Search hadith by
Hadith Book
Search Query
Search Language
English Arabic Urdu
Search Type Basic    Case Sensitive
 

Sahih Bukhari

Medicine

كتاب الطب

حَدَّثَنَا مُحَمَّدٌ، أَخْبَرَنَا أَحْمَدُ بْنُ بَشِيرٍ أَبُو بَكْرٍ، أَخْبَرَنَا هَاشِمُ بْنُ هَاشِمٍ، قَالَ أَخْبَرَنِي عَامِرُ بْنُ سَعْدٍ، قَالَ سَمِعْتُ أَبِي يَقُولُ، سَمِعْتُ رَسُولَ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم يَقُولُ ‏"‏ مَنِ اصْطَبَحَ بِسَبْعِ تَمَرَاتٍ عَجْوَةٍ لَمْ يَضُرَّهُ ذَلِكَ الْيَوْمَ سَمٌّ وَلاَ سِحْرٌ ‏"‏‏.‏

Narrated Sa`d: I heard Allah's Messenger (PBUH) saying, "Whoever takes seven 'Ajwa dates in the morning will not be effected by magic or poison on that day." ھم سے محمد بن سلام بیکندی نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم کو احمد بن بشیر ابوبکرنے خبر دی ، انھوں نے کھا ھم کو ھاشم بن ھاشم نے خبر دی ، کھا کھ مجھے عامر بن سعد نے خبر دی ، انھوں نے کھا کھ میں نے اپنے والد سے سنا ، انھوں نے بیان کیا کھ میں نے رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم سے سنا ، آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ جو شخص صبح کے وقت سات عجوھ کھجوریں کھا لے اسے اس دن زھر نقصان پھنچا سکے گا اور نھ جادو ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 76 Hadith no 5779
Web reference: Sahih Bukhari Volume 7 Book 71 Hadith no 671


حَدَّثَنِي عَبْدُ اللَّهِ بْنُ مُحَمَّدٍ، حَدَّثَنَا سُفْيَانُ، عَنِ الزُّهْرِيِّ، عَنْ أَبِي إِدْرِيسَ الْخَوْلاَنِيِّ، عَنْ أَبِي ثَعْلَبَةَ الْخُشَنِيِّ، رضى الله عنه قَالَ نَهَى النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم عَنْ أَكْلِ كُلِّ ذِي نَابٍ مِنَ السَّبُعِ‏.‏ قَالَ الزُّهْرِيُّ وَلَمْ أَسْمَعْهُ حَتَّى أَتَيْتُ الشَّأْمَ‏.‏ وَزَادَ اللَّيْثُ قَالَ حَدَّثَنِي يُونُسُ، عَنِ ابْنِ شِهَابٍ، قَالَ وَسَأَلْتُهُ هَلْ نَتَوَضَّأُ أَوْ نَشْرَبُ أَلْبَانَ الأُتُنِ أَوْ مَرَارَةَ السَّبُعِ أَوْ أَبْوَالَ الإِبِلِ‏.‏ قَالَ قَدْ كَانَ الْمُسْلِمُونَ يَتَدَاوَوْنَ بِهَا، فَلاَ يَرَوْنَ بِذَلِكَ بَأْسًا، فَأَمَّا أَلْبَانُ الأُتُنِ فَقَدْ بَلَغَنَا أَنَّ رَسُولَ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم نَهَى عَنْ لُحُومِهَا، وَلَمْ يَبْلُغْنَا عَنْ أَلْبَانِهَا أَمْرٌ وَلاَ نَهْىٌ، وَأَمَّا مَرَارَةُ السَّبُعِ قَالَ ابْنُ شِهَابٍ أَخْبَرَنِي أَبُو إِدْرِيسَ الْخَوْلاَنِيُّ أَنَّ أَبَا ثَعْلَبَةَ الْخُشَنِيَّ أَخْبَرَهُ أَنَّ رَسُولَ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم نَهَى عَنْ أَكْلِ كُلِّ ذِي نَابٍ مِنَ السَّبُعِ‏.‏

Narrated Abu Tha`laba Al-Khushani: The Prophet (PBUH) forbade the eating of wild animals having fangs. (Az-Zuhri said: I did not hear this narration except when I went to Sham.) Al-Laith said: Narrated Yunus: I asked Ibn Shihab, "May we perform the ablution with the milk of she-asses or drink it, or drink the bile of wild animals or urine of camels?" He replied, "The Muslims used to treat themselves with that and did not see any harm in it. As for the milk of she-asses, we have learnt that Allah's Messenger (PBUH) forbade the eating of their meat, but we have not received any information whether drinking of their milk is allowed or forbidden." As for the bile of wild animals, Ibn Shihab said, "Abu Idris Al-Khaulani told me that Allah's Messenger (PBUH) forbade the eating of the flesh of every wild beast having fangs . " مجھ سے عبداللھ بن محمد مسندی نے بیان کیا ، کھا ھم سے سفیان بن عیینھ نے بیان کیا ، ان سے زھری نے ، ان سے ابو ادریس خولانی نے اور ان سے ابو ثعلبھ خشنی رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے ھر دانت سے کھانے والے درندھ جانور ( کے گوشت ) سے منع فرمایا ۔ زھری نے بیان کیا کھ میں نے یھ حدیث اس وقت تک نھیں سنی جب تک شام نھیں آیا ۔ اور لیث نے زیادھ کیا ھے کھا کھ مجھ سے یونس نے بیان کیا ، ان سے ابن شھاب زھری نے ، کھ میں نے ابو ادریس سے پوچھا کیا ھم ( دواکے طور پر ) گدھی کے دودھ سے وضو کر سکتے ھیں یا اسے پی سکتے ھیں یا درندھ جانوروں کے پتے استعمال کر سکتے ھیں یا اونٹ کا پیشاب پی سکتے ھیں ۔ ابو ادریس نے کھا کھ مسلمان اونٹ کے پیشاب کو دوا کے طور پر استعمال کرتے تھے اور اس میں کوئی حرج نھیں سمجھتے تھے ۔ البتھ گدھی کے دودھ کے بارے میں ھمیں رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم کی یھ حدیث پھنچی ھے کھ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے اس کے گوشت سے منع فرمایا تھا ۔ اس کے دودھ کے متعلق ھمیں کوئی حکم یا ممانعت آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم سے معلوم نھیں ھے ۔ البتھ درندوں کے پتے کے متعلق جو ابن شھاب نے بیان کیا کھ مجھے ابو ادریس خولانی نے خبر دی اور انھیں ابو ثعلبھ خشنی رضی اللھ عنھ نے خبر دی کھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم نے ھر دانت والے شکاری درندے کا گوشت کھانے سے منع فرمایا ھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 76 Hadith no 5780, 5781
Web reference: Sahih Bukhari Volume 7 Book 71 Hadith no 672


حَدَّثَنَا قُتَيْبَةُ، حَدَّثَنَا إِسْمَاعِيلُ بْنُ جَعْفَرٍ، عَنْ عُتْبَةَ بْنِ مُسْلِمٍ، مَوْلَى بَنِي تَيْمٍ عَنْ عُبَيْدِ بْنِ حُنَيْنٍ، مَوْلَى بَنِي زُرَيْقٍ عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ ـ رضى الله عنه ـ أَنَّ رَسُولَ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم قَالَ ‏"‏ إِذَا وَقَعَ الذُّبَابُ فِي إِنَاءِ أَحَدِكُمْ، فَلْيَغْمِسْهُ كُلَّهُ، ثُمَّ لْيَطْرَحْهُ، فَإِنَّ فِي أَحَدِ جَنَاحَيْهِ شِفَاءً وَفِي الآخَرِ دَاءً ‏"‏‏.‏


Chapter: If a housefly falls in a utensil

Narrated Abu Huraira: Allah's Messenger (PBUH) said, "If a fly falls in the vessel of any of you, let him dip all of it (into the vessel) and then throw it away, for in one of its wings there is a disease and in the other there is healing (antidote for it) i e. the treatment for that disease." ھم سے قتیبھ بن سعید نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے اسماعیل بن جعفر نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے بنی تمیم کے مولیٰ عتبھ بن مسلم نے بیان کیا ، ان سے بنی زریق کے مولیٰ عبید بن حنین نے بیان کیا اور ان سے حضرت ابوھریرھ رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا جب مکھی تم میں سے کسی کے برتن میں پڑ جائے تو پوری مکھی کو برتن میں ڈبو دے اور پھر اسے نکال کر پھینک دے کیونکھ اس کے ایک پر میں شفاء ھے اور دوسرے میں بیماری ھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 76 Hadith no 5782
Web reference: Sahih Bukhari Volume 7 Book 71 Hadith no 673


حَدَّثَنَا قُتَيْبَةُ بْنُ سَعِيدٍ، حَدَّثَنَا بِشْرُ بْنُ الْمُفَضَّلِ، عَنْ خَالِدِ بْنِ ذَكْوَانَ، عَنْ رُبَيِّعَ بِنْتِ مُعَوِّذٍ ابْنِ عَفْرَاءَ، قَالَتْ كُنَّا نَغْزُو مَعَ رَسُولِ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم نَسْقِي الْقَوْمَ، وَنَخْدُمُهُمْ، وَنَرُدُّ الْقَتْلَى وَالْجَرْحَى إِلَى الْمَدِينَةِ‏.‏

Narrated Rubai bint Mu`adh bin Afra: We used to go for Military expeditions along with Allah's Messenger (PBUH) and provide the people with water, serve them and bring the dead and the wounded back to Medina. ھم سے قتیبھ بن سعید نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے بشر بن مفضل نے بیان کیا ، ان سے خالد بن ذکوان نے اور ان سے ربیع بنت معوذ بن عفراء رضی اللھ عنھم نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم کے ساتھ غزوات میں شریک ھوتی تھیں اور مسلمان مجاھد کو پانی پلاتی ، ان کی خدمت کرتی اور مقتولین اور مجروحین کو مدینھ منورھ لایا کرتی تھیں ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 76 Hadith no 583
Web reference: Sahih Bukhari Volume 7 Book 71 Hadith no 583


حَدَّثَنَا مُسَدَّدٌ، حَدَّثَنَا أَبُو الأَحْوَصِ، حَدَّثَنَا سَعِيدُ بْنُ مَسْرُوقٍ، عَنْ عَبَايَةَ بْنِ رِفَاعَةَ، عَنْ جَدِّهِ، رَافِعِ بْنِ خَدِيجٍ قَالَ سَمِعْتُ النَّبِيَّ صلى الله عليه وسلم يَقُولُ ‏"‏ الْحُمَّى مِنْ فَوْحِ جَهَنَّمَ، فَابْرُدُوهَا بِالْمَاءِ ‏"‏‏.‏

Narrated Rafi` bin Khadij: I heard Allah's Messenger (PBUH) saying, "Fever is from the heat of Hell, so abate fever with water." ھم سے مسدد نے بیان کیا ، کھا ھم سے ابوالاحوص نے بیان کیا ، کھا ھم سے سعید بن مسروق نے بیان کیا ، ان سے عبایھ بن رفاعھ نے ، ان سے ان کے دادا رافع بن خدیج نے بیان کیا کھ میں نے نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم سے سنا آپ نے فرمایا کھ بخار جھنم کی بھاپ میں سے ھے پس اسے پانی سے ٹھنڈا کر لیا کرو ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 76 Hadith no 622
Web reference: Sahih Bukhari Volume 7 Book 71 Hadith no 622


حَدَّثَنَا عَبْدُ الأَعْلَى بْنُ حَمَّادٍ، حَدَّثَنَا يَزِيدُ بْنُ زُرَيْعٍ، حَدَّثَنَا سَعِيدٌ، حَدَّثَنَا قَتَادَةُ، أَنَّ أَنَسَ بْنَ مَالِكٍ، حَدَّثَهُمْ أَنَّ نَاسًا أَوْ رِجَالاً مِنْ عُكْلٍ وَعُرَيْنَةَ قَدِمُوا عَلَى رَسُولِ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم وَتَكَلَّمُوا بِالإِسْلاَمِ وَقَالُوا يَا نَبِيَّ اللَّهِ إِنَّا كُنَّا أَهْلَ ضَرْعٍ، وَلَمْ نَكُنْ أَهْلَ رِيفٍ، وَاسْتَوْخَمُوا الْمَدِينَةَ فَأَمَرَ لَهُمْ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم بِذَوْدٍ وَبِرَاعٍ وَأَمَرَهُمْ، أَنْ يَخْرُجُوا فِيهِ فَيَشْرَبُوا مِنْ أَلْبَانِهَا وَأَبْوَالِهَا، فَانْطَلَقُوا حَتَّى كَانُوا نَاحِيَةَ الْحَرَّةِ، كَفَرُوا بَعْدَ إِسْلاَمِهِمْ، وَقَتَلُوا رَاعِيَ رَسُولِ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم وَاسْتَاقُوا الذَّوْدَ فَبَلَغَ النَّبِيَّ صلى الله عليه وسلم فَبَعَثَ الطَّلَبَ فِي آثَارِهِمْ، وَأَمَرَ بِهِمْ فَسَمَرُوا أَعْيُنَهُمْ وَقَطَعُوا أَيْدِيَهُمْ وَتُرِكُوا فِي نَاحِيَةِ الْحَرَّةِ حَتَّى مَاتُوا عَلَى حَالِهِمْ‏.‏

Narrated Anas bin Malik: Some people from the tribes of `Ukl and `Uraina came to Allah's Messenger (PBUH) and embraced Islam and said, "O Allah's Messenger (PBUH)! We are owners of livestock and have never been farmers," and they found the climate of Medina unsuitable for them. So Allah's Messenger (PBUH) ordered that they be given some camels and a shepherd, and ordered them to go out with those camels and drink their milk and urine. So they set out, but when they reached a place called Al-Harra, they reverted to disbelief after their conversion to Islam, killed the shepherd and drove away the camels. When this news reached the Prophet (PBUH) he sent in their pursuit (and they were caught and brought). The Prophet (PBUH) ordered that their eyes be branded with heated iron bars and their hands be cut off, and they were left at Al-Harra till they died in that state. ھم سے عبدالاعلیٰ بن حماد نے بیان کیا ، کھا ھم سے یزید بن زریع نے بیان کیا ، کھا ھم سے سعید نے بیان کیا ، کھا ھم سے قتادھ نے بیان کیا اور ان سے حضرت انس بن مالک رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ قبیلھ عکل اور عرینھ کے کچھ لوگ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم کی خدمت میں حاضر ھوئے اوراسلام کے بارے میں گفتگو کی ۔ انھوں نے کھا کھ اے اللھ کے نبی ! ھم مویشی والے ھیں ھم لوگ اھل مدینھ کی طرح کاشتکار نھیں ھیں ۔ مدینھ کی آب و ھوا انھیں موافق نھیں آئی تھی ، چنانچھ آنحضرت صلی اللھ علیھ نے ان کے لیے چند اونٹوں اور ایک چرواھے کا حکم دیا اور آپ نے فرمایا کھ وھ لوگ ان اونٹوں کے ساتھ باھر چلے جائیں اور ان کا دودھ اور پیشاب پئیں ۔ وھ لوگ چلے گئے لیکن حرھ کے نزدیک پھنچ کر وھ اسلام سے مرتد ھو گئے اور آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم کے چرواھے کو قتل کر ڈالا اور اونٹوں کولے کر بھاگ پڑے جب آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم کو اس کی خبر ملی تو آپ نے ان کی تلاش میں آدمی دوڑائے پھر آپ نے ان کے متعلق حکم دیا اور ان کی آنکھوں میں سلائی پھیر دی گئی ، ان کے ھاتھ کاٹ دئے گئے اور حرھ کے کنارے انھیں چھوڑ دیا گیا ، وھ اسی حالت میں مر گئے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 76 Hadith no 623
Web reference: Sahih Bukhari Volume 7 Book 71 Hadith no 623



@2019 Copyrights: if you have any objection regarding any shared content on pdf9.com please click here.