Search hadith by
Hadith Book
Search Query
Search Language
English Arabic Urdu
Search Type Basic    Case Sensitive
 

Sahih Bukhari

Prayers (Salat)

كتاب الصلاة

حَدَّثَنَا يَحْيَى بْنُ صَالِحٍ، قَالَ حَدَّثَنَا فُلَيْحُ بْنُ سُلَيْمَانَ، عَنْ سَعِيدِ بْنِ الْحَارِثِ، قَالَ سَأَلْنَا جَابِرَ بْنَ عَبْدِ اللَّهِ عَنِ الصَّلاَةِ، فِي الثَّوْبِ الْوَاحِدِ فَقَالَ خَرَجْتُ مَعَ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم فِي بَعْضِ أَسْفَارِهِ، فَجِئْتُ لَيْلَةً لِبَعْضِ أَمْرِي، فَوَجَدْتُهُ يُصَلِّي وَعَلَىَّ ثَوْبٌ وَاحِدٌ، فَاشْتَمَلْتُ بِهِ وَصَلَّيْتُ إِلَى جَانِبِهِ، فَلَمَّا انْصَرَفَ قَالَ ‏"‏ مَا السُّرَى يَا جَابِرُ ‏"‏‏.‏ فَأَخْبَرْتُهُ بِحَاجَتِي، فَلَمَّا فَرَغْتُ قَالَ ‏"‏ مَا هَذَا الاِشْتِمَالُ الَّذِي رَأَيْتُ ‏"‏‏.‏ قُلْتُ كَانَ ثَوْبٌ‏.‏ يَعْنِي ضَاقَ‏.‏ قَالَ ‏"‏ فَإِنْ كَانَ وَاسِعًا فَالْتَحِفْ بِهِ، وَإِنْ كَانَ ضَيِّقًا فَاتَّزِرْ بِهِ ‏"‏‏.‏


Chapter: If the garment is tight (over the body)

Narrated Sa`id bin Al-Harith: I asked Jabir bin `Abdullah about praying in a single garment. He said, "I traveled with the Prophet (PBUH) during some of his journeys, and I came to him at night for some purpose and I found him praying. At that time, I was wearing a single garment with which I covered my shoulders and prayed by his side. When he finished the prayer, he asked, 'O Jabir! What has brought you here?' I told him what I wanted. When I finished, he asked, 'O Jabir! What is this garment which I have seen and with which you covered your shoulders?' I replied, 'It is a (tight) garment.' He said, 'If the garment is large enough, wrap it round the body (covering the shoulders) and if it is tight (too short) then use it as an Izar (tie it around your waist only.)' " ھم سے یحییٰ بن صالح نے بیان کیا ، کھا ھم سے فلیح بن سلیمان نے ، وھ سعید بن حارث سے ، کھا ھم نے جابر بن عبداللھ سے ایک کپڑے میں نماز پڑھنے کے بارے میں پوچھا ۔ تو آپ نے فرمایا کھ میں نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم کے ساتھ ایک سفر ( غزوھ بواط ) میں گیا ۔ ایک رات میں کسی ضرورت کی وجھ سے آپ کے پاس آیا ۔ میں نے دیکھا کھ آپ صلی اللھ علیھ وسلم نماز میں مشغول ھیں ، اس وقت میرے بدن پر صرف ایک ھی کپڑا تھا ۔ اس لیے میں نے اسے لپیٹ لیا اور آپ کے بازو میں ھو کر میں بھی نماز میں شریک ھو گیا ۔ جب آپ نماز سے فارغ ھوئے تو دریافت فرمایا جابر اس رات کے وقت کیسے آئے ؟ میں نے آپ صلی اللھ علیھ وسلم سے اپنی ضرورت کے متعلق کھا ۔ میں جب فارغ ھو گیا تو آپ صلی اللھ علیھ وسلم نے پوچھا کھ یھ تم نے کیا لپیٹ رکھا تھا جسے میں نے دیکھا ۔ میں نے عرض کی کھ ( ایک ھی ) کپڑا تھا ( اس طرح نھ لپیٹتا تو کیا کرتا ) آپ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ اگر وھ کشادھ ھو تو اسے اچھی طرح لپیٹ لیا کر اور اگر تنگ ھو تو اس کو تھبند کے طور پر باندھ لیا کر ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 8 Hadith no 361
Web reference: Sahih Bukhari Volume 1 Book 8 Hadith no 357


حَدَّثَنَا مُسَدَّدٌ، قَالَ حَدَّثَنَا يَحْيَى، عَنْ سُفْيَانَ، قَالَ حَدَّثَنِي أَبُو حَازِمٍ، عَنْ سَهْلٍ، قَالَ كَانَ رِجَالٌ يُصَلُّونَ مَعَ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم عَاقِدِي أُزْرِهِمْ عَلَى أَعْنَاقِهِمْ كَهَيْئَةِ الصِّبْيَانِ، وَقَالَ لِلنِّسَاءِ لاَ تَرْفَعْنَ رُءُوسَكُنَّ حَتَّى يَسْتَوِيَ الرِّجَالُ جُلُوسًا‏.‏

Narrated Sahl: The men used to pray with the Prophet (PBUH) with their Izars tied around their necks as boys used to do; therefore the Prophet (PBUH) told the women not to raise their heads till the men sat down straight (while praying). ھم سے مسدد نے بیان کیا ، کھا ھم سے یحییٰ بن سعید قطان نے ، انھوں نے سفیان ثوری سے ، انھوں نے کھا مجھ سے ابوحازم سلمھ بن دینار نے بیان کیا سھل بن سعد ساعدی سے ، انھوں نے کھا کھ کئی آدمی نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم کے ساتھ بچوں کی طرح اپنی گردنوں پر ازاریں باندھے ھوئے نماز پڑھتے تھے اور عورتوں کو ( آپ کے زمانے میں ) حکم تھا کھ اپنے سروں کو ( سجدے سے ) اس وقت تک نھ اٹھائیں جب تک مرد سیدھے ھو کر بیٹھ نھ جائیں ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 8 Hadith no 362
Web reference: Sahih Bukhari Volume 1 Book 8 Hadith no 358


حَدَّثَنَا يَحْيَى، قَالَ حَدَّثَنَا أَبُو مُعَاوِيَةَ، عَنِ الأَعْمَشِ، عَنْ مُسْلِمٍ، عَنْ مَسْرُوقٍ، عَنْ مُغِيرَةَ بْنِ شُعْبَةَ، قَالَ كُنْتُ مَعَ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم فِي سَفَرٍ فَقَالَ ‏"‏ يَا مُغِيرَةُ، خُذِ الإِدَاوَةَ ‏"‏‏.‏ فَأَخَذْتُهَا فَانْطَلَقَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم حَتَّى تَوَارَى عَنِّي فَقَضَى حَاجَتَهُ، وَعَلَيْهِ جُبَّةٌ شَأْمِيَّةٌ، فَذَهَبَ لِيُخْرِجَ يَدَهُ مِنْ كُمِّهَا فَضَاقَتْ، فَأَخْرَجَ يَدَهُ مِنْ أَسْفَلِهَا، فَصَبَبْتُ عَلَيْهِ فَتَوَضَّأَ وُضُوءَهُ لِلصَّلاَةِ، وَمَسَحَ عَلَى خُفَّيْهِ، ثُمَّ صَلَّى‏.‏

Narrated Mughira bin Shu`ba: Once I was traveling with the Prophet (PBUH) and he said, "O Mughira! take this container of water." I took it and Allah's Messenger (PBUH) went far away till he disappeared. He answered the call of nature and was wearing a Syrian cloak. He tried to take out his hands from its sleeve but it was very tight so he took out his hands from under it. I poured water and he performed ablution like that for prayers and passed his wet hands over his Khuff (socks made from thick fabric or leather) and then prayed . ھم سے یحییٰ بن موسیٰ نے بیان کیا ، کھا ھم سے ابومعاویھ نے اعمش کے واسطھ سے ، انھوں نے مسلم بن صبیح سے ، انھوں نے مسروق بن اجدع سے ، انھوں نے مغیرھ بن شعبھ سے ، آپ نے فرمایا کھ میں نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم کے ساتھ ایک سفر ( غزوھ تبوک ) میں تھا ۔ آپ نے ایک موقع پر فرمایا ۔ مغیرھ ! پانی کی چھاگل اٹھا لے ۔ میں نے اسے اٹھا لیا ۔ پھر رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم چلے اور میری نظروں سے چھپ گئے ۔ آپ نے قضائے حاجت کی ۔ اس وقت آپ شامی جبھ پھنے ھوئے تھے ۔ آپ ھاتھ کھولنے کے لیے آستین اوپر چڑھانی چاھتے تھے لیکن وھ تنگ تھی اس لیے آستین کے اندر سے ھاتھ باھر نکالا ۔ میں نے آپ کے ھاتھوں پر پانی ڈالا ۔ آپ صلی اللھ علیھ وسلم نے نماز کے وضو کی طرح وضو کیا اور اپنے خفین پر مسح کیا ۔ پھر نماز پڑھی ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 8 Hadith no 363
Web reference: Sahih Bukhari Volume 1 Book 8 Hadith no 359


حَدَّثَنَا مَطَرُ بْنُ الْفَضْلِ، قَالَ حَدَّثَنَا رَوْحٌ، قَالَ حَدَّثَنَا زَكَرِيَّاءُ بْنُ إِسْحَاقَ، حَدَّثَنَا عَمْرُو بْنُ دِينَارٍ، قَالَ سَمِعْتُ جَابِرَ بْنَ عَبْدِ اللَّهِ، يُحَدِّثُ أَنَّ رَسُولَ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم كَانَ يَنْقُلُ مَعَهُمُ الْحِجَارَةَ لِلْكَعْبَةِ وَعَلَيْهِ إِزَارُهُ‏.‏ فَقَالَ لَهُ الْعَبَّاسُ عَمُّهُ يَا ابْنَ أَخِي، لَوْ حَلَلْتَ إِزَارَكَ فَجَعَلْتَ عَلَى مَنْكِبَيْكَ دُونَ الْحِجَارَةِ‏.‏ قَالَ فَحَلَّهُ فَجَعَلَهُ عَلَى مَنْكِبَيْهِ، فَسَقَطَ مَغْشِيًّا عَلَيْهِ، فَمَا رُئِيَ بَعْدَ ذَلِكَ عُرْيَانًا صلى الله عليه وسلم‏.‏


Chapter: It is disliked to the naked during As-Salat (the prayers)

Narrated Jabir bin `Abdullah: While Allah's Messenger (PBUH) was carrying stones (along) with the people of Mecca for (the building of) the Ka`ba wearing an Izar (waist-sheet cover), his uncle Al-`Abbas said to him, "O my nephew! (It would be better) if you take off your Izar and put it over your shoulders underneath the stones." So he took off his Izar and put it over his shoulders, but he fell unconscious and since then he had never been seen naked. ھم سے مطر بن فضل نے بیان کیا انھوں نے کھا ھم سے روح بن عبادھ نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے زکریابن اسحاق نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے عمرو بن دینار نے ، انھوں نے کھا کھ میں نے جابر بن عبداللھ انصاری رضی اللھ عنھما سے سنا ، وھ بیان کرتے تھے کھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم ( نبوت سے پھلے ) کعبھ کے لیے قریش کے ساتھ پتھر ڈھو رھے تھے ۔ اس وقت آپ تھبند باندھے ھوئے تھے ۔ آپ صلی اللھ علیھ وسلم کے چچا عباس نے کھا کھ بھتیجے کیوں نھیں تم تھبند کھول لیتے اور اسے پتھر کے نیچے اپنے کاندھے پر رکھ لیتے ( تاکھ تم پر آسانی ھو جائے ) حضرت جابر نے کھا کھ آپ صلی اللھ علیھ وسلم نے تھبند کھول لیا اور کاندھے پر رکھ لیا ۔ اسی وقت غشی کھا کر گر پڑے ۔ اس کے بعد آپ کبھی ننگے نھیں دیکھے گئے ۔ ( صلی اللھ علیھ وسلم )

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 8 Hadith no 364
Web reference: Sahih Bukhari Volume 1 Book 8 Hadith no 360


حَدَّثَنَا سُلَيْمَانُ بْنُ حَرْبٍ، قَالَ حَدَّثَنَا حَمَّادُ بْنُ زَيْدٍ، عَنْ أَيُّوبَ، عَنْ مُحَمَّدٍ، عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ، قَالَ قَامَ رَجُلٌ إِلَى النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم فَسَأَلَهُ عَنِ الصَّلاَةِ فِي الثَّوْبِ الْوَاحِدِ فَقَالَ ‏"‏ أَوَكُلُّكُمْ يَجِدُ ثَوْبَيْنِ ‏"‏‏.‏ ثُمَّ سَأَلَ رَجُلٌ عُمَرَ فَقَالَ إِذَا وَسَّعَ اللَّهُ فَأَوْسِعُوا، جَمَعَ رَجُلٌ عَلَيْهِ ثِيَابَهُ، صَلَّى رَجُلٌ فِي إِزَارٍ وَرِدَاءٍ، فِي إِزَارٍ وَقَمِيصٍ، فِي إِزَارٍ وَقَبَاءٍ، فِي سَرَاوِيلَ وَرِدَاءٍ، فِي سَرَاوِيلَ وَقَمِيصٍ، فِي سَرَاوِيلَ وَقَبَاءٍ، فِي تُبَّانٍ وَقَبَاءٍ، فِي تُبَّانٍ وَقَمِيصٍ ـ قَالَ وَأَحْسِبُهُ قَالَ ـ فِي تُبَّانٍ وَرِدَاءٍ‏.‏


Chapter: To offer Salat (prayer) with a shirt, trousers, a Tubban or a Qaba (an outer garment with full length sleeves)

Narrated Abu Huraira: A man stood up and asked the Prophet (PBUH) about praying in a single garment. The Prophet (PBUH) said, "Has every one of you two garments?" A man put a similar question to `Umar on which he replied, "When Allah makes you wealthier then you should clothe yourself properly during prayers. Otherwise one can pray with an Izar and a Rida' (a sheet covering the upper part of the body.) Izar and a shirt, Izar and a Qaba', trousers and a Rida, trousers and a shirt or trousers and a Qaba', Tubban and a Qaba' or Tubban and a shirt." (The narrator added, "I think that he also said a Tubban and a Rida. ") ھم سے سلیمان بن حرب نے بیان کیا کھ کھا ھم سے حماد بن زید نے ایوب کے واسطھ سے ، انھوں نے محمد سے ، انھوں نے حضرت ابوھریرھ رضی اللھ عنھ سے ، آپ نے فرمایا کھ ایک شخص نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم کے سامنے کھڑا ھوا اور اس نے صرف ایک کپڑا پھن کر نماز پڑھنے کے بارے میں سوال کیا ۔ آپ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ کیا تم سب ھی لوگوں کے پاس دو کپڑے ھو سکتے ھیں ؟ پھر ( یھی مسئلھ ) حضرت عمر رضی اللھ عنھ سے ایک شخص نے پوچھا تو انھوں نے کھا جب اللھ تعالیٰ نے تمھیں فراغت دی ھے تو تم بھی فراغت کے ساتھ رھو ۔ آدمی کو چاھیے کھ نماز میں اپنے کپڑے اکٹھا کر لے ، کوئی آدمی تھبند اور چادر میں نماز پڑھے ، کوئی تھبند اور قمیص ، کوئی تھبند اور قباء میں ، کوئی پاجامھ اور چادر میں ، کوئی پاجامھ اور قمیص میں ، کوئی پاجامھ اور قباء میں ، کوئی جانگیا اور قباء میں ، کوئی جانگیا اور قمیص میں نماز پڑھے ۔ ابوھریرھ رضی اللھ عنھ نے کھا کھ مجھے یاد آتا ھے کھ آپ نے یھ بھی کھا کھ کوئی جانگیا اور چادر میں نماز پڑھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 8 Hadith no 365
Web reference: Sahih Bukhari Volume 1 Book 8 Hadith no 361


حَدَّثَنَا عَاصِمُ بْنُ عَلِيٍّ، قَالَ حَدَّثَنَا ابْنُ أَبِي ذِئْبٍ، عَنِ الزُّهْرِيِّ، عَنْ سَالِمٍ، عَنِ ابْنِ عُمَرَ، قَالَ سَأَلَ رَجُلٌ رَسُولَ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم فَقَالَ مَا يَلْبَسُ الْمُحْرِمُ فَقَالَ ‏"‏ لاَ يَلْبَسُ الْقَمِيصَ وَلاَ السَّرَاوِيلَ وَلاَ الْبُرْنُسَ وَلاَ ثَوْبًا مَسَّهُ الزَّعْفَرَانُ وَلاَ وَرْسٌ، فَمَنْ لَمْ يَجِدِ النَّعْلَيْنِ فَلْيَلْبَسِ الْخُفَّيْنِ وَلْيَقْطَعْهُمَا حَتَّى يَكُونَا أَسْفَلَ مِنَ الْكَعْبَيْنِ ‏"‏‏.‏ وَعَنْ نَافِعٍ عَنِ ابْنِ عُمَرَ عَنِ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم مِثْلَهُ‏.‏

Narrated Ibn `Umar: A person asked Allah's Messenger (PBUH), "What should a Muhrim wear?" He replied, "He should not wear shirts, trousers, a burnus (a hooded cloak), or clothes which are stained with saffron or Wars (a kind of perfume). Whoever does not find a sandal to wear can wear Khuffs (socks made from thick fabric or leather), but these should be cut short so as not to cover the ankles. ھم سے عاصم بن علی نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے ابن ابی ذئب نے زھری کے حوالھ سے بیان کیا ، انھوں نے سالم سے ، انھوں نے ابن عمر رضی اللھ عنھما سے ، انھوں نے فرمایا کھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم سے ایک آدمی نے پوچھا کھ احرام باندھنے والے کو کیا پھننا چاھیے ۔ تو آپ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ نھ قمیص پھنے نھ پاجامھ ، نھ باران کوٹ اور نھ ایسا کپڑا جس میں زعفران لگا ھوا ھو اور نھ ورس لگا ھوا کپڑا ، پھر اگر کسی شخص کو جوتیاں نھ ملیں ( جن میں پاؤں کھلا رھتا ھو ) وھ موزے کاٹ کر پھن لے تاکھ وھ ٹخنوں سے نیچے ھو جائیں اور ابن ابی ذئب نے اس حدیث کو نافع سے بھی روایت کیا ، انھوں نے ایسا ھی آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم سے بھی روایت کیا ھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 8 Hadith no 366
Web reference: Sahih Bukhari Volume 1 Book 8 Hadith no 362



@2019 Copyrights: if you have any objection regarding any shared content on pdf9.com please click here.