Search hadith by
Hadith Book
Search Query
Search Language
English Arabic Urdu
Search Type Basic    Case Sensitive
 

Sahih Bukhari

Judgments (Ahkaam)

كتاب الأحكام

حَدَّثَنَا سُلَيْمَانُ بْنُ حَرْبٍ، حَدَّثَنَا حَمَّادٌ، عَنِ الْجَعْدِ، عَنْ أَبِي رَجَاءٍ، عَنِ ابْنِ عَبَّاسٍ، يَرْوِيهِ قَالَ قَالَ النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ مَنْ رَأَى مِنْ أَمِيرِهِ شَيْئًا فَكَرِهَهُ فَلْيَصْبِرْ، فَإِنَّهُ لَيْسَ أَحَدٌ يُفَارِقُ الْجَمَاعَةَ شِبْرًا فَيَمُوتُ إِلاَّ مَاتَ مِيتَةً جَاهِلِيَّةً ‏"‏‏.‏

Narrated Ibn `Abbas: The Prophet (PBUH) said, "If somebody sees his Muslim ruler doing something he disapproves of, he should be patient, for whoever becomes separate from the Muslim group even for a span and then dies, he will die as those who died in the Pre-lslamic period of ignorance (as rebellious sinners). (See Hadith No. 176 and 177) ھم سے سلیمان بن حرب نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے حماد نے بیان کیا ، ان سے جعد نے بیان کیا اور ان سے ابورجاء نے بیان کیا اور ان سے عبداللھ بن عباس رضی اللھ عنھما نے بیان کیا کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا ، جس نے اپنے امیر میں کوئی برا کام دیکھا تو اسے صبر کرنا چاھئے کیونکھ کوئی اگر جماعت سے ایک بالشت بھی جدا ھو تو وھ جاھلیت کی موت مرے گا ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 93 Hadith no 7143
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 89 Hadith no 257


حَدَّثَنَا مُسَدَّدٌ، حَدَّثَنَا يَحْيَى بْنُ سَعِيدٍ، عَنْ عُبَيْدِ اللَّهِ، حَدَّثَنِي نَافِعٌ، عَنْ عَبْدِ اللَّهِ ـ رضى الله عنه ـ عَنِ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم قَالَ ‏"‏ السَّمْعُ وَالطَّاعَةُ عَلَى الْمَرْءِ الْمُسْلِمِ، فِيمَا أَحَبَّ وَكَرِهَ، مَا لَمْ يُؤْمَرْ بِمَعْصِيَةٍ، فَإِذَا أُمِرَ بِمَعْصِيَةٍ فَلاَ سَمْعَ وَلاَ طَاعَةَ ‏"‏‏.‏

Narrated `Abdullah: The Prophet (PBUH) said, "A Muslim has to listen to and obey (the order of his ruler) whether he likes it or not, as long as his orders involve not one in disobedience (to Allah), but if an act of disobedience (to Allah) is imposed one should not listen to it or obey it. (See Hadith No. 203, Vol. 4) ھم سے مسدد بن مسرھد نے بیان کیا ، کھا ھم سے یحییٰ بن سعید نے بیان کیا ، ان سے عبیداللھ نے ، ان سے نافع نے اور ان سے عبداللھ بن مسعود رضی اللھ عنھما نے نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم سے فرمایا ، مسلمان کے لیے امیر کی بات سننا اور اس کی اطاعت کرنا ضروری ھے ۔ ان چیزوں میں بھی جنھیں وھ پسند کرے اور ان میں بھی جنھیں وھ ناپسند کرے ، جب تک اسے معصیت کا حکم نھ دیا جائے ۔ پھر جب اسے معصیت کا حکم دیا جائے تو نھ سننا باقی رھتا ھے نھ اطاعت کرنا ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 93 Hadith no 7144
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 89 Hadith no 258


حَدَّثَنَا عُمَرُ بْنُ حَفْصِ بْنِ غِيَاثٍ، حَدَّثَنَا أَبِي، حَدَّثَنَا الأَعْمَشُ، حَدَّثَنَا سَعْدُ بْنُ عُبَيْدَةَ، عَنْ أَبِي عَبْدِ الرَّحْمَنِ، عَنْ عَلِيٍّ ـ رضى الله عنه ـ قَالَ بَعَثَ النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم سَرِيَّةً، وَأَمَّرَ عَلَيْهِمْ رَجُلاً مِنَ الأَنْصَارِ وَأَمَرَهُمْ أَنْ يُطِيعُوهُ، فَغَضِبَ عَلَيْهِمْ وَقَالَ أَلَيْسَ قَدْ أَمَرَ النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم أَنَّ تُطِيعُونِي قَالُوا بَلَى‏.‏ قَالَ عَزَمْتُ عَلَيْكُمْ لَمَا جَمَعْتُمْ حَطَبًا وَأَوْقَدْتُمْ نَارًا، ثُمَّ دَخَلْتُمْ فِيهَا، فَجَمَعُوا حَطَبًا فَأَوْقَدُوا، فَلَمَّا هَمُّوا بِالدُّخُولِ فَقَامَ يَنْظُرُ بَعْضُهُمْ إِلَى بَعْضٍ، قَالَ بَعْضُهُمْ إِنَّمَا تَبِعْنَا النَّبِيَّ صلى الله عليه وسلم فِرَارًا مِنَ النَّارِ، أَفَنَدْخُلُهَا، فَبَيْنَمَا هُمْ كَذَلِكَ إِذْ خَمَدَتِ النَّارُ، وَسَكَنَ غَضَبُهُ، فَذُكِرَ لِلنَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم فَقَالَ ‏"‏ لَوْ دَخَلُوهَا مَا خَرَجُوا مِنْهَا أَبَدًا، إِنَّمَا الطَّاعَةُ فِي الْمَعْرُوفِ ‏"‏‏.‏

Narrated `Ali: The Prophet (PBUH) sent an army unit (for some campaign) and appointed a man from the Ansar as its commander and ordered them (the soldiers) to obey him. (During the campaign) he became angry with them and said, "Didn't the Prophet (PBUH) order you to obey me?" They said, "Yes." He said, "I order you to collect wood and make a fire and then throw yourselves into it." So they collected wood and made a fire, but when they were about to throw themselves into, it they started looking at each other, and some of them said, "We followed the Prophet (PBUH) to escape from the fire. How should we enter it now?" So while they were in that state, the fire extinguished and their commander's anger abated. The event was mentioned to the Prophet (PBUH) and he said, "If they had entered it (the fire) they would never have come out of it, for obedience is required only in what is good." (See Hadith No. 629. Vol. 5) ھم سے عمر بن حفص بن غیاث نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے اعمش نے بیان کیا ، ان سے سعد بن عبیدھ نے بیان کیا ، ان سے ابوعبدالرحمن نے بیان کیا اور ان سے حضرت علی رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے ایک دستھ بھیجا اور اس پر انصار کے ایک شخص کو امیر بنایا اور لوگوں کو حکم دیا کھ ان کی اطاعت کریں ۔ پھر امیر فوج کے لوگوں پر غصھ ھوئے اور کھا کھ کیا آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے تمھیں میری اطاعت کا حکم نھیں دیا ھے ؟ لوگوں نے کھا کھ ضرور دیا ھے ۔ اس پر انھوں نے کھا کھ میں تمھیں حکم دیتا ھوں کھ لکڑی جمع کرو اور اس سے آگ جلاؤ اور اس میں کود پڑو ۔ لوگوں نے لکڑی جمع کی اور آگ جلائی ، جب کودنا چاھا تو ایک دوسرے کو لوگ دیکھنے لگے اور ان میں سے بعض نے کھا کھ ھم نے آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم کی فرمانبرداری آگ سے بچنے کے لیے کی تھی ، کیا پھر ھم اس میں خود ھی داخل ھو جائیں ۔ اسی دوران میں آگ ٹھنڈی ھو گئی اور امیر کا غصھ بھی جاتا رھا ۔ پھر آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم سے اس کا ذکر کیا گیا تو آپ نے فرمایا کھ اگر یھ لوگ اس میں کود پڑتے تو پھر اس میں سے نھ نکل سکتے ۔ اطاعت صرف اچھی باتوں میں ھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 93 Hadith no 7145
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 89 Hadith no 259


حَدَّثَنَا حَجَّاجُ بْنُ مِنْهَالٍ، حَدَّثَنَا جَرِيرُ بْنُ حَازِمٍ، عَنِ الْحَسَنِ، عَنْ عَبْدِ الرَّحْمَنِ بْنِ سَمُرَةَ، قَالَ قَالَ النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ يَا عَبْدَ الرَّحْمَنِ لاَ تَسْأَلِ الإِمَارَةَ، فَإِنَّكَ إِنْ أُعْطِيتَهَا عَنْ مَسْأَلَةٍ وُكِلْتَ إِلَيْهَا، وَإِنْ أُعْطِيتَهَا عَنْ غَيْرِ مَسْأَلَةٍ أُعِنْتَ عَلَيْهَا، وَإِذَا حَلَفْتَ عَلَى يَمِينٍ فَرَأَيْتَ غَيْرَهَا خَيْرًا مِنْهَا، فَكَفِّرْ يَمِينَكَ، وَأْتِ الَّذِي هُوَ خَيْرٌ ‏"‏‏.‏


Chapter: Allah will surely help him in ruling who….

Narrated `Abdur-Rahman bin Samura: The Prophet (PBUH) said, "O `Abdur-Rahman! Do not seek to be a ruler, for if you are given authority on your demand then you will be held responsible for it, but if you are given it without asking (for it), then you will be helped (by Allah) in it. If you ever take an oath to do something and later on you find that something else is better, then you should expiate your oath and do what is better." ھم سے حجاج بن منھال نے بیان کیا ، کھا ھم سے جریر بن حازم نے بیان کیا ، ان سے حسن نے اور ان سے عبدالرحمٰن بن سمرھ رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا ، اے عبدالرحمٰن ! حکومت کے طالب نھ بننا کیونکھ اگر تمھیں مانگنے کے بعد حکومت ملی تو تم اس کے حوالے کر دئیے جاؤ گے اور وھ تمھیں بلا مانگے ملی تو اس میں تمھاری ( اللھ کی طرف سے ) مدد کی جائے گی اور اگر تم نے قسم کھا لی ھو پھر اس کے سوا دوسری چیز میں بھلائی دیکھو تو اپنی قسم کا کفارھ ادا کر دو اور وھ کام کرو جس میں بھلائی ھو ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 93 Hadith no 7146
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 89 Hadith no 260


حَدَّثَنَا أَبُو مَعْمَرٍ، حَدَّثَنَا عَبْدُ الْوَارِثِ، حَدَّثَنَا يُونُسُ، عَنِ الْحَسَنِ، قَالَ حَدَّثَنِي عَبْدُ الرَّحْمَنِ بْنُ سَمُرَةَ، قَالَ قَالَ لِي رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ يَا عَبْدَ الرَّحْمَنِ بْنَ سَمُرَةَ، لاَ تَسْأَلِ الإِمَارَةَ، فَإِنْ أُعْطِيتَهَا عَنْ مَسْأَلَةٍ وُكِلْتَ إِلَيْهَا، وَإِنْ أُعْطِيتَهَا عَنْ غَيْرِ مَسْأَلَةٍ أُعِنْتَ عَلَيْهَا، وَإِذَا حَلَفْتَ عَلَى يَمِينٍ فَرَأَيْتَ غَيْرَهَا خَيْرًا مِنْهَا، فَأْتِ الَّذِي هُوَ خَيْرٌ، وَكَفِّرْ عَنْ يَمِينِكَ ‏"‏‏.‏


Chapter: He who seeks to be a ruler will be held responsible

Narrated `Abdur-Rahman bin Samura: Allah's Messenger (PBUH) said, "O `Abdur-Rahman bin Samura! Do not seek to be a ruler, for if you are given authority on your demand, you will be held responsible for it, but if you are given it without asking for it, then you will be helped (by Allah) in it. If you ever take an oath to do something and later on you find that something else is better, then do what is better and make expiation for your oath." ھم سے ابومعمر نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے عبدالوارث نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے یونس نے بیان کیا ، ان سے حسن نے بیان کیا ، کھا کھ مجھ سے عبدالرحمٰن بن سمرھ رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ ان سے رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا ، اے عبدالرحمٰن ابن سمرھ ! حکومت طلب مت کرنا کیونکھ اگر تمھیں مانگنے کے بعد امیری ملی تو تم اس کے حوالے کردےئے جاؤ گے اور اگر تمھیں مانگے بغیر ملی تو اس میں تمھاری مدد کی جائے گی اور اگر تم کسی بات پر قسم کھا لو اور پھر اس کے سوا دوسری چیز میں بھلائی دیکھو تو وھ کرو جس میں بھلائی ھو اور اپنی قسم کا کفارھ ادا کر دو ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 93 Hadith no 7147
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 89 Hadith no 261


حَدَّثَنَا أَحْمَدُ بْنُ يُونُسَ، حَدَّثَنَا ابْنُ أَبِي ذِئْبٍ، عَنْ سَعِيدٍ الْمَقْبُرِيِّ، عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ، عَنِ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم قَالَ ‏"‏ إِنَّكُمْ سَتَحْرِصُونَ عَلَى الإِمَارَةِ، وَسَتَكُونُ نَدَامَةً يَوْمَ الْقِيَامَةِ، فَنِعْمَ الْمُرْضِعَةُ وَبِئْسَتِ الْفَاطِمَةُ ‏"‏‏.‏ وَقَالَ مُحَمَّدُ بْنُ بَشَّارٍ حَدَّثَنَا عَبْدُ اللَّهِ بْنُ حُمْرَانَ، حَدَّثَنَا عَبْدُ الْحَمِيدِ، عَنْ سَعِيدٍ الْمَقْبُرِيِّ، عَنْ عُمَرَ بْنِ الْحَكَمِ، عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ، قَوْلَهُ‏.‏


Chapter: What is disliked regarding the authority of ruling

Narrated Abu Huraira: The Prophet (PBUH) said, "You people will be keen to have the authority of ruling which will be a thing of regret for you on the Day of Resurrection. What an excellent wet nurse it is, yet what a bad weaning one it is!" ھم سے احمد بن یونس نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے ابن ابی ذئب نے بیان کیا ، ان سے سعید مقبری نے بیان کیا اور ان سے ابوھریرھ رضی اللھ عنھ نے کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا ، تم حکومت کا لالچ کرو گے اور یھ قیامت کے دن تمھارے لیے باعث ندامت ھو گی ۔ پس کیا ھی بھتر ھے دودھ پلانے والی اور کیا ھی بری ھے دودھ چھڑانے والی ۔ اور محمد بن بشار نے بیان کیا ، کھا ھم سے عبداللھ بن حمران نے بیان کیا ، کھا ھم سے عبدالحمید نے بیان کیا ، ان سے سعید المقبری نے ، ان سے عمر بن حکم نے اور ان سے ابوھریرھ رضی اللھ عنھ نے اپنا قول ( موقوفاً ) نقل کیا ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 93 Hadith no 7148
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 89 Hadith no 262



@2019 Copyrights: if you have any objection regarding any shared content on pdf9.com please click here.