Search hadith by
Hadith Book
Search Query
Search Language
English Arabic Urdu
Search Type Basic    Case Sensitive
 

Sahih Bukhari

Prophets

كتاب أحاديث الأنبياء

حَدَّثَنِي عَبْدُ اللَّهِ، حَدَّثَنَا وَهْبٌ، حَدَّثَنَا أَبِي، سَمِعْتُ يُونُسَ، عَنِ الزُّهْرِيِّ، عَنْ سَالِمٍ، أَنَّ ابْنَ عُمَرَ، قَالَ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ لاَ تَدْخُلُوا مَسَاكِنَ الَّذِينَ ظَلَمُوا أَنْفُسَهُمْ إِلاَّ أَنْ تَكُونُوا بَاكِينَ، أَنْ يُصِيبَكُمْ مِثْلُ مَا أَصَابَهُمْ ‏"‏‏.‏

Narrated Ibn `Umar: Allah's Messenger (PBUH) said, "Do not enter the ruined dwellings of those who were unjust to themselves unless (you enter) weeping, lest you should suffer the same punishment as was inflicted upon them." مجھ سے عبداللھ نے بیان کیا ‘ کھا ھم سے وھب نے بیان کیا ‘ ان سے ان کے والد نے بیان کیا ‘ انھوں نے یونس سے سنا ‘ انھوں نے زھری سے ‘ انھوں نے سالم سے اور ان سے حضرت ابن عمر رضی اللھ عنھما نے بیان کیا کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ جب تمھیں ان لوگوں کی بستی سے گزرنا پڑے جنھوں نے اپنی جانوں پر ظلم کیا تھا تو روتے ھوئے گزرو ۔ کھیں تمھیں بھی وھ عذاب آ نھ پکڑے جس میں یھ ظالم لوگ گرفتار کئے گئے تھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 60 Hadith no 3381
Web reference: Sahih Bukhari Volume 4 Book 55 Hadith no 564


حَدَّثَنَا يَحْيَى بْنُ بُكَيْرٍ، حَدَّثَنَا اللَّيْثُ، عَنْ عُقَيْلٍ، عَنِ ابْنِ شِهَابٍ، عَنْ عُرْوَةَ بْنِ الزُّبَيْرِ، أَنَّ زَيْنَبَ ابْنَةَ أَبِي سَلَمَةَ، حَدَّثَتْهُ عَنْ أُمِّ حَبِيبَةَ بِنْتِ أَبِي سُفْيَانَ، عَنْ زَيْنَبَ ابْنَةِ جَحْشٍ ـ رضى الله عنهن أَنَّ النَّبِيَّ صلى الله عليه وسلم دَخَلَ عَلَيْهَا فَزِعًا يَقُولُ ‏"‏ لاَ إِلَهَ إِلاَّ اللَّهُ، وَيْلٌ لِلْعَرَبِ مِنْ شَرٍّ قَدِ اقْتَرَبَ فُتِحَ الْيَوْمَ مِنْ رَدْمِ يَأْجُوجَ وَمَأْجُوجَ مِثْلُ هَذِهِ ‏"‏‏.‏ وَحَلَّقَ بِإِصْبَعِهِ الإِبْهَامِ وَالَّتِي تَلِيهَا‏.‏ قَالَتْ زَيْنَبُ ابْنَةُ جَحْشٍ فَقُلْتُ يَا رَسُولَ اللَّهِ أَنَهْلِكُ وَفِينَا الصَّالِحُونَ قَالَ ‏"‏ نَعَمْ، إِذَا كَثُرَ الْخُبْثُ ‏"‏‏.‏

Narrated Zainab bint Jahsh: That the Prophet (PBUH) once came to her in a state of fear and said, "None has the right to be worshipped but Allah. Woe unto the Arabs from a danger that has come near. An opening has been made in the wall of Gog and Magog like this," making a circle with his thumb and index finger. Zainab bint Jahsh said, "O Allah's Messenger (PBUH)! Shall we be destroyed even though there are pious persons among us?" He said, "Yes, when the evil person will increase." ھم سے یحییٰ بن بکیر نے بیان کیا ، کھا ھم سے لیث نے بیان کیا ، ان سے عقیل نے ، ان سے ابن شھاب نے ، ان سے عروھ بن زبیر نے اور ان سے حضرت زینب بنت ابی سلمھ رضی اللھ عنھا نے ، ان سے ام حبیبھ بنت ابی سفیان نے ، ان سے زینب بنت جحش رضی اللھ عنھا نے کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم ان کے یھاں تشریف لائے آپ کچھ گھبرائے ھوئے تھے ۔ پھر آپ نے فرمایا کھ اللھ کے سوا اور کوئی معبود نھیں ، ملک عرب میں اس برائی کی وجھ سے بربادی آ جائے گی جس کے دن قریب آنے کو ھیں ، آج یاجوج ماجوج نے دیوار میں اتنا سوراخ کر دیا ھے پھر آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے انگوٹھے اور اس کے قریب کی انگلی سے حلقھ بنا کر بتلایا ۔ ام المؤمنین حضرت زینب بنت جحش رضی اللھ عنھا نے بیان کیا کھ میں نے سوال کیا یا رسول اللھ ! کیا ھم اس کے باوجود ھلاک کر دئیے جائیں گے کھ ھم میں نیک لوگ بھی موجود ھوں گے ؟ آپ نے فرمایا کھ جب فسق و فجور بڑھ جائے گا ( تو یقیناً بربادی ھو گی ) ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 60 Hadith no 3346
Web reference: Sahih Bukhari Volume 4 Book 55 Hadith no 565


حَدَّثَنَا مُسْلِمُ بْنُ إِبْرَاهِيمَ، حَدَّثَنَا وُهَيْبٌ، حَدَّثَنَا ابْنُ طَاوُسٍ، عَنْ أَبِيهِ، عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ ـ رضى الله عنه ـ عَنِ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم قَالَ ‏"‏ فَتَحَ اللَّهُ مِنْ رَدْمِ يَأْجُوجَ وَمَأْجُوجَ مِثْلَ هَذَا ‏"‏‏.‏ وَعَقَدَ بِيَدِهِ تِسْعِينَ‏.‏

Narrated Abu Huraira: The Prophet (PBUH) said, "Allah has made an opening in the wall of the Gog and Magog (people) like this, and he made with his hand (with the help of his fingers). ھمیں مسلم بن ابراھیم نے بیان کیا ، کھا ھم سے وھیب نے ، ان سے ابن طاوس نے ، ان سے ان کے والد طاوس نے ، ان سے حضرت ابوھریرھ رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا اللھ پاک نے یاجوج ماجوج کی دیوار سے اتنا کھول دیا ھے ، پھر آپ نے اپنی انگلیوں سے نوے کا عدد بنا کر بتلایا ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 60 Hadith no 3347
Web reference: Sahih Bukhari Volume 4 Book 55 Hadith no 566


حَدَّثَنِي إِسْحَاقُ بْنُ نَصْرٍ، حَدَّثَنَا أَبُو أُسَامَةَ، عَنِ الأَعْمَشِ، حَدَّثَنَا أَبُو صَالِحٍ، عَنْ أَبِي سَعِيدٍ الْخُدْرِيِّ ـ رضى الله عنه ـ عَنِ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم قَالَ ‏"‏ يَقُولُ اللَّهُ تَعَالَى يَا آدَمُ‏.‏ فَيَقُولُ لَبَّيْكَ وَسَعْدَيْكَ وَالْخَيْرُ فِي يَدَيْكَ‏.‏ فَيَقُولُ أَخْرِجْ بَعْثَ النَّارِ‏.‏ قَالَ وَمَا بَعْثُ النَّارِ قَالَ مِنْ كُلِّ أَلْفٍ تِسْعَمِائَةٍ وَتِسْعَةً وَتِسْعِينَ، فَعِنْدَهُ يَشِيبُ الصَّغِيرُ، وَتَضَعُ كُلُّ ذَاتِ حَمْلٍ حَمْلَهَا، وَتَرَى النَّاسَ سُكَارَى، وَمَا هُمْ بِسُكَارَى، وَلَكِنَّ عَذَابَ اللَّهِ شَدِيدٌ ‏"‏‏.‏ قَالُوا يَا رَسُولَ اللَّهِ وَأَيُّنَا ذَلِكَ الْوَاحِدُ قَالَ ‏"‏ أَبْشِرُوا فَإِنَّ مِنْكُمْ رَجُلٌ، وَمِنْ يَأْجُوجَ وَمَأْجُوجَ أَلْفٌ ‏"‏‏.‏ ثُمَّ قَالَ ‏"‏ وَالَّذِي نَفْسِي بِيَدِهِ، إِنِّي أَرْجُو أَنْ تَكُونُوا رُبُعَ أَهْلِ الْجَنَّةِ ‏"‏‏.‏ فَكَبَّرْنَا‏.‏ فَقَالَ ‏"‏ أَرْجُو أَنْ تَكُونُوا ثُلُثَ أَهْلِ الْجَنَّةِ ‏"‏‏.‏ فَكَبَّرْنَا‏.‏ فَقَالَ ‏"‏ أَرْجُو أَنْ تَكُونُوا نِصْفَ أَهْلِ الْجَنَّةِ ‏"‏‏.‏ فَكَبَّرْنَا‏.‏ فَقَالَ ‏"‏ مَا أَنْتُمْ فِي النَّاسِ إِلاَّ كَالشَّعَرَةِ السَّوْدَاءِ فِي جِلْدِ ثَوْرٍ أَبْيَضَ، أَوْ كَشَعَرَةٍ بَيْضَاءَ فِي جِلْدِ ثَوْرٍ أَسْوَدَ ‏"‏‏.‏

Narrated Abu Sa`id Al-Khudri: The Prophet (PBUH) said, "Allah will say (on the Day of Resurrection), 'O Adam.' Adam will reply, 'Labbaik wa Sa`daik', and all the good is in Your Hand.' Allah will say: 'Bring out the people of the fire.' Adam will say: 'O Allah! How many are the people of the Fire?' Allah will reply: 'From every one thousand, take out nine-hundred-and ninety-nine.' At that time children will become hoary headed, every pregnant female will have a miscarriage, and one will see mankind as drunken, yet they will not be drunken, but dreadful will be the Wrath of Allah." The companions of the Prophet (PBUH) asked, "O Allah's Apostle! Who is that (excepted) one?" He said, "Rejoice with glad tidings; one person will be from you and one-thousand will be from Gog and Magog." The Prophet (PBUH) further said, "By Him in Whose Hands my life is, hope that you will be one-fourth of the people of Paradise." We shouted, "Allahu Akbar!" He added, "I hope that you will be one-third of the people of Paradise." We shouted, "Allahu Akbar!" He said, "I hope that you will be half of the people of Paradise." We shouted, "Allahu Akbar!" He further said, "You (Muslims) (compared with non Muslims) are like a black hair in the skin of a white ox or like a white hair in the skin of a black ox (i.e. your number is very small as compared with theirs). مجھ سے اسحاق بن نصر نے بیان کیا ، کھا ھم سے ابواسامھ نے بیان کیا ، ان سے اعمش نے ، ان سے ابوصالح نے اور ان سے حضرت ابو سعید خدری رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ اللھ تعالیٰ ( قیامت کے دن ) فرمائے گا ، اے آدم ! آدم علیھ السلام عرض کریں گے میں اطاعت کے لیے حاضر ھوں ، مستعد ھوں ، ساری بھلائیاں صرف تیرے ھی ھاتھ میں ھیں ۔ اللھ تعالیٰ فرمائے گا ، جھنم میں جانے والوں کو ( لوگوں میں سے الگ ) نکال لو ۔ حضرت آدم علیھ السلام عرض کریں گے ۔ اے اللھ ! جھنمیوں کی تعداد کتنی ھے ؟ اللھ تعالیٰ فرمائے گا کھ ھر ایک ھزار میں سے نو سو ننانوے ۔ اس وقت ( کی ھولناکی اور وحشت سے ) بچے بوڑھے ھو جائیں گے اور ھر حاملھ عورت اپنا حمل گرا دے گی ۔ اس وقت تم ( خوف و دھشت سے ) لوگوں کو مدھوشی کے عالم میں دیکھو گے ، حالانکھ وھ بیھوش نھ ھوں گے ۔ لیکن اللھ کا عذاب بڑا ھی سخت ھو گا ۔ صحابھ نے عرض کیا یا رسول اللھ ! وھ ایک شخص ھم میں سے کون ھو گا ؟ حضور صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ تمھیں بشارت ھو ، وھ ایک آدمی تم میں سے ھو گا اور ایک ھزار دوزخی یاجوج ماجوج کی قوم سے ھوں گے ۔ پھر حضور صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا اس ذات کی قسم جس کے ھاتھ میں میری جان ھے ، مجھے امید ھے کھ تم ( امت مسلمھ ) تمام جنت والوں کے ایک تھائی ھو گے ۔ پھر ھم نے اللھ اکبر کھا تو آپ نے فرمایا کھ مجھے امید ھے کھ تم تمام جنت والوں کے آدھے ھو گے پھر ھم نے اللھ اکبر کھا ، پھر آپ نے فرمایا کھ ( محشر میں ) تم لوگ تمام انسانوں کے مقابلے میں اتنے ھو گے جتنے کسی سفید بیل کے جسم پر ایک سیاھ بال ، یا جتنے کسی سیاھ بیل کے جسم پر ایک سفید بال ھوتا ھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 60 Hadith no 3348
Web reference: Sahih Bukhari Volume 4 Book 55 Hadith no 567


حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ كَثِيرٍ، أَخْبَرَنَا سُفْيَانُ، حَدَّثَنَا الْمُغِيرَةُ بْنُ النُّعْمَانِ، قَالَ حَدَّثَنِي سَعِيدُ بْنُ جُبَيْرٍ، عَنِ ابْنِ عَبَّاسٍ ـ رضى الله عنهما ـ عَنِ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم قَالَ ‏"‏ إِنَّكُمْ مَحْشُورُونَ حُفَاةً عُرَاةً غُرْلاً ـ ثُمَّ قَرَأَ – ‏{‏كَمَا بَدَأْنَا أَوَّلَ خَلْقٍ نُعِيدُهُ وَعْدًا عَلَيْنَا إِنَّا كُنَّا فَاعِلِينَ‏}‏ وَأَوَّلُ مَنْ يُكْسَى يَوْمَ الْقِيَامَةِ إِبْرَاهِيمُ، وَإِنَّ أُنَاسًا مِنْ أَصْحَابِي يُؤْخَذُ بِهِمْ ذَاتَ الشِّمَالِ فَأَقُولُ أَصْحَابِي أَصْحَابِي‏.‏ فَيَقُولُ، إِنَّهُمْ لَمْ يَزَالُوا مُرْتَدِّينَ عَلَى أَعْقَابِهِمْ مُنْذُ فَارَقْتَهُمْ‏.‏ فَأَقُولُ كَمَا قَالَ الْعَبْدُ الصَّالِحُ ‏{‏وَكُنْتُ عَلَيْهِمْ شَهِيدًا مَا دُمْتُ فِيهِمْ‏}‏ إِلَى قَوْلِهِ ‏{‏الْحَكِيمُ ‏}‏‏"‏

Narrated Ibn `Abbas: The Prophet (PBUH) said, "You will be gathered (on the Day of Judgment), bare-footed, naked and not circumcised." He then recited:--'As We began the first creation, We, shall repeat it: A Promise We have undertaken: Truly we shall do it.' (21.104) He added, "The first to be dressed on the Day of Resurrection, will be Abraham, and some of my companions will be taken towards the left side (i.e. to the (Hell) Fire), and I will say: 'My companions! My companions!' It will be said: 'They renegade from Islam after you left them.' Then I will say as the Pious slave of Allah (i.e. Jesus) said. 'And I was a witness Over them while I dwelt amongst them. When You took me up You were the Watcher over them, And You are a witness to all things. If You punish them. They are Your slaves And if You forgive them, Verily you, only You are the All-Mighty, the All-Wise." (5.120-121) ھم سے محمد بن کثیر نے بیان کیا ، کھا ھم کو سفیان ثوری نے خبر دی ، ان سے مغیرھ بن نعمان نے بیان کیا ، کھا کھ مجھ سے سعید بن جبیر نے بیان کیا اور ان سے ابن عباس رضی اللھ عنھما نے کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا تم لوگ حشر میں ننگے پاؤں ، ننگے جسم اور بن ختنھ اٹھائے جاؤ گے ۔ پھر آپ نے اس آیت کی تلاوت کی کھ ” جیسا کھ ھم نے پیدا کیا تھا پھلی مرتبھ ، ھم ایسے ھی لوٹائیں گے ۔ یھ ھماری طرف سے ایک وعدھ ھے جس کو ھم پورا کر کے رھیں گے ( سورۃ انبیاء ) اور انبیاء میں سب سے پھلے حضرت ابراھیم علیھ السلام کو کپڑا پھنایا جائے گا اور میرے اصحاب میں سے بعض کو جھنم کی طرف لے جایا جائے گا تو میں پکار اٹھوں گا کھ یھ تو میرے اصحاب ھیں ، میرے اصحاب ! لیکن مجھے بتایا جائے گا کھ آپ کی وفات کے بعد ان لوگوں نے پھر کفر اختیار کر لیا تھا ۔ اس وقت میں بھی وھی جملھ کھوں گا جو نیک بندے ( عیسیٰ علیھ السلام ) کھیں گے کھ ” جب تک میں ان کے ساتھ تھا ۔ ان پر نگران تھا ، اللھ تعالیٰ کے ارشاد الحکیم تک ۔ “

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 60 Hadith no 3349
Web reference: Sahih Bukhari Volume 4 Book 55 Hadith no 568


حَدَّثَنَا إِسْمَاعِيلُ بْنُ عَبْدِ اللَّهِ، قَالَ أَخْبَرَنِي أَخِي عَبْدُ الْحَمِيدِ، عَنِ ابْنِ أَبِي ذِئْبٍ، عَنْ سَعِيدٍ الْمَقْبُرِيِّ، عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ ـ رضى الله عنه ـ عَنِ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم قَالَ ‏"‏ يَلْقَى إِبْرَاهِيمُ أَبَاهُ آزَرَ يَوْمَ الْقِيَامَةِ، وَعَلَى وَجْهِ آزَرَ قَتَرَةٌ وَغَبَرَةٌ، فَيَقُولُ لَهُ إِبْرَاهِيمُ أَلَمْ أَقُلْ لَكَ لاَ تَعْصِنِي فَيَقُولُ أَبُوهُ فَالْيَوْمَ لاَ أَعْصِيكَ‏.‏ فَيَقُولُ إِبْرَاهِيمُ يَا رَبِّ، إِنَّكَ وَعَدْتَنِي أَنْ لاَ تُخْزِيَنِي يَوْمَ يُبْعَثُونَ، فَأَىُّ خِزْىٍ أَخْزَى مِنْ أَبِي الأَبْعَدِ فَيَقُولُ اللَّهُ تَعَالَى إِنِّي حَرَّمْتُ الْجَنَّةَ عَلَى الْكَافِرِينَ، ثُمَّ يُقَالُ يَا إِبْرَاهِيمُ مَا تَحْتَ رِجْلَيْكَ فَيَنْظُرُ فَإِذَا هُوَ بِذِيخٍ مُلْتَطِخٍ، فَيُؤْخَذُ بِقَوَائِمِهِ فَيُلْقَى فِي النَّارِ ‏"‏‏.‏

Narrated Abu Huraira: The Prophet (PBUH) said, "On the Day of Resurrection Abraham will meet his father Azar whose face will be dark and covered with dust.(The Prophet (PBUH) Abraham will say to him): 'Didn't I tell you not to disobey me?' His father will reply: 'Today I will not disobey you.' 'Abraham will say: 'O Lord! You promised me not to disgrace me on the Day of Resurrection; and what will be more disgraceful to me than cursing and dishonoring my father?' Then Allah will say (to him):' 'I have forbidden Paradise for the disbelievers." Then he will be addressed, 'O Abraham! Look! What is underneath your feet?' He will look and there he will see a Dhabh (an animal,) blood-stained, which will be caught by the legs and thrown in the (Hell) Fire." ھم سے اسماعیل بن عبداللھ نے بیان کیا کھ مجھے میرے بھائی عبدالحمید نے خبر دی ، انھیں ابن ابی ذئب نے ، انھیں سعید مقبری نے اور انھیں حضرت ابوھریرھ رضی اللھ عنھ نے کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ حضرت ابراھیم علیھ السلام اپنے والد آذر سے قیامت کے دن جب ملیں گے تو ان کے ( والد کے ) چھرے پر سیاھی اور غبار ھو گا ۔ حضرت ابراھیم علیھ السلام کھیں گے کھ کیا میں نے آپ سے نھیں کھا تھا کھ میری مخالفت نھ کیجئے ۔ وھ کھیں گے کھ آج میں آپ کی مخالفت نھیں کرتا ۔ حضرت ابراھیم علیھ السلام عرض کریں گے کھ اے رب ! تو نے وعدھ فرمایا تھا کھ مجھے قیامت کے دن رسوا نھیں کرے گا ۔ آج اس رسوائی سے بڑھ کر اور کون سی رسوائی ھو گی کھ میرے والد تیری رحمت سے سب سے زیادھ دور ھیں ۔ اللھ تعالیٰ فرمائے گا کھ میں نے جنت کافروں پر حرام قرار دی ھے ۔ پھر کھا جائے گا کھ اے ابراھیم ! تمھارے قدموں کے نیچے کیا چیز ھے ؟ وھ دیکھیں گے تو ایک ذبح کیا ھوا جانور خون میں لتھڑا ھوا وھاں پڑا ھو گا اور پھر اس کے پاؤں پکڑ کر اسے جھنم میں ڈال دیا جائے گا ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 60 Hadith no 3350
Web reference: Sahih Bukhari Volume 4 Book 55 Hadith no 569



Copyrights: if you have any objection regarding any shared content on pdf9.com please click here.