Search hadith by
Hadith Book
Search Query
Search Language
English Arabic Urdu
Search Type Basic    Case Sensitive
 

Sahih Bukhari

Prophets

كتاب أحاديث الأنبياء

حَدَّثَنِي عَبْدُ اللَّهِ بْنُ مُحَمَّدٍ، حَدَّثَنَا عَبْدُ الرَّزَّاقِ، عَنْ مَعْمَرٍ، عَنْ هَمَّامٍ، عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ ـ رضى الله عنه ـ عَنِ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم قَالَ ‏"‏ خَلَقَ اللَّهُ آدَمَ وَطُولُهُ سِتُّونَ ذِرَاعًا، ثُمَّ قَالَ اذْهَبْ فَسَلِّمْ عَلَى أُولَئِكَ مِنَ الْمَلاَئِكَةِ، فَاسْتَمِعْ مَا يُحَيُّونَكَ، تَحِيَّتُكَ وَتَحِيَّةُ ذُرِّيَّتِكَ‏.‏ فَقَالَ السَّلاَمُ عَلَيْكُمْ‏.‏ فَقَالُوا السَّلاَمُ عَلَيْكَ وَرَحْمَةُ اللَّهِ‏.‏ فَزَادُوهُ وَرَحْمَةُ اللَّهِ‏.‏ فَكُلُّ مَنْ يَدْخُلُ الْجَنَّةَ عَلَى صُورَةِ آدَمَ، فَلَمْ يَزَلِ الْخَلْقُ يَنْقُصُ حَتَّى الآنَ ‏"‏‏.‏

Narrated Abu Huraira: The Prophet (PBUH) said, "Allah created Adam, making him 60 cubits tall. When He created him, He said to him, "Go and greet that group of angels, and listen to their reply, for it will be your greeting (salutation) and the greeting (salutations of your offspring." So, Adam said (to the angels), As-Salamu Alaikum (i.e. Peace be upon you). The angels said, "As-salamu Alaika wa Rahmatu-l-lahi" (i.e. Peace and Allah's Mercy be upon you). Thus the angels added to Adam's salutation the expression, 'Wa Rahmatu-l-lahi,' Any person who will enter Paradise will resemble Adam (in appearance and figure). People have been decreasing in stature since Adam's creation. ھم سے عبداللھ بن محمد نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے عبدالرزاق نے بیان کیا ، ان سے معمر نے ، ان سے ھمام نے اور ان سے حضرت ابوھریرھ رضی اللھ عنھ نے کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا اللھ پاک نے آدم علیھ السلام کو پیدا کیا تو ان کو ساٹھ ھاتھ لمبا بنایا پھر فرمایا کھ جا اور ان ملائکھ کو سلام کر ، دیکھنا کن لفظوں میں وھ تمھارے سلام کا جواب دیتے ھیں کیونکھ وھی تمھارا اور تمھاری اولاد کا طریقھ سلام ھو گا ۔ آدم علیھ السلام ( گئے اور ) کھا ، السلام علیکم فرشتوں نے جواب دیا ، السلام علیک و رحمۃ اللھ ۔ انھوں نے و رحمۃ اللھ کا جملھ بڑھا دیا ، پس جو کوئی بھی جنت میں داخل ھو گا وھ آدم علیھ السلام کی شکل اور قامت پر داخل ھو گا ، آدم علیھ السلام کے بعد انسانوں میں اب تک قد چھوٹے ھوتے رھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 60 Hadith no 3326
Web reference: Sahih Bukhari Volume 4 Book 55 Hadith no 543


حَدَّثَنَا قُتَيْبَةُ بْنُ سَعِيدٍ، حَدَّثَنَا جَرِيرٌ، عَنْ عُمَارَةَ، عَنْ أَبِي زُرْعَةَ، عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ ـ رضى الله عنه ـ قَالَ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ إِنَّ أَوَّلَ زُمْرَةٍ يَدْخُلُونَ الْجَنَّةَ عَلَى صُورَةِ الْقَمَرِ لَيْلَةَ الْبَدْرِ، ثُمَّ الَّذِينَ يَلُونَهُمْ عَلَى أَشَدِّ كَوْكَبٍ دُرِّيٍّ فِي السَّمَاءِ إِضَاءَةً، لاَ يَبُولُونَ وَلاَ يَتَغَوَّطُونَ وَلاَ يَتْفِلُونَ وَلاَ يَمْتَخِطُونَ، أَمْشَاطُهُمُ الذَّهَبُ، وَرَشْحُهُمُ الْمِسْكُ، وَمَجَامِرُهُمُ الأَلُوَّةُ الأَنْجُوجُ عُودُ الطِّيبِ، وَأَزْوَاجُهُمُ الْحُورُ الْعِينُ، عَلَى خَلْقِ رَجُلٍ وَاحِدٍ عَلَى صُورَةِ أَبِيهِمْ آدَمَ، سِتُّونَ ذِرَاعًا فِي السَّمَاءِ ‏"‏‏.‏

Narrated Abu Huraira: Allah's Messenger (PBUH) said, "The first group of people who will enter Paradise, will be glittering like the full moon and those who will follow them, will glitter like the most brilliant star in the sky. They will not urinate, relieve nature, spit, or have any nasal secretions. Their combs will be of gold, and their sweat will smell like musk. The aloes-wood will be used in their centers. Their wives will be houris. All of them will look alike and will resemble their father Adam (in stature), sixty cubits tall." ھم سے قتیبھ بن سعید نے بیان کیا ، کھا ھم سے جریر نے بیان کیا ، ان سے عمارھ نے ان سے ابوزرعھ نے اور ان سے حضرت ابوھریرھ رضی اللھ عنھ نے کھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا ، سب سے پھلا گروھ جو جنت میں داخل ھو گا ان کی صورتیں ایسی روشن ھوں گی جیسے چودھویں کا چاند روشن ھوتا ھے ، پھر جو لوگ اس کے بعد داخل ھوں گے وھ آسمان کے سب سے زیادھ روشن ستارے کی طرح چمکتے ھوں گے ۔ نھ تو ان لوگوں کو پیشاب کی ضرورت ھو گی نھ پاخانھ کی ، نھ وھ تھوکیں گے نھ ناک سے آلائش نکالیں گے ۔ ان کے کنگھے سونے کے ھوں گے اور ان کا پسینھ مشک کی طرح ھو گا ۔ ان کی انگیٹھیوں میں خوشبودار عود جلتا ھو گا ، یھ نھایت پاکیزھ خوشبودار عود ھو گا ۔ ان کی بیویاں بڑی آنکھوں والی حوریں ھوں گی ۔ سب کی صورتیں ایک ھوں گی ۔ یعنی اپنے والد آدم علیھ السلام کے قد و قامت پر ساٹھ ساٹھ ھاتھ اونچے ھوں گے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 60 Hadith no 3327
Web reference: Sahih Bukhari Volume 4 Book 55 Hadith no 544


حَدَّثَنَا مُسَدَّدٌ، حَدَّثَنَا يَحْيَى، عَنْ هِشَامِ بْنِ عُرْوَةَ، عَنْ أَبِيهِ، عَنْ زَيْنَبَ بِنْتِ أَبِي سَلَمَةَ، عَنْ أُمِّ سَلَمَةَ، أَنَّ أُمَّ سُلَيْمٍ، قَالَتْ يَا رَسُولَ اللَّهِ، إِنَّ اللَّهَ لاَ يَسْتَحْيِي مِنَ الْحَقِّ، فَهَلْ عَلَى الْمَرْأَةِ الْغُسْلُ إِذَا احْتَلَمَتْ قَالَ ‏"‏ نَعَمْ، إِذَا رَأَتِ الْمَاءَ ‏"‏‏.‏ فَضَحِكَتْ أُمُّ سَلَمَةَ، فَقَالَتْ تَحْتَلِمُ الْمَرْأَةُ فَقَالَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ فَبِمَا يُشْبِهُ الْوَلَدُ ‏"‏‏.‏

Narrated Zainab bint Abi Salama: Um Salama said, "Um Sulaim said, 'O Allah's Messenger (PBUH)! Allah does not refrain from saying the truth! Is it obligatory for a woman to take a bath after she gets nocturnal discharge?' He said, 'Yes, if she notices the water (i.e. discharge).' Um Salama smiled and said, 'Does a woman get discharge?' Allah's Apostle said. 'Then why does a child resemble (its mother)?" ھم سے مسدد نے بیان کیا ، کھا ھم سے یحییٰ قطان نے بیان کیا ، ان سے ھشام بن عروھ نے ، ان سے ان کے باپ نے ، ان سے زینب بنت ابی سلمھ نے ، ان سے ( ام المؤمنین ) ام سلمھ رضی اللھ عنھما نے کھ ام سلیم رضی اللھ عنھا نے عرض کیا ، یا رسول اللھ ! اللھ تعالیٰ حق بات سے نھیں شرماتا ، تو کیا اگر عورت کو احتلام ھو تو اس پر بھی غسل ھو گا ؟ آپ نے فرمایا کھ ھاں بشرطیکھ وھ تری دیکھ لے ، ام المؤمنین ام سلمھ رضی اللھ عنھا کو اس بات پر ھنسی آ گئی اور فرمانے لگیں ، کیا عورت کو بھی احتلام ھوتا ھے ؟ آپ نے فرمایا ، ( اگر ایسا نھیں ھے ) تو پھر بچے میں ( ماں کی ) مشابھت کھاں سے آتی ھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 60 Hadith no 3328
Web reference: Sahih Bukhari Volume 4 Book 55 Hadith no 545


حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ سَلاَمٍ، أَخْبَرَنَا الْفَزَارِيُّ، عَنْ حُمَيْدٍ، عَنْ أَنَسٍ ـ رضى الله عنه ـ قَالَ بَلَغَ عَبْدَ اللَّهِ بْنَ سَلاَمٍ مَقْدَمُ رَسُولِ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم الْمَدِينَةَ، فَأَتَاهُ، فَقَالَ إِنِّي سَائِلُكَ عَنْ ثَلاَثٍ لاَ يَعْلَمُهُنَّ إِلاَّ نَبِيٌّ، ‏{‏قَالَ مَا‏}‏ أَوَّلُ أَشْرَاطِ السَّاعَةِ وَمَا أَوَّلُ طَعَامٍ يَأْكُلُهُ أَهْلُ الْجَنَّةِ وَمِنْ أَىِّ شَىْءٍ يَنْزِعُ الْوَلَدُ إِلَى أَبِيهِ وَمِنْ أَىِّ شَىْءٍ يَنْزِعُ إِلَى أَخْوَالِهِ فَقَالَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ خَبَّرَنِي بِهِنَّ آنِفًا جِبْرِيلُ ‏"‏‏.‏ قَالَ فَقَالَ عَبْدُ اللَّهِ ذَاكَ عَدُوُّ الْيَهُودِ مِنَ الْمَلاَئِكَةِ‏.‏ فَقَالَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ أَمَّا أَوَّلُ أَشْرَاطِ السَّاعَةِ فَنَارٌ تَحْشُرُ النَّاسَ مِنَ الْمَشْرِقِ إِلَى الْمَغْرِبِ‏.‏ وَأَمَّا أَوَّلُ طَعَامٍ يَأْكُلُهُ أَهْلُ الْجَنَّةِ فَزِيَادَةُ كَبِدِ حُوتٍ‏.‏ وَأَمَّا الشَّبَهُ فِي الْوَلَدِ فَإِنَّ الرَّجُلَ إِذَا غَشِيَ الْمَرْأَةَ فَسَبَقَهَا مَاؤُهُ كَانَ الشَّبَهُ لَهُ، وَإِذَا سَبَقَ مَاؤُهَا كَانَ الشَّبَهُ لَهَا ‏"‏‏.‏ قَالَ أَشْهَدُ أَنَّكَ رَسُولُ اللَّهِ‏.‏ ثُمَّ قَالَ يَا رَسُولَ اللَّهِ إِنَّ الْيَهُودَ قَوْمٌ بُهُتٌ، إِنْ عَلِمُوا بِإِسْلاَمِي قَبْلَ أَنْ تَسْأَلَهُمْ بَهَتُونِي عِنْدَكَ، فَجَاءَتِ الْيَهُودُ وَدَخَلَ عَبْدُ اللَّهِ الْبَيْتَ، فَقَالَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ أَىُّ رَجُلٍ فِيكُمْ عَبْدُ اللَّهِ بْنُ سَلاَمٍ ‏"‏‏.‏ قَالُوا أَعْلَمُنَا وَابْنُ أَعْلَمِنَا وَأَخْبَرُنَا وَابْنُ أَخْيَرِنَا‏.‏ فَقَالَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ أَفَرَأَيْتُمْ إِنْ أَسْلَمَ عَبْدُ اللَّهِ ‏"‏‏.‏ قَالُوا أَعَاذَهُ اللَّهُ مِنْ ذَلِكَ‏.‏ فَخَرَجَ عَبْدُ اللَّهِ إِلَيْهِمْ فَقَالَ أَشْهَدُ أَنْ لاَ إِلَهَ إِلاَّ اللَّهُ، وَأَشْهَدُ أَنَّ مُحَمَّدًا رَسُولُ اللَّهِ‏.‏ فَقَالُوا شَرُّنَا وَابْنُ شَرِّنَا‏.‏ وَوَقَعُوا فِيهِ‏.‏

Narrated Anas: When `Abdullah bin Salam heard the arrival of the Prophet (PBUH) at Medina, he came to him and said, "I am going to ask you about three things which nobody knows except a prophet: What is the first portent of the Hour? What will be the first meal taken by the people of Paradise? Why does a child resemble its father, and why does it resemble its maternal uncle" Allah's Messenger (PBUH) said, "Gabriel has just now told me of their answers." `Abdullah said, "He (i.e. Gabriel), from amongst all the angels, is the enemy of the Jews." Allah's Messenger (PBUH) said, "The first portent of the Hour will be a fire that will bring together the people from the east to the west; the first meal of the people of Paradise will be Extra-lobe (caudate lobe) of fish-liver. As for the resemblance of the child to its parents: If a man has sexual intercourse with his wife and gets discharge first, the child will resemble the father, and if the woman gets discharge first, the child will resemble her." On that `Abdullah bin Salam said, "I testify that you are the Messenger of Allah." `Abdullah bin Salam further said, "O Allah's Messenger (PBUH)! The Jews are liars, and if they should come to know about my conversion to Islam before you ask them (about me), they would tell a lie about me." The Jews came to Allah's Messenger (PBUH) and `Abdullah went inside the house. Allah's Apostle asked (the Jews), "What kind of man is `Abdullah bin Salam amongst you?" They replied, "He is the most learned person amongst us, and the best amongst us, and the son of the best amongst us." Allah's Messenger (PBUH) said, "What do you think if he embraces Islam (will you do as he does)?" The Jews said, "May Allah save him from it." Then `Abdullah bin Salam came out in front of them saying, "I testify that None has the right to be worshipped but Allah and that Muhammad is the Apostle of Allah." Thereupon they said, "He is the evilest among us, and the son of the evilest amongst us," and continued talking badly of him. ھم سے محمد بن سلام نے بیان کیا ، کھا ھم کو مروان فزاری نے خبر دی ۔ انھیں حمید نے اور ان سے حضرت انس رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ حضرت عبداللھ بن سلام رضی اللھ عنھ کو جب رسول کریم صلی اللھ علیھ وسلم کے مدینھ تشریف لانے کی خبر ملی تو وھ آپ کی خدمت میں آئے اور کھا کھ میں آپ سے تین چیزوں کے بارے میں پوچھوں گا ۔ جنھیں نبی کے سوا اور کوئی نھیں جانتا ۔ قیامت کی سب سے پھلی علامت کیا ھے ؟ وھ کون سا کھانا ھے جو سب سے پھلے جنتیوں کو کھانے کے لیے دیا جائے گا ؟ اور کس چیز کی وجھ سے بچھ اپنے باپ کے مشابھ ھوتا ھے ؟ آپ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ جبرائیل علیھ السلام نے ابھی ابھی مجھے آ کر اس کی خبر دی ھے ۔ اس پر حضرت عبداللھ رضی اللھ عنھ نے کھا کھ ملائکھ میں تو یھی تو یھودیوں کے دشمن ھیں ۔ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا ، قیامت کی سب سے پھلی علامت ایک آگ کی صورت میں ظاھر ھو گی جو لوگوں کو مشرق سے مغرب کی طرف ھانک لے جائے گی ، سب سے پھلا کھانا جو اھل جنت کی دعوت کے لیے پیش کیا جائے گا ، وھ مچھلی کی کلیجی پر جو ٹکڑا ٹکا رھتا ھے وھ ھو گا اور بچے کی مشابھت کا جھاں تک تعلق ھے تو جب مرد عورت کے قریب جاتا ھے اس وقت اگر مرد کی منی پھل کر جاتی ھے تو بچھ اسی کی شکل و صورت پر ھوتا ھے ۔ اگر عورت کی منی پھل کر جاتی ھے تو پھر بچھ عورت کی شکل و صورت پر ھوتا ھے ( یھ سن کر ) حضرت عبداللھ بن سلام رضی اللھ عنھ بول اٹھے ” میں گواھی دیتا ھوں کھ آپ اللھ کے رسول ھیں ۔ “ پھر عرض کیا ، یا رسول اللھ ! یھود انتھا کی جھوٹی قوم ھے ۔ اگر آپ کے دریافت کرنے سے پھلے میرے اسلام قبول کرنے کے بارے میں انھیں علم ھو گیا تو آپ صلی اللھ علیھ وسلم کے سامنے مجھ پر ھر طرح کی تھمتیں دھرنی شروع کر دیں گے ۔ چنانچھ کچھ یھودی آئے اور حضرت عبداللھ رضی اللھ عنھ کے گھر کے اندر چھپ کر بیٹھ گئے ۔ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے ان سے پوچھا تم لوگوں میں عبداللھ بن سلام کون صاحب ھیں ؟ سارے یھودی کھنے لگے وھ ھم میں سب سے بڑے عالم اور سب سے بڑے عالم کے صاحب زادے ھیں ۔ ھم میں سب سے زیادھ بھتر اور ھم میں سب سے بھتر کے صاحب زادے ھیں ۔ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے ان سے فرمایا ، اگر عبداللھ مسلمان ھو جائیں تو پھر تمھارا کیا خیال ھو گا ؟ انھوں نے کھا ، اللھ تعالیٰ انھیں اس سے محفوظ رکھے ۔ اتنے میں حضرت عبداللھ رضی اللھ عنھ باھر تشریف لائے اور کھا ، میں گواھی دیتا ھوں کھ اللھ کے سوا اور کوئی معبود نھیں اور میں گواھی دیتا ھوں کھ محمد اللھ کے سچے رسول ھیں ۔ اب وھ سب ان کے متعلق کھنے لگے کھ ھم میں سب سے بدترین اور سب سے بدترین کا بیٹا ھے ، وھیں وھ ان کی برائی کرنے لگے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 60 Hadith no 3329
Web reference: Sahih Bukhari Volume 4 Book 55 Hadith no 546


حَدَّثَنَا بِشْرُ بْنُ مُحَمَّدٍ، أَخْبَرَنَا عَبْدُ اللَّهِ، أَخْبَرَنَا مَعْمَرٌ، عَنْ هَمَّامٍ، عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ ـ رضى الله عنه ـ عَنِ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم نَحْوَهُ يَعْنِي ‏"‏ لَوْلاَ بَنُو إِسْرَائِيلَ لَمْ يَخْنَزِ اللَّحْمُ، وَلَوْلاَ حَوَّاءُ لَمْ تَخُنْ أُنْثَى زَوْجَهَا ‏"‏‏.‏

Narrated Abu Huraira: The Prophet (PBUH) said, "But for the Israelis, meat would not decay and but for Eve, wives would never betray their husbands." ھم سے بشر بن محمد نے بیان کیا ، کھا ھم کو عبداللھ نے خبر دی ، کھا ھم کو معمر نے خبر دی ، انھیں ھمام نے اور انھیں حضرت ابوھریرھ رضی اللھ عنھ نے ، انھوں نے نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم سے روایت کیا ( عبدالرزاق کی ) روایت کی طرح کھ اگر قوم بنی اسرائیل نھ ھوتی تو گوشت نھ سڑا کرتا اور اگر حواء نھ ھوتیں تو عورت اپنے شوھر سے دغا نھ کرتی ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 60 Hadith no 3330
Web reference: Sahih Bukhari Volume 4 Book 55 Hadith no 547


حَدَّثَنَا أَبُو كُرَيْبٍ، وَمُوسَى بْنُ حِزَامٍ، قَالاَ حَدَّثَنَا حُسَيْنُ بْنُ عَلِيٍّ، عَنْ زَائِدَةَ، عَنْ مَيْسَرَةَ الأَشْجَعِيِّ، عَنْ أَبِي حَازِمٍ، عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ ـ رضى الله عنه ـ قَالَ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ اسْتَوْصُوا بِالنِّسَاءِ، فَإِنَّ الْمَرْأَةَ خُلِقَتْ مِنْ ضِلَعٍ، وَإِنَّ أَعْوَجَ شَىْءٍ فِي الضِّلَعِ أَعْلاَهُ، فَإِنْ ذَهَبْتَ تُقِيمُهُ كَسَرْتَهُ، وَإِنْ تَرَكْتَهُ لَمْ يَزَلْ أَعْوَجَ، فَاسْتَوْصُوا بِالنِّسَاءِ ‏"‏‏.‏

Narrated Abu Huraira: Allah 's Apostle said, "Treat women nicely, for a women is created from a rib, and the most curved portion of the rib is its upper portion, so, if you should try to straighten it, it will break, but if you leave it as it is, it will remain crooked. So treat women nicely." ھم سے ابوکریب اور موسیٰ بن حزام نے بیان کیا ، کھا کھ ھم سے حسین بن علی نے بیان کیا ، ان سے زائدھ نے ، ان سے میسرھ اشجعی نے ، ان سے ابوحازم نے اور ان سے ابوھریرھ رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا ، عورتوں کے بارے میں میری وصیت کا ھمیشھ خیال رکھنا ، کیونکھ عورت پسلی سے پیدا کی گئی ھے ۔ پسلی میں بھی سب سے زیادھ ٹیڑھا اوپر کا حصھ ھوتا ھے ۔ اگر کوئی شخص اسے بالکل سیدھی کرنے کی کوشش کرے تو انجام کار توڑ کے رھے گا اور اگر اسے وھ یونھی چھوڑ دے گا تو پھر ھمیشھ ٹیڑھی ھی رھ جائے گی ۔ پس عورتوں کے بارے میں میری نصیحت مانو ، عورتوں سے اچھا سلوک کرو ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 60 Hadith no 3331
Web reference: Sahih Bukhari Volume 4 Book 55 Hadith no 548



Copyrights: if you have any objection regarding any shared content on pdf9.com please click here.