Search hadith by
Hadith Book
Search Query
Search Language
English Arabic Urdu
Search Type Basic    Case Sensitive
 

Sahih Bukhari

Loans, Payment of Loans, Freezing of Property, Bankruptcy

كتاب فى الاستقراض

حَدَّثَنَا مُحَمَّدٌ، أَخْبَرَنَا جَرِيرٌ، عَنِ الْمُغِيرَةِ، عَنِ الشَّعْبِيِّ، عَنْ جَابِرِ بْنِ عَبْدِ اللَّهِ ـ رضى الله عنهما ـ قَالَ غَزَوْتُ مَعَ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم قَالَ ‏"‏ كَيْفَ تَرَى بَعِيرَكَ أَتَبِيعُنِيهِ ‏"‏‏.‏ قُلْتُ نَعَمْ‏.‏ فَبِعْتُهُ إِيَّاهُ، فَلَمَّا قَدِمَ الْمَدِينَةَ غَدَوْتُ إِلَيْهِ بِالْبَعِيرِ، فَأَعْطَانِي ثَمَنَهُ‏.‏


Chapter: Whoever buys a thing on credit

Narrated Jabir bin `Abdullah: While I was in the company of the Prophet (PBUH) in one of his Ghazawat, he asked, "What is wrong with your camel? Will you sell it?" I replied in the affirmative and sold it to him. When he reached Medina, I took the camel to him in the morning and he paid me its price. ھم سے محمد بن یوسف بیکندی نے بیان کیا ، کھا کھ ھم کو جریر نے خبری دی ، انھیں مغیرھ نے ، انھیں شعبی نے اور ان سے جابر بن عبداللھ رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ میں رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم کے ساتھ ایک غزوھ میں شریک تھا ۔ آپ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا ، اپنے اونٹ کے بارے میں تمھاری کیا رائے ھے ۔ کیا تم اسے بیچو گے ؟ میں نے کھا ھاں ، چنانچھ اونٹ میں نے آپ صلی اللھ علیھ وسلم کو بیچ دیا ۔ اور جب آپ صلی اللھ علیھ وسلم مدینھ پھنچے ۔ تو صبح اونٹ کو لے کر میں آپ کی خدمت میں حاضر ھو گیا ۔ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے مجھے اس کی قیمت ادا کر دی ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 43 Hadith no 2385
Web reference: Sahih Bukhari Volume 3 Book 41 Hadith no 570


حَدَّثَنَا مُعَلَّى بْنُ أَسَدٍ، حَدَّثَنَا عَبْدُ الْوَاحِدِ، حَدَّثَنَا الأَعْمَشُ، قَالَ تَذَاكَرْنَا عِنْدَ إِبْرَاهِيمَ الرَّهْنَ فِي السَّلَمِ فَقَالَ حَدَّثَنِي الأَسْوَدُ عَنْ عَائِشَةَ ـ رضى الله عنها ـ أَنَّ النَّبِيَّ صلى الله عليه وسلم اشْتَرَى طَعَامًا مِنْ يَهُودِيٍّ إِلَى أَجَلٍ، وَرَهَنَهُ دِرْعًا مِنْ حَدِيدٍ‏.‏

Narrated Al-A`mash: When we were with Ibrahim, we talked about mortgaging in deals of Salam. Ibrahim narrated from Aswad that `Aisha had said, "The Prophet (PBUH) bought some foodstuff on credit from a Jew and mortgaged an iron armor to him." ھم سے معلی بن اسد نے بیان کیا ، ان سے عبدالواحد نے بیان کیا ، ان سے اعمش نے بیان کیا ، انھوں نے بیان کیا کھ ابراھیم کی خدمت میں ھم نے بیع سلم میں رھن کا ذکر کیا ، تو انھوں نے بیان کیا کھ مجھ سے اسود نے بیان کیا اور ان سے عائشھ رضی اللھ عنھما نے بیان کیا کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے ایک یھودی سے غلھ ایک خاص مدت ( کے قرض پر ) خریدا ، اور اپنی لوھے کی زرھ اس کے پاس رھن رکھ دی ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 43 Hadith no 2386
Web reference: Sahih Bukhari Volume 3 Book 41 Hadith no 571


حَدَّثَنَا عَبْدُ الْعَزِيزِ بْنُ عَبْدِ اللَّهِ الأُوَيْسِيُّ، حَدَّثَنَا سُلَيْمَانُ بْنُ بِلاَلٍ، عَنْ ثَوْرِ بْنِ زَيْدٍ، عَنْ أَبِي الْغَيْثِ، عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ ـ رضى الله عنه ـ عَنِ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم قَالَ ‏"‏ مَنْ أَخَذَ أَمْوَالَ النَّاسِ يُرِيدُ أَدَاءَهَا أَدَّى اللَّهُ عَنْهُ، وَمَنْ أَخَذَ يُرِيدُ إِتْلاَفَهَا أَتْلَفَهُ اللَّهُ ‏"‏‏.‏


Chapter: Borrowing money from people

Narrated Abu Huraira: The Prophet (PBUH) said, "Whoever takes the money of the people with the intention of repaying it, Allah will repay it on his behalf, and whoever takes it in order to spoil it, then Allah will spoil him." ھم سے عبدالعزیز بن عبداللھ اویسی نے بیان کیا ، ان سے سلیمان بن بلال نے بیان کیا ، ان سے ثور بن زید نے ، ان سے ابو غیث نے اور ان سے ابوھریرھ رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا جو کوئی لوگوں کا مال قرض کے طور پر ادا کرنے کی نیت سے لیتا ھے تو اللھ تعالیٰ بھی اس کی طرف سے ادا کرے گا اور جو کوئی نھ دینے کے لیے لے ، تو اللھ تعالیٰ بھی اس کو تباھ کر دے گا ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 43 Hadith no 2387
Web reference: Sahih Bukhari Volume 3 Book 41 Hadith no 572


حَدَّثَنَا أَحْمَدُ بْنُ يُونُسَ، حَدَّثَنَا أَبُو شِهَابٍ، عَنِ الأَعْمَشِ، عَنْ زَيْدِ بْنِ وَهْبٍ، عَنْ أَبِي ذَرٍّ ـ رضى الله عنه ـ قَالَ كُنْتُ مَعَ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم فَلَمَّا أَبْصَرَ ـ يَعْنِي أُحُدًا ـ قَالَ ‏"‏ مَا أُحِبُّ أَنَّهُ يُحَوَّلُ لِي ذَهَبًا يَمْكُثُ عِنْدِي مِنْهُ دِينَارٌ فَوْقَ ثَلاَثٍ، إِلاَّ دِينَارًا أُرْصِدُهُ لِدَيْنٍ ‏"‏‏.‏ ثُمَّ قَالَ ‏"‏ إِنَّ الأَكْثَرِينَ هُمُ الأَقَلُّونَ، إِلاَّ مَنْ قَالَ بِالْمَالِ هَكَذَا وَهَكَذَا ‏"‏‏.‏ وَأَشَارَ أَبُو شِهَابٍ بَيْنَ يَدَيْهِ وَعَنْ يَمِينِهِ وَعَنْ شِمَالِهِ ـ وَقَلِيلٌ مَا هُمْ ـ وَقَالَ مَكَانَكَ‏.‏ وَتَقَدَّمَ غَيْرَ بَعِيدٍ، فَسَمِعْتُ صَوْتًا، فَأَرَدْتُ أَنْ آتِيَهُ، ثُمَّ ذَكَرْتُ قَوْلَهُ مَكَانَكَ حَتَّى آتِيَكَ، فَلَمَّا جَاءَ قُلْتُ يَا رَسُولَ اللَّهِ، الَّذِي سَمِعْتُ أَوْ قَالَ الصَّوْتُ الَّذِي سَمِعْتُ قَالَ ‏"‏ وَهَلْ سَمِعْتَ ‏"‏‏.‏ قُلْتُ نَعَمْ‏.‏ قَالَ ‏"‏ أَتَانِي جِبْرِيلُ ـ عَلَيْهِ السَّلاَمُ ـ فَقَالَ مَنْ مَاتَ مِنْ أُمَّتِكَ لاَ يُشْرِكُ بِاللَّهِ شَيْئًا دَخَلَ الْجَنَّةَ ‏"‏‏.‏ قُلْتُ وَإِنْ فَعَلَ كَذَا وَكَذَا قَالَ ‏"‏ نَعَمْ ‏"‏‏.‏

Narrated Abu Dhar: Once, while I was in the company of the Prophet, he saw the mountain of Uhud and said, "I would not like to have this mountain turned into gold for me unless nothing of it, not even a single Dinar remains of it with me for more than three days (i.e. I will spend all of it in Allah's Cause), except that Dinar which I will keep for repaying debts." Then he said, "Those who are rich in this world would have little reward in the Hereafter except those who spend their money here and there (in Allah's Cause), and they are few in number." Then he ordered me to stay at my place and went not far away. I heard a voice and intended to go to him but I remembered his order, "Stay at your place till I return." On his return I said, "O Allah's Messenger (PBUH)! (What was) that noise which I heard?" He said, "Did you hear anything?" I said, "Yes." He said, "Gabriel came and said to me, 'Whoever amongst your followers dies, worshipping none along with Allah, will enter Paradise.' " I said, "Even if he did such-and-such things (i.e. even if he stole or committed illegal sexual intercourse)" He said, "Yes." ھم سے احمد بن یونس نے بیان کیا ، کھا کھ ھم سے ابوشھاب نے بیان کیا ، ان سے اعمش نے ، ان سے زید بن وھب نے اور ان سے ابوذر رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ میں نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم کے ساتھ تھا ۔ آپ صلی اللھ علیھ وسلم نے جب دیکھا ، آپ کی مراد احد پھاڑ ( کو دیکھنے ) سے تھی ۔ تو فرمایا کھ میں یھ بھی پسند نھیں کروں گا کھ احد پھاڑ سونے کا ھو جائے تو اس میں سے میرے پاس ایک دینار کے برابر بھی تین دن سے زیادھ باقی رھے ۔ سوا اس دینار کے جو میں کسی کا قرض ادا کرنے کے لیے رکھ لوں ۔ پھر فرمایا ، ( دنیا میں ) دیکھو جو زیادھ ( مال ) والے ھیں وھی محتاج ھیں ۔ سوا ان کے جو اپنے مال و دولت کو یوں اور یوں خرچ کریں ۔ ابوشھاب راوی نے اپنے سامنے اور دائیں طرف اور بائیں طرف اشارھ کیا ، لیکن ایسے لوگوں کی تعدا د کم ھوتی ھے ۔ پھر آپ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا یھیں ٹھھرے رھو اور آپ صلی اللھ علیھ وسلم تھوڑی دور آگے کی طرف بڑھے ۔ میں نے کچھ آواز سنی ( جیسے آپ صلی اللھ علیھ وسلم کسی سے باتیں کر رھے ھوں ) میں نے چاھا کھ آپ صلی اللھ علیھ وسلم کی خدمت میں حاضر ھو جاؤں ۔ لیکن آپ صلی اللھ علیھ وسلم کا یھ فرمان یاد آیا کھ ” یھیں اس وقت تک ٹھھرے رھنا جب تک میں نھ آ جاؤں “ اس کے بعد جب آپ صلی اللھ علیھ وسلم تشریف لائے تو میں نے پوچھا یا رسول اللھ ! ابھی میں نے کچھ سنا تھا ۔ یا ( راوی نے یھ کھا کھ ) میں نے کوئی آواز سنی تھی ۔ آپ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا ، تم نے بھی سنا ! میں نے عرض کیا کھ ھاں ۔ آپ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ میرے پاس جبرائیل علیھ السلام آئے تھے اور کھھ گئے ھیں کھ تمھاری امت کا جو شخص بھی اس حالت میں مرے کھ وھ اللھ کے ساتھ کسی کو شریک نھ ٹھھراتا ھو ، تو وھ جنت میں داخل ھو گا ۔ میں نے پوچھا کھ اگرچھ وھ اس طرح ( کے گناھ ) کرتا رھا ھو ۔ تو آپ نے کھا کھ ھاں ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 43 Hadith no 2388
Web reference: Sahih Bukhari Volume 3 Book 41 Hadith no 573


حَدَّثَنَا أَحْمَدُ بْنُ شَبِيبِ بْنِ سَعِيدٍ، حَدَّثَنَا أَبِي، عَنْ يُونُسَ، قَالَ ابْنُ شِهَابٍ حَدَّثَنِي عُبَيْدُ اللَّهِ بْنُ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ عُتْبَةَ، قَالَ قَالَ أَبُو هُرَيْرَةَ ـ رضى الله عنه ـ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ لَوْ كَانَ لِي مِثْلُ أُحُدٍ ذَهَبًا، مَا يَسُرُّنِي أَنْ لاَ يَمُرَّ عَلَىَّ ثَلاَثٌ وَعِنْدِي مِنْهُ شَىْءٌ، إِلاَّ شَىْءٌ أُرْصِدُهُ لِدَيْنٍ ‏"‏‏.‏ رَوَاهُ صَالِحٌ وَعُقَيْلٌ عَنِ الزُّهْرِيِّ‏.‏

Narrated Abu Huraira: Allah's Messenger (PBUH) said, "If I had gold equal to the mountain of Uhud, it would not please me that it should remain with me for more than three days, except an amount which I would keep for repaying debts." ھم سے احمد بن شبیب بن سعید نے بیان کیا ، کھا کھ ھم سے ھمارے والد نے بیان کیا ، ان سے یونس نے کھ ابن شھاب نے بیان کیا ، ان سے عبیداللھ بن عبداللھ بن عتبھ نے بیان کیا ، اور ان سے ابوھریرھ رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا ، اگر میرے پاس احد پھاڑ کے برابر بھی سونا ھو تب بھی مجھے یھ پسند نھیں کھ تین دن گزر جائیں اور اس ( سونے ) کا کوئی حصھ میرے پاس رھ جائے ۔ سوا اس کے جو میں کسی قرض کے دینے کے لیے رکھ چھوڑوں ۔ اس کی روایت صالح اور عقیل نے زھری سے کی ھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 43 Hadith no 2389
Web reference: Sahih Bukhari Volume 3 Book 41 Hadith no 574


حَدَّثَنَا أَبُو الْوَلِيدِ، حَدَّثَنَا شُعْبَةُ، أَخْبَرَنَا سَلَمَةُ بْنُ كُهَيْلٍ، قَالَ سَمِعْتُ أَبَا سَلَمَةَ، بِبَيْتِنَا يُحَدِّثُ عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ ـ رضى الله عنه ـ أَنَّ رَجُلاً، تَقَاضَى رَسُولَ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم، فَأَغْلَظَ لَهُ، فَهَمَّ أَصْحَابُهُ، فَقَالَ ‏"‏ دَعُوهُ، فَإِنَّ لِصَاحِبِ الْحَقِّ مَقَالاً‏.‏ وَاشْتَرُوا لَهُ بَعِيرًا، فَأَعْطُوهُ إِيَّاهُ ‏"‏‏.‏ وَقَالُوا لاَ نَجِدُ إِلاَّ أَفْضَلَ مِنْ سِنِّهِ‏.‏ قَالَ ‏"‏ اشْتَرُوهُ فَأَعْطُوهُ إِيَّاهُ، فَإِنَّ خَيْرَكُمْ أَحْسَنُكُمْ قَضَاءً ‏"‏‏.‏


Chapter: To buy camels on credit

Narrated Abu Huraira: A man demanded his debts from Allah's Messenger (PBUH) in such a rude manner that the companions of the Prophet intended to harm him, but the Prophet (PBUH) said, "Leave him, no doubt, for he (the creditor) has the right to demand it (harshly). Buy a camel and give it to him." They said, "The camel that is available is older than the camel he demands. "The Prophet (PBUH) said, "Buy it and give it to him, for the best among you are those who repay their debts handsomely. " ھم سے ابوالولید نے بیان کیا ، کھا کھ ھم سے شعبھ نے بیان کیا ، انھیں سلمھ بن کھیل نے خبر دی ، کھا کھ میں نے ابوسلمھ سے سنا ، وھ ھمارے گھر میں ابوھریرھ رضی اللھ عنھ سے حدیث بیان کر رھے تھے کھ ایک شخص نے رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم سے اپنے قرض کا تقاضا کیا اور سخت سست کھا ۔ صحابھ رضی اللھ عنھم نے اس کو سزا دینی چاھی تو آپ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ اسے کھنے دو ۔ صاحب حق کے لیے کھنے کا حق ھوتا ھے اور اسے ایک اونٹ خرید کر دے دو ۔ لوگوں نے عرض کیا کھ اس کے اونٹ سے ( جو اس نے آپ کو قرض دیا تھا ) اچھی عمر ھی کا اونٹ مل رھا ھے ۔ آپ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ وھی خرید کے اسے دے دو ۔ کیونکھ تم میں اچھا وھی ھے جو قرض ادا رکرنے میں سب سے اچھا ھو ۔ ( حدیث اور باب کی مطابقت ظاھر ھے )

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 43 Hadith no 2390
Web reference: Sahih Bukhari Volume 3 Book 41 Hadith no 575



Copyrights: if you have any objection regarding any shared content on pdf9.com please click here.