Search hadith by
Hadith Book
Search Query
Search Language
English Arabic Urdu
Search Type Basic    Case Sensitive
 

Sahih Bukhari

Oaths and Vows

كتاب الأيمان والنذور

حَدَّثَنَا عَبْدُ اللَّهِ بْنُ مَسْلَمَةَ، عَنْ مَالِكٍ، عَنْ نَافِعٍ، عَنْ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ عُمَرَ ـ رضى الله عنهما ـ أَنَّ رَسُولَ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم أَدْرَكَ عُمَرَ بْنَ الْخَطَّابِ وَهْوَ يَسِيرُ فِي رَكْبٍ يَحْلِفُ بِأَبِيهِ فَقَالَ ‏"‏ أَلاَ إِنَّ اللَّهَ يَنْهَاكُمْ أَنْ تَحْلِفُوا بِآبَائِكُمْ، مَنْ كَانَ حَالِفًا فَلْيَحْلِفْ بِاللَّهِ، أَوْ لِيَصْمُتْ ‏"‏‏.‏


Chapter: "Do not swear by your fathers"

Narrated Ibn `Umar: Allah's Messenger (PBUH) met `Umar bin Al-Khattab while the latter was going with a group of camel-riders, and he was swearing by his father. The Prophet (PBUH) said, "Lo! Allah forbids you to swear by your fathers, so whoever has to take an oath, he should swear by Allah or keep quiet." ھم سے عبداللھ بن مسلمھ نے بیان کیا ، ان سے مالک نے ، ان سے نافع نے ، ان سے عبداللھ بن عمر رضی اللھ عنھما نے بیان کیا کھ رسول کریم صلی اللھ علیھ وسلم عمر بن خطاب کے پاس آئے تو وھ سواروں کی ایک جماعت کے ساتھ چل رھے تھے اور اپنے باپ کی قسم کھا رھے تھے ۔ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا خبردار تحقیق اللھ تعالیٰ نے تمھیں باپ دادوں کی قسم کھانے سے منع کیا ھے ، جسے قسم کھانی ھے اسے ( بشرط صدق ) چاھئے کھ اللھ ھی کی قسم کھائے ورنھ چپ رھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 83 Hadith no 6646
Web reference: Sahih Bukhari Volume 8 Book 78 Hadith no 641


حَدَّثَنَا سَعِيدُ بْنُ عُفَيْرٍ، حَدَّثَنَا ابْنُ وَهْبٍ، عَنْ يُونُسَ، عَنِ ابْنِ شِهَابٍ، قَالَ قَالَ سَالِمٌ قَالَ ابْنُ عُمَرَ سَمِعْتُ عُمَرَ، يَقُولُ قَالَ لِي رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ إِنَّ اللَّهَ يَنْهَاكُمْ أَنْ تَحْلِفُوا بِآبَائِكُمْ ‏"‏‏.‏ قَالَ عُمَرُ فَوَاللَّهِ مَا حَلَفْتُ بِهَا مُنْذُ سَمِعْتُ النَّبِيَّ صلى الله عليه وسلم ذَاكِرًا وَلاَ آثِرًا‏.‏ قَالَ مُجَاهِدٌ ‏{‏أَوْ أَثَرَةٍ مِنْ عِلْمٍ‏}‏ يَأْثُرُ عِلْمًا‏.‏ تَابَعَهُ عُقَيْلٌ وَالزُّبَيْدِيُّ وَإِسْحَاقُ الْكَلْبِيُّ عَنِ الزُّهْرِيِّ‏.‏ وَقَالَ ابْنُ عُيَيْنَةَ وَمَعْمَرٌ عَنِ الزُّهْرِيِّ عَنْ سَالِمٍ عَنِ ابْنِ عُمَرَ سَمِعَ النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم عُمَرَ‏.‏

Narrated Ibn `Umar: I heard `Umar saying, "Allah's Messenger (PBUH) said to me, 'Allah forbids you to swear by your fathers." `Umar said, "By Allah! Since I heard that from the Prophet (PBUH) , I have not taken such an oath, neither intentionally, nor by reporting the oath of someone else." ھم سے سعید بن عفیرنے بیان کیا ، کھا ھم سے ابن وھب نے بیان کیا ، ان سے یونس نے ، ان سے ابن شھاب نے ، ان سے سالم نے کھ ابن عمر رضی اللھ عنھما نے کھا کھ میں نے عمر رضی اللھ عنھ سے سنا کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے مجھ سے فرمایا تھا کھ اللھ تعالیٰ تمھیں باپ دادوں کی قسم کھانے سے منع کیا ھے ۔ حضرت عمر رضی اللھ عنھ نے بیان کیا واللھ ! پھر میں نے ان کی آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم سے ممانعت سننے کے بعد کبھی قسم نھیں کھائی نھ اپنی طرف سے غیر اللھ کی قسم کھائی نھ کسی دوسرے کی زبان سے نقل کی ۔ مجاھد نے کھا سورۃ الاحقاف میں جو اثارۃ من علم ھے اس کا معنی یھ ھے کھ علم کی کوئی بات نقل کرتا ھو ۔ یونس کے ساتھ اس حدیث کو عقیل اور محمد بن ولید زبیدی اور اسحاق بن یحییٰ کلبی نے بھی زھری سے روایت کیا اور سفیان بن عیینھ اور معمر نے اس کو زھری سے روایت کیا ، انھوں نے سالم سے ، انھوں نے ابن عمر رضی اللھ عنھما سے ، انھوں نے آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم سے کھ آپ نے حضرت عمر رضی اللھ عنھ کو غیر اللھ کی قسم کھاتے سنا ۔ روایت میں لفظ اثارۃ کی تفسیر آثراً کی مناسبت سے بیان کر دی کیونکھ دونوں کا مادھ ایک ھی ھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 83 Hadith no 6647
Web reference: Sahih Bukhari Volume 8 Book 78 Hadith no 642


حَدَّثَنَا مُوسَى بْنُ إِسْمَاعِيلَ، حَدَّثَنَا عَبْدُ الْعَزِيزِ بْنُ مُسْلِمٍ، حَدَّثَنَا عَبْدُ اللَّهِ بْنُ دِينَارٍ، قَالَ سَمِعْتُ عَبْدَ اللَّهِ بْنَ عُمَرَ ـ رضى الله عنهما ـ يَقُولُ قَالَ رَسُولُ اللَّهُ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ لاَ تَحْلِفُوا بِآبَائِكُمْ ‏"‏‏.‏

Narrated `Abdullah bin `Umar: Allah's Messenger (PBUH) said, "Do not swear by your fathers." ھم سے موسیٰ بن اسماعیل نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے عبدالعزیز بن مسلم نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے عبداللھ بن دینار نے بیان کیا ، انھوں نے کھا کھ میں نے عبداللھ بن عمر رضی اللھ عنھما سے سنا ، انھوں نے بیان کیا کھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا اپنے باپ دادوں کی قسم نھ کھاؤ ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 83 Hadith no 6648
Web reference: Sahih Bukhari Volume 8 Book 78 Hadith no 643


حَدَّثَنَا قُتَيْبَةُ، حَدَّثَنَا عَبْدُ الْوَهَّابِ، عَنْ أَيُّوبَ، عَنْ أَبِي قِلاَبَةَ، وَالْقَاسِمِ التَّمِيمِيِّ، عَنْ زَهْدَمٍ، قَالَ كَانَ بَيْنَ هَذَا الْحَىِّ مِنْ جَرْمٍ وَبَيْنَ الأَشْعَرِيِّينَ وُدٌّ وَإِخَاءٌ، فَكُنَّا عِنْدَ أَبِي مُوسَى الأَشْعَرِيِّ، فَقُرِّبَ إِلَيْهِ طَعَامٌ فِيهِ لَحْمُ دَجَاجٍ وَعِنْدَهُ رَجُلٌ مِنْ بَنِي تَيْمِ اللَّهِ أَحْمَرُ كَأَنَّهُ مِنَ الْمَوَالِي، فَدَعَاهُ إِلَى الطَّعَامِ فَقَالَ إِنِّي رَأَيْتُهُ يَأْكُلُ شَيْئًا فَقَذِرْتُهُ، فَحَلَفْتُ أَنْ لاَ آكُلَهُ‏.‏ فَقَالَ قُمْ فَلأُحَدِّثَنَّكَ عَنْ ذَاكَ، إِنِّي أَتَيْتُ رَسُولَ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم فِي نَفَرٍ مِنَ الأَشْعَرِيِّينَ نَسْتَحْمِلُهُ فَقَالَ ‏"‏ وَاللَّهِ لاَ أَحْمِلُكُمْ، وَمَا عِنْدِي مَا أَحْمِلُكُمْ ‏"‏‏.‏ فَأُتِيَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم بِنَهْبِ إِبِلٍ فَسَأَلَ عَنَّا‏.‏ فَقَالَ ‏"‏ أَيْنَ النَّفَرُ الأَشْعَرِيُّونَ ‏"‏‏.‏ فَأَمَرَ لَنَا بِخَمْسِ ذَوْدٍ غُرِّ الذُّرَى، فَلَمَّا انْطَلَقْنَا قُلْنَا مَا صَنَعْنَا حَلَفَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم لاَ يَحْمِلُنَا وَمَا عِنْدَهُ مَا يَحْمِلُنَا ثُمَّ حَمَلَنَا، تَغَفَّلْنَا رَسُولَ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم يَمِينَهُ، وَاللَّهِ لاَ نُفْلِحُ أَبَدًا، فَرَجَعْنَا إِلَيْهِ فَقُلْنَا لَهُ إِنَّا أَتَيْنَاكَ لِتَحْمِلَنَا فَحَلَفْتَ أَنْ لاَ تَحْمِلَنَا، وَمَا عِنْدَكَ مَا تَحْمِلُنَا‏.‏ فَقَالَ ‏"‏ إِنِّي لَسْتُ أَنَا حَمَلْتُكُمْ، وَلَكِنَّ اللَّهَ حَمَلَكُمْ، وَاللَّهِ لاَ أَحْلِفُ عَلَى يَمِينٍ فَأَرَى غَيْرَهَا خَيْرًا مِنْهَا، إِلاَّ أَتَيْتُ الَّذِي هُوَ خَيْرٌ وَتَحَلَّلْتُهَا ‏"‏‏.‏

Narrated Zahdam: There was a relation of love and brotherhood between this tribe of Jarm and Al-Ash`ariyin. Once we were with Abu Musa Al-Ash`ari, and then a meal containing chicken was brought to Abu Musa, and there was present, a man from the tribe of Taimillah who was of red complexion as if he were from non-Arab freed slaves. Abu Musa invited him to the meal. He said, "I have seen chickens eating dirty things, so I deemed it filthy and took an oath that I would never eat chicken." On that, Abu Musa said, "Get up, I will narrate to you about that. Once a group of the Ash`ariyin and I went to Allah's Messenger (PBUH) and asked him to provide us with mounts; he said, 'By Allah, I will never give you any mounts nor do I have anything to mount you on.' Then a few camels of war booty were brought to Allah's Messenger (PBUH) , and he asked about us, saying, 'Where are the Ash-'ariyin?' He then ordered five nice camels to be given to us, and when we had departed, we said, 'What have we done? Allah's Messenger (PBUH) had taken the oath not to give us any mounts, and that he had nothing to mount us on, and later he gave us that we might ride? Did we take advantage of the fact that Allah's Messenger (PBUH) had forgotten his oath? By Allah, we will never succeed.' So we went back to him and said to him, 'We came to you to give us mounts, and you took an oath that you would not give us any mounts and that you had nothing to mount us on.' On that he said, 'I did not provide you with mounts, but Allah did. By Allah, if I take an oath to do something, and then find something else better than it, I do that which is better and make expiation for the dissolution of the oath.' " ھم سے قتیبھ نے بیان کیا ، کھا ھم سے عبدالوھاب نے ، ان سے ایوب نے ، ان سے ابوقلابھ اور قاسم تیمی نے اور ان سے زھدم نے بیان کیا کھ ان قبائل جرم اور اشعر کے درمیان بھائی چارھ تھا ۔ ھم ابوموسیٰ اشعری رضی اللھ عنھ کی خدمت میں موجود تھے تو ان کے لئے کھانا لایا گیا ۔ اس میں مرغی بھی تھی ۔ ان کے پاس بنی تیم اللھ کا ایک سرخ رنگ کا آدمی بھی موجود تھا ۔ غالباً وھ غلاموں میں سے تھا ۔ ابوموسیٰ اشعری رضی اللھ عنھ نے اسے کھانے پر بلایا تو اس نے کھا کھ میں نے مرغی کو گندگی کھاتے دیکھا تو مجھے گھن آئی اور پھر میں نے قسم کھا لی کھ اب میں اس کا گوشت نھیں کھاؤں گا ۔ ابوموسیٰ اشعری رضی اللھ عنھ نے کھا کھ کھڑے ھو جاؤ تو میں تمھیں اس کے بارے میں ایک حدیث سناؤں ۔ میں رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم کے پاس قبیلھ اشعر کے چند لوگوں کے ساتھ آیا اور ھم نے آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم سے سواری کا جانور مانگا ۔ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ اللھ کی قسم میں تمھیں سواری نھیں دے سکتا اور نھ میرے پاس ایسا کوئی جانور ھے جو تمھیں سواری کے لئے دے سکوں ، پھر آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم کے پاس کچھ مال غنیمت کے اونٹ آئے تو آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے پوچھا کھ اشعری لوگ کھاں ھیں پھر آپ نے ھم کو پانچ عمدھ قسم کے اونٹ دئیے جانے کا حکم فرمایا ۔ جب ھم ان کو لے کر چلے تو ھم نے کھا یھ ھم نے کیا کیا رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم تو قسم کھا چکے تھے کھ ھم کو سواری نھیں دیں گے اور درحقیقت آپ صلی اللھ علیھ وسلم کے پاس اس وقت سواری موجود بھی نھ تھی پھر آپ نے ھم کو سوار کرا دیا ۔ ھم نے رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم کو آپ کی قسم سے غافل کر دیا ۔ قسم اللھ کی ھم اس حرکت کے بعد کبھی فلاح نھیں پاسکیں گے ۔ پس ھم آپ کی طرف لوٹ کر آئے اور آپ سے ھم نے تفصیل بالا کو عرض کیا کھ ھم آپ کے پاس آئے تھے تاکھ آپ ھم کو سواری پر سوار کرا دیں پس آپ نے قسم کھا لی تھی کھ آپ ھم کو سوار نھیں کرائیں گے اور درحقیقت اس وقت آپ کے پاس سواری موجود بھی نھ تھی ۔ آپ نے یھ سب سن کر فرمایا کھ میں نے تم کو سوارنھیں کرایا بلکھ اللھ نے تم کو سوار کرا دیا ۔ اللھ کی قسم جب میں کوئی قسم کھا لیتا ھوں بعد میں اس سے بھتر اور معاملھ دیکھتا ھوں تو میں وھی کرتا ھوں جو بھتر ھوتا ھے اور اس قسم کا کفارھ ادا کر دیتا ھوں ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 83 Hadith no 6649
Web reference: Sahih Bukhari Volume 8 Book 78 Hadith no 644


حَدَّثَنِي عَبْدُ اللَّهِ بْنُ مُحَمَّدٍ، حَدَّثَنَا هِشَامُ بْنُ يُوسُفَ، أَخْبَرَنَا مَعْمَرٌ، عَنِ الزُّهْرِيِّ، عَنْ حُمَيْدِ بْنِ عَبْدِ الرَّحْمَنِ، عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ ـ رضى الله عنه ـ عَنِ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم قَالَ ‏"‏ مَنْ حَلَفَ فَقَالَ فِي حَلِفِهِ بِاللاَّتِ وَالْعُزَّى‏.‏ فَلْيَقُلْ لاَ إِلَهَ إِلاَّ اللَّهُ‏.‏ وَمَنْ قَالَ لِصَاحِبِهِ تَعَالَ أُقَامِرْكَ‏.‏ فَلْيَتَصَدَّقْ ‏"‏‏.‏


Chapter: One should not swear by Al-Lat and Al-'Uzza or by any false deities

Narrated Abu Huraira: The Prophet (PBUH) said, "Whoever swears saying in his oath. 'By Al-Lat and Al-`Uzza,' should say, 'None has the right to be worshipped but Allah; and whoever says to his friend, 'Come, let me gamble with you,' should give something in charity." مجھ سے عبداللھ بن محمد نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے ھشام بن یوسف نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم کو معمر نے خبر دی ، انھوں نے کھا ھم سے زھری نے بیان کیا ، انھیں حمید بن عبدالرحمٰن نے اور ان سے حضرت ابوھریرھ رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا جس نے قسم کھائی اور کھا کھ ” لات و عزیٰ کی قسم “ تو اسے پھر کلمھ لا الھ الااﷲ کھھ لینا چاھئے اور جو شخص اپنے ساتھی سے کھے کھ آؤ جوا کھیلیں تو اسے چاھئے کھ ( اس کے کفارھ میں ) صدقھ کرے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 83 Hadith no 6650
Web reference: Sahih Bukhari Volume 8 Book 78 Hadith no 645


حَدَّثَنَا قُتَيْبَةُ، حَدَّثَنَا اللَّيْثُ، عَنْ نَافِعٍ، عَنِ ابْنِ عُمَرَ ـ رضى الله عنهما ـ أَنَّ رَسُولَ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم اصْطَنَعَ خَاتَمًا مِنْ ذَهَبٍ وَكَانَ يَلْبَسُهُ، فَيَجْعَلُ فَصَّهُ فِي بَاطِنِ كَفِّهِ، فَصَنَعَ النَّاسُ خَوَاتِيمَ ثُمَّ إِنَّهُ جَلَسَ عَلَى الْمِنْبَرِ فَنَزَعَهُ، فَقَالَ ‏"‏ إِنِّي كُنْتُ أَلْبَسُ هَذَا الْخَاتِمَ وَأَجْعَلُ فَصَّهُ مِنْ دَاخِلٍ ‏"‏‏.‏ فَرَمَى بِهِ ثُمَّ قَالَ ‏"‏ وَاللَّهِ لاَ أَلْبَسُهُ أَبَدًا ‏"‏‏.‏ فَنَبَذَ النَّاسُ خَوَاتِيمَهُمْ‏.‏


Chapter: The one who gives an oath regarding something although he has not been asked to give an oath

Narrated Ibn `Umar: Allah's Messenger (PBUH) had a gold ring made for himself, and he used to wear it with the stone towards the inner part of his hand. Consequently, the people had similar rings made for themselves. Afterwards the Prophet; sat on the pulpit and took it off, saying, "I used to wear this ring and keep its stone towards the palm of my hand." He then threw it away and said, "By Allah, I will never wear it." Therefore all the people threw away their rings as well. ھم سے قتیبھ بن سعید نے بیان کیا ، کھا ھم سے لیث بن سعد نے بیان کیا ، ان سے نافع نے ، ان سے عبداللھ بن عمر رضی اللھ عنھما نے کھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم نے سونے کی ایک انگوٹھی بنوائی اور آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم اسے پھنتے تھے ، اس کا نگینھ ھتھیلی کے حصے کی طرف رکھتے تھے ۔ پھر لوگوں نے بھی ایسی انگوٹھیاں بنوالیں اس کے بعد ایک دن آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم منبر پر بیٹھے اوراپنی انگوٹھی اتاردی اور فرمایا کھ میں اسے پھنتا تھا اور اس کا نگینھ اندر کی جانب رکھتا تھا ، پھر آپ صلی اللھ علیھ وسلم نے اسے اتار کر پھینک دیا اور فرمایا کھ اللھ کی قسم میں اب اسے کبھی نھیں پھنوں گا ۔ پس لوگوں نے بھی اپنی انگوٹھیاں اتار کر پھینک دیں ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 83 Hadith no 6651
Web reference: Sahih Bukhari Volume 8 Book 78 Hadith no 646



@2019 Copyrights: if you have any objection regarding any shared content on pdf9.com please click here.