوٌّ، وَلَكِنَّهَا قَدْ تَكْسِرُ السِّنَّ وَتَفْقَأُ الْعَيْنَ ‏"‏‏.‏ ثُمَّ رَآهُ بَعْدَ ذَلِكَ يَخْذِفُ فَقَالَ لَهُ أُحَدِّثُكَ عَنْ رَسُولِ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم أَنَّهُ نَهَى عَنِ الْخَذْفِ‏.‏ أَوْ كَرِهَ الْخَذْفَ، وَأَنْتَ تَخْذِفُ لاَ أُكَلِّمُكَ كَذَا وَكَذَا‏.‏


Chapter: Al-Khadhf and Al-Bunduqa

Narrated `Abdullah bin Maghaffal: that he saw a man throwing stones with two fingers (at something) and said to him, "Do not throw stones, for Allah's Messenger (PBUH) has forbidden throwing stones, or he used to dislike it." `Abdullah added: Throwing stones will neither hunt the game, nor kill (or hurt) an enemy, but it may break a tooth or gouge out an eye." Afterwards `Abdullah once again saw the man throwing stones. He said to him, "I tell you that Allah's Messenger (PBUH) has forbidden or disliked the throwing the stones (in such a way), yet you are throwing stones! I shall not talk to you for such-and-such a period." ھم سے یوسف بن راشد نے بیان کیا ، کھا ھم سے وکیع اور یزید بن ھارون نے بیان کیا اور الفاظ حدیث یزید کے ھیں ، ان سے کھمس بن حسن نے ، ان سے عبداللھ بن بریدھ نے ، حضرت عبداللھ بن مغفل رضی اللھ عنھ نے ایک شخص کو کنکری پھینکتے دیکھا تو فرمایا کھ کنکری نھ پھینکو کیونکھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم نے کنکری پھینکنے سے منع فرمایا ھے یا ( انھوں نے بیان کیا کھ ) آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم کنکری پھینکنے کو پسند نھیں کرتے تھے اور کھا کھ اس سے نھ شکار کیا جا سکتا ھے اور نھ دشمن کو کوئی نقصان پھنچایا جا سکتا ھے البتھ یھ کبھی کسی کا دانت توڑ دیتی ھے اور آنکھ پھوڑ دیتی ھے ۔ اس کے بعد بھی انھوں نے اس شخص کو لنکریاں پھینکتے دیکھا تو کھا کھ میں رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم کی حدیث تمھیں سنا رھا ھوں کھ آپ نے کنکری پھینکنے سے منع فرمایا یا کنکری پھینکنے کو ناپسند کیا اور تم اب بھی پھینکے جا رھے ھو ، میں تم سے اتنے دنوں تک کلام نھیں کروں گا ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 72 Hadith no 5479
Web reference: Sahih Bukhari Volume 7 Book 67 Hadith no 388


حَدَّثَنَا مُوسَى بْنُ إِسْمَاعِيلَ، حَدَّثَنَا عَبْدُ الْعَزِيزِ بْنُ مُسْلِمٍ، حَدَّثَنَا عَبْدُ اللَّهِ بْنُ دِينَارٍ، قَالَ سَمِعْتُ ابْنَ عُمَرَ ـ رضى الله عنهما ـ عَنِ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم قَالَ ‏"‏ مَنِ اقْتَنَى كَلْبًا لَيْسَ بِكَلْبِ مَاشِيَةٍ أَوْ ضَارِيَةٍ، نَقَصَ كُلَّ يَوْمٍ مِنْ عَمَلِهِ قِيرَاطَانِ ‏"‏‏.‏


Chapter: A (pet) dog

Narrated Ibn `Umar: The Prophet (PBUH) said, "Whoever keeps a (pet) dog which is neither a watch dog nor a hunting dog, will get a daily deduction of two Qirat from his good deeds." ھم سے مسلم بن اسماعیل نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے عبدالعزیز بن مسلم نے بیان کیا ، ان سے عبداللھ بن دینار نے بیان کیا ، انھوں نے کھا کھ میں نے حضرت ابن عمر رضی اللھ عنھما سے سنا کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا جس نے ایسا کتا پالا جو نھ مویشی کی حفاظت کے لیے ھے اور نھ شکار کرنے کے لیے تو روزانھ اس کی نیکیوں میں سے دو قیراط کی کمی ھو جاتی ھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 72 Hadith no 5480
Web reference: Sahih Bukhari Volume 7 Book 67 Hadith no 389



Copyrights: if you have any objection regarding any shared content on pdf9.com please click here.