Search hadith by
Hadith Book
Search Query
Search Language
English Arabic Urdu
Search Type Basic    Case Sensitive
 

Sahih Bukhari

Oaths and Vows

كتاب الأيمان والنذور

حَدَّثَنَا مُحَمَّدٌ، حَدَّثَنَا أَبُو الأَحْوَصِ، عَنْ أَبِي إِسْحَاقَ، عَنِ الْبَرَاءِ بْنِ عَازِبٍ، قَالَ أُهْدِيَ إِلَى النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم سَرَقَةٌ مِنْ حَرِيرٍ، فَجَعَلَ النَّاسُ يَتَدَاوَلُونَهَا بَيْنَهُمْ، وَيَعْجَبُونَ مِنْ حُسْنِهَا وَلِينِهَا، فَقَالَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ أَتَعْجَبُونَ مِنْهَا ‏"‏‏.‏ قَالُوا نَعَمْ يَا رَسُولَ اللَّهِ‏.‏ قَالَ ‏"‏ وَالَّذِي نَفْسِي بِيَدِهِ لَمَنَادِيلُ سَعْدٍ فِي الْجَنَّةِ خَيْرٌ مِنْهَا ‏"‏‏.‏ لَمْ يَقُلْ شُعْبَةُ وَإِسْرَائِيلُ عَنْ أَبِي إِسْحَاقَ ‏"‏ وَالَّذِي نَفْسِي بِيَدِهِ ‏"‏‏.‏

Narrated Al-Bara 'bin `Azib: A piece of silken cloth was given to the Prophet (PBUH) as a present and the people handed it over amongst themselves and were astonished at its beauty and softness. Allah's Messenger (PBUH) said, "Are you astonished at it?" They said, "Yes, O Allah's Messenger (PBUH)!" He said, "By Him in Whose Hand my soul is, the handkerchiefs of Sa`d in Paradise are better than it." ھم سے محمد بن سلام نے بیان کیا ، کھا ھم سے ابوالاحوص نے بیان کیا ، ان سے ابواسحاق نے ، ان سے براء بن عازب رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم کی خدمت میں ریشم کا ایک ٹکڑا ھدیھ کے طور پر آیا تو لوگ اسے دست بدست اپنے ھاتھوں میں لینے لگے اور اس کی خوبصورتی اور نرمی پرحیرت کرنے لگے ۔ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے اس پر فرمایا کھ تمھیں اس پر حیرت ھے ؟ صحابھ نے عرض کی جی ھاں ، یا رسول اللھ ! آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا اس ذات کی قسم جس کے ھاتھ میں میری جان ھے ، سعد رضی اللھ عنھ کے رومال جنت میں اس سے بھی اچھے ھیں ۔ شعبھ اور اسرائیل نے ابواسحاق سے الفاظ ” اس ذات کی قسم جس کے ھاتھ میں میری جان ھے “ کا ذکر نھیں کیا ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 83 Hadith no 6640
Web reference: Sahih Bukhari Volume 8 Book 78 Hadith no 635


حَدَّثَنَا يَحْيَى بْنُ بُكَيْرٍ، حَدَّثَنَا اللَّيْثُ، عَنْ يُونُسَ، عَنِ ابْنِ شِهَابٍ، حَدَّثَنِي عُرْوَةُ بْنُ الزُّبَيْرِ، أَنَّ عَائِشَةَ ـ رضى الله عنها ـ قَالَتْ إِنَّ هِنْدَ بِنْتَ عُتْبَةَ بْنِ رَبِيعَةَ قَالَتْ يَا رَسُولَ اللَّهِ مَا كَانَ مِمَّا عَلَى ظَهْرِ الأَرْضِ أَهْلُ أَخْبَاءٍ ـ أَوْ خِبَاءٍ ـ أَحَبَّ إِلَىَّ أَنْ يَذِلُّوا مِنْ أَهْلِ أَخْبَائِكَ ـ أَوْ خِبَائِكَ، شَكَّ يَحْيَى ـ ثُمَّ مَا أَصْبَحَ الْيَوْمَ أَهْلُ أَخْبَاءٍ ـ أَوْ خِبَاءٍ ـ أَحَبَّ إِلَىَّ مِنْ أَنْ يَعِزُّوا مِنْ أَهْلِ أَخْبَائِكَ أَوْ خِبَائِكَ‏.‏ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ وَأَيْضًا وَالَّذِي نَفْسُ مُحَمَّدٍ بِيَدِهِ ‏"‏‏.‏ قَالَتْ يَا رَسُولَ اللَّهِ إِنَّ أَبَا سُفْيَانَ رَجُلٌ مِسِّيكٌ، فَهَلْ عَلَىَّ حَرَجٌ أَنْ أُطْعِمَ مِنَ الَّذِي لَهُ قَالَ ‏"‏ لاَ إِلاَّ بِالْمَعْرُوفِ ‏"‏‏.‏

Narrated `Aisha: Hind bint `Utba bin Rabi`a said, "O Allah 's Apostle! (Before I embraced Islam), there was no family on the surface of the earth, I wish to have degraded more than I did your family. But today there is no family whom I wish to have honored more than I did yours." Allah's Messenger (PBUH) said, "I thought similarly, by Him in Whose Hand Muhammad's soul is!" Hind said, "O Allah's Messenger (PBUH)! (My husband) Abu Sufyan is a miser. Is it sinful of me to feed my children from his property?" The Prophet said, "No, unless you take it for your needs what is just and reasonable." ھم سے یحییٰ بن بکیر نے بیان کیا ، کھا ھم سے لیث بن سعد نے ، انھوں نے یونس سے ، انھوں نے ابن شھاب سے ، کھا مجھ سے عروھ بن زبیر نے بیان کیا کھ حضرت عائشھ رضی اللھ عنھا نے کھا کھ ھند بنت عتبھ بن ربیعھ ( معاویھ رضی اللھ عنھ کی ماں ) نے عرض کیا یا رسول اللھ ! ساری زمین پر جتنے ڈیرے والے ھیں ( یعنی عرب لوگ جو اکثر ڈیروں اور خیموں میں رھا کرتے تھے ) میں کسی کا ذلیل و خوار ھونا مجھ کو اتنا پسند نھیں تھا جتنا آپ کا ۔ یحییٰ بن بکیر راوی کو شک ھے ( کھ ڈیرے کا لفظ بھ صیغھ مفرد کھا یا بھ صیغھ جمع ) اب کوئی ڈیرھ والا یا ڈیرے والے ان کو عزت اور آبرو حاصل ھونا مجھ کو آپ کے ڈیرے والوں سے زیادھ پسند نھیں ھے ( یعنی اب میں آپ کی اور مسلمانوں کی سب سے زیادھ خیرخواھ ھوں ) آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا ابھی کیا ھے تو اور بھی زیادھ خیرخواھ بنے گی ۔ قسم ھے اس کی جس کے ھاتھ میں محمد کی جان ھے ۔ پھر ھند کھنے لگی یا رسول اللھ ! ابوسفیان تو ایک بخیل آدمی ھے مجھ پر گناھ تو نھیں ھو گا اگر میں اس کے مال میں سے ( اپنے بال بچوں کو کھلاؤں ) آپ نے فرمایا نھیں اگر تو دستور کے موافق خرچ کرے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 83 Hadith no 6641
Web reference: Sahih Bukhari Volume 8 Book 78 Hadith no 636


حَدَّثَنِي أَحْمَدُ بْنُ عُثْمَانَ، حَدَّثَنَا شُرَيْحُ بْنُ مَسْلَمَةَ، حَدَّثَنَا إِبْرَاهِيمُ، عَنْ أَبِيهِ، عَنْ أَبِي إِسْحَاقَ، سَمِعْتُ عَمْرَو بْنَ مَيْمُونٍ، قَالَ حَدَّثَنِي عَبْدُ اللَّهِ بْنُ مَسْعُودٍ ـ رضى الله عنه ـ قَالَ بَيْنَمَا رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم مُضِيفٌ ظَهْرَهُ إِلَى قُبَّةٍ مِنْ أَدَمٍ يَمَانٍ إِذْ قَالَ لأَصْحَابِهِ ‏"‏ أَتَرْضَوْنَ أَنْ تَكُونُوا رُبُعَ أَهْلِ الْجَنَّةِ ‏"‏‏.‏ قَالُوا بَلَى‏.‏ قَالَ ‏"‏ أَفَلَمْ تَرْضَوْا أَنْ تَكُونُوا ثُلُثَ أَهْلِ الْجَنَّةِ ‏"‏‏.‏ قَالُوا بَلَى‏.‏ قَالَ ‏"‏ فَوَالَّذِي نَفْسُ مُحَمَّدٍ بِيَدِهِ، إِنِّي لأَرْجُو أَنْ تَكُونُوا نِصْفَ أَهْلِ الْجَنَّةِ ‏"‏‏.‏

Narrated `Abdullah bin Masud: While Allah's Messenger (PBUH) was sitting, reclining his back against a Yemenite leather tent he said to his companions, "Will you be pleased to be one-fourth of the people of Paradise?" They said, 'Yes.' He said "Won't you be pleased to be one-third of the people of Paradise" They said, "Yes." He said, "By Him in Whose Hand Muhammad's soul is, I hope that you will be one-half of the people of Paradise." مجھ سے احمد بن عثمان نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے شریح بن مسلمھ نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے ابراھیم نے بیان کیا ، ان سے ان کے والد نے بیان کیا ، ان سے ابواسحاق نے ، کھا کھ میں نے عمرو بن میمون سے سنا ، کھا کھ مجھ سے عبداللھ بن مسعود رضی اللھ عنھما نے بیان کیا کھ ایک موقع پر رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم جب یمنی چمڑے کے خیمھ سے پشت لگائے ھوئے بیٹھے تھے تو آپ نے اپنے صحابھ سے فرمایا کیا تم اس پر خوش ھو کھ تم اھل جنت کے ایک چوتھائی رھو ؟ انھوں نے عرض کیا ، کیوں نھیں ۔ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا ۔ کیا تم اس پر خوش نھیں ھو کھ تم اھل جنت کے ایک تھائی حصھ پاؤ ۔ صحابھ نے عرض کیا کیوں نھیں ۔ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے اس پر فرمایا ، پس اس ذات کی قسم جس کے ھاتھ میں میری جان ھے ! مجھے امید ھے کھ جنت میں آدھے تم ھی ھو گے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 83 Hadith no 6642
Web reference: Sahih Bukhari Volume 8 Book 78 Hadith no 637


حَدَّثَنَا عَبْدُ اللَّهِ بْنُ مَسْلَمَةَ، عَنْ مَالِكٍ، عَنْ عَبْدِ الرَّحْمَنِ بْنِ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ عَبْدِ الرَّحْمَنِ، عَنْ أَبِيهِ، عَنْ أَبِي سَعِيدٍ، أَنَّ رَجُلاً، سَمِعَ رَجُلاً، يَقْرَأُ ‏{‏قُلْ هُوَ اللَّهُ أَحَدٌ‏}‏ يُرَدِّدُهَا، فَلَمَّا أَصْبَحَ جَاءَ إِلَى رَسُولِ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم فَذَكَرَ ذَلِكَ لَهُ، وَكَأَنَّ الرَّجُلَ يَتَقَالُّهَا فَقَالَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ وَالَّذِي نَفْسِي بِيَدِهِ إِنَّهَا لَتَعْدِلُ ثُلُثَ الْقُرْآنِ ‏"‏‏.‏

Narrated Abu Sa`id Al-Khudri: A man heard another man reciting: Surat-ul-Ikhlas (The Unity) 'Say: He is Allah, the One (112) and he was repeating it. The next morning he came to Allah's Messenger (PBUH) and mentioned the whole story to him as if he regarded the recitation of that Sura as insufficient On that, Allah's Messenger (PBUH) said, "By Him in Whose Hand my soul is! That (Sura No. 112) equals one-third of the Qur'an." ھم سے عبداللھ بن مسلمھ نے بیان کیا ، ان سے امام مالک نے بیان کیا ، ان سے عبدالرحمٰن بن عبداللھ بن عبدالرحمٰن نے بیان کیا ، ان سے ان کے والد نے بیان کیا اور ان سے ابو سعید خدری رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ ایک صحابی نے سنا کھ ایک دوسرے صحابی سورۃ قل ھو اللھ باربار پڑھتے ھیں جب صبح ھوئی تو وھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم کے پاس آئے اور آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم سے اس کا ذکر کیا ، وھ صحابی اس سورت کو کم سمجھتے تھے لیکن آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا ، اس ذات کی قسم جس کے ھاتھ میں میری جان ھے یھ قرآن مجید کے ایک تھائی حصھ کے برابرھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 83 Hadith no 6643
Web reference: Sahih Bukhari Volume 8 Book 78 Hadith no 638


حَدَّثَنِي إِسْحَاقُ، أَخْبَرَنَا حَبَّانُ، حَدَّثَنَا هَمَّامٌ، حَدَّثَنَا قَتَادَةُ، حَدَّثَنَا أَنَسُ بْنُ مَالِكٍ ـ رضى الله عنه ـ أَنَّهُ سَمِعَ النَّبِيَّ صلى الله عليه وسلم يَقُولُ ‏"‏ أَتِمُّوا الرُّكُوعَ وَالسُّجُودَ، فَوَالَّذِي نَفْسِي بِيَدِهِ إِنِّي لأَرَاكُمْ مِنْ بَعْدِ ظَهْرِي إِذَا مَا رَكَعْتُمْ وَإِذَا مَا سَجَدْتُمْ ‏"‏‏.‏

Narrated Anas bin Malik: I heard the Prophet (PBUH) saying, "Perform the bowing and the prostration properly (with peace of mind), for, by Him in Whose Hand my soul is, I see you from behind my back when you bow and when you prostrate." مجھ سے اسحاق نے بیان کیا ، کھا ھم کو حبان نے خبر دی ، کھا ھم سے ھمام نے بیان کیا ، کھا ھم سے قتادھ نے بیان کیا ، کھا ھم سے انس بن مالک رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ انھوں نے نبی کریم کریم صلی اللھ علیھ وسلم سے سنا ۔ آپ فرما رھے تھے کھ رکوع اور سجدھ پورے طور پر ادا کیا کرو ۔ اللھ کی قسم جس کے ھاتھ میں میری جان ھے میں اپنی کمر کے پیچھے سے تم کو دیکھ لیتا ھوں جب رکوع اور سجدھ کرتے ھو ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 83 Hadith no 6644
Web reference: Sahih Bukhari Volume 8 Book 78 Hadith no 639


حَدَّثَنَا إِسْحَاقُ، حَدَّثَنَا وَهْبُ بْنُ جَرِيرٍ، أَخْبَرَنَا شُعْبَةُ، عَنْ هِشَامِ بْنِ زَيْدٍ، عَنْ أَنَسِ بْنِ مَالِكٍ، أَنَّ امْرَأَةً، مِنَ الأَنْصَارِ أَتَتِ النَّبِيَّ صلى الله عليه وسلم مَعَهَا أَوْلاَدٌ لَهَا فَقَالَ النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ وَالَّذِي نَفْسِي بِيَدِهِ إِنَّكُمْ لأَحَبُّ النَّاسِ إِلَىَّ ‏"‏‏.‏ قَالَهَا ثَلاَثَ مِرَارٍ‏.‏

Narrated Anas bin Malik: An Ansari woman came to the Prophet (PBUH) in the company of her children, and the Prophet (PBUH) said to her, "By Him in Whose Hand my soul is, you are the most beloved people to me!" And he repeated the statement thrice. ھم سے اسحاق نے بیان کیا ، کھا ھم سے وھب بن جریر نے بیان کیا ، کھا ھم کو شعبھ نے خبر دی ھشام بن زید سے اور انھیں انس بن مالک رضی اللھ عنھ نے کھ انصاری خاتون نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم کی خدمت میں حاضر ھوئیں ، ان کے ساتھ ان کے بچے بھی تھے ۔ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے ان سے فرمایا کھ اس ذات کی قسم جس کے ھاتھ میں میری جان ھے تم لوگ بھی مجھے تمام لوگوں میں سب سے زیادھ عزیز ھو ۔ یھ الفاظ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے تین مرتبھ فرمائے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 83 Hadith no 6645
Web reference: Sahih Bukhari Volume 8 Book 78 Hadith no 640



@2019 Copyrights: if you have any objection regarding any shared content on pdf9.com please click here.