Search hadith by
Hadith Book
Search Query
Search Language
English Arabic Urdu
Search Type Basic    Case Sensitive
 

Sahih Bukhari

(Statements made under) Coercion

كتاب الإكراه

حَدَّثَنَا يَحْيَى بْنُ بُكَيْرٍ، حَدَّثَنَا اللَّيْثُ، عَنْ خَالِدِ بْنِ يَزِيدَ، عَنْ سَعِيدِ بْنِ أَبِي هِلاَلٍ، عَنْ هِلاَلِ بْنِ أُسَامَةَ، أَنَّ أَبَا سَلَمَةَ بْنَ عَبْدِ الرَّحْمَنِ، أَخْبَرَهُ عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ، أَنَّ النَّبِيَّ صلى الله عليه وسلم كَانَ يَدْعُو فِي الصَّلاَةِ ‏"‏ اللَّهُمَّ أَنْجِ عَيَّاشَ بْنَ أَبِي رَبِيعَةَ، وَسَلَمَةَ بْنَ هِشَامٍ، وَالْوَلِيدَ بْنَ الْوَلِيدِ، اللَّهُمَّ أَنْجِ الْمُسْتَضْعَفِينَ مِنَ الْمُؤْمِنِينَ، اللَّهُمَّ اشْدُدْ وَطْأَتَكَ عَلَى مُضَرَ، وَابْعَثْ عَلَيْهِمْ سِنِينَ كَسِنِي يُوسُفَ ‏"‏‏.‏

Narrated Abi Huraira: The Prophet (PBUH) used to invoke Allah in his prayer, "O Allah! Save `Aiyash bin Abi Rabi`a and Salama bin Hisham and Al-Walid bin Al-Walid; O Allah! Save the weak among the believers; O Allah! Be hard upon the tribe of Mudar and inflict years (of famine) upon them like the (famine) years of Joseph." ھم سے یحییٰ بن بکیر نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے لیث بن سعد نے بیان کیا ، ان سے خالف بن یزید نے بیان کیا ، ان سے سعید بن ابی ھلال بن اسامھ نے ، انھیں ابوسلمھ بن عبدالرحمٰن نے خبر دی اور انھیں حضرت ابوھریرھ رضی اللھ عنھ نے کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نماز میں دعا کرتے تھے کھ اے اللھ عیاش بن ابی ربیعھ ، سلمھ بن ھشام اور ولید بن الولید ( رضی اللھ عنھم ) کو نجات دے ۔ اے اللھ بے بس مسلمانوں کو نجات دے ۔ اے اللھ قبیلھ مضر کے لوگوں کو سختی کے ساتھ پیس ڈال اور ان پر ایسی قحط سالی بھیج جیسی حضرت یوسف علیھ السلام کے زمانھ میں آئی تھی ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 89 Hadith no 6940
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 85 Hadith no 73


حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ حَوْشَبٍ الطَّائِفِيُّ، حَدَّثَنَا عَبْدُ الْوَهَّابِ، حَدَّثَنَا أَيُّوبُ، عَنْ أَبِي قِلاَبَةَ، عَنْ أَنَسٍ ـ رضى الله عنه ـ قَالَ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ ثَلاَثٌ مَنْ كُنَّ فِيهِ وَجَدَ حَلاَوَةَ الإِيمَانِ أَنْ يَكُونَ اللَّهُ وَرَسُولُهُ أَحَبَّ إِلَيْهِ مِمَّا سِوَاهُمَا، وَأَنْ يُحِبَّ الْمَرْءَ لاَ يُحِبُّهُ إِلاَّ لِلَّهِ، وَأَنْ يَكْرَهَ أَنْ يَعُودَ فِي الْكُفْرِ، كَمَا يَكْرَهُ أَنْ يُقْذَفَ فِي النَّارِ ‏"‏‏.‏


Chapter: Whoever preferred to be beaten killed and humiliated rather than to revert to Kufr

Narrated Anas: Allah's Messenger (PBUH) said, "Whoever possesses the (following) three qualities will have the sweetness of faith (1): The one to whom Allah and His Apostle becomes dearer than anything else; (2) Who loves a person and he loves him only for Allah's Sake; (3) who hates to revert to atheism (disbelief) as he hates to be thrown into the Fire." ھم سے محمد بن عبداللھ بن حوشب الطائفی نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے عبدالوھاب ثقفی نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے ایوب نے بیان کیا ، ان سے ابوقلابھ نے بیان کیا ، اور ان سے حضرت انس رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا تین خصوصیتیں ایسی ھیں کھ جس میں پائی جائیں گی وھ ایمان کی شیرینی پالے گا اول یھ کھ اللھ اور اس کے رسول اسے سب سے زیادھ عزیز ھوں ۔ دوسرے یھ کھ وھ کسی شخص سے محبت صرف اللھ ھی کے لیے کرے تیسرے یھ کھ اسے کفر کی طرف لوٹ کر جانا اتنا ناگوار ھو جیسے آگ میں پھینک دیا جانا ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 89 Hadith no 6941
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 85 Hadith no 74


حَدَّثَنَا سَعِيدُ بْنُ سُلَيْمَانَ، حَدَّثَنَا عَبَّادٌ، عَنْ إِسْمَاعِيلَ، سَمِعْتُ قَيْسًا، سَمِعْتُ سَعِيدَ بْنَ زَيْدٍ، يَقُولُ لَقَدْ رَأَيْتُنِي وَإِنَّ عُمَرَ مُوثِقِي عَلَى الإِسْلاَمِ، وَلَوِ انْقَضَّ أُحُدٌ مِمَّا فَعَلْتُمْ بِعُثْمَانَ كَانَ مَحْقُوقًا أَنْ يَنْقَضَّ‏.‏

Narrated Qais: I heard Sa`id bin Zaid saying, "I have seen myself tied and forced by `Umar to leave Islam (Before `Umar himself embraced Islam). And if the mountain of Uhud were to collapse for the evil which you people had done to `Uthman, then Uhud would have the right to do so." (See Hadith No. 202, Vol. 5) ھم سے سعید بن سلیمان نے بیان کیا ، کھا ھم سے عباد نے ، ان سے اسماعیل نے ، انھوں نے قیس سے سنا ، انھوں نے سعید بن زید رضی اللھ عنھ سے سنا ، انھوں نے بیان کیا کھ میں نے اپنے آپ کو اس حال میں پایا کھ اسلام لانے کی وجھ سے ( مکھ معظمھ میں ) عمر رضی اللھ عنھ نے مجھے باندھ دیا تھا اور اب جو کچھ تم نے عثمان رضی اللھ عنھ کے ساتھ کیا ھے اس پر اگر احد پھاڑ ٹکڑے ٹکڑے ھو جائے تو اسے ایسا ھی ھونا چاھئے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 89 Hadith no 6942
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 85 Hadith no 75


حَدَّثَنَا مُسَدَّدٌ، حَدَّثَنَا يَحْيَى، عَنْ إِسْمَاعِيلَ، حَدَّثَنَا قَيْسٌ، عَنْ خَبَّابِ بْنِ الأَرَتِّ، قَالَ شَكَوْنَا إِلَى رَسُولِ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم وَهْوَ مُتَوَسِّدٌ بُرْدَةً لَهُ فِي ظِلِّ الْكَعْبَةِ فَقُلْنَا أَلاَ تَسْتَنْصِرُ لَنَا أَلاَ تَدْعُو لَنَا‏.‏ فَقَالَ ‏"‏ قَدْ كَانَ مَنْ قَبْلَكُمْ يُؤْخَذُ الرَّجُلُ فَيُحْفَرُ لَهُ فِي الأَرْضِ فَيُجْعَلُ فِيهَا، فَيُجَاءُ بِالْمِنْشَارِ فَيُوضَعُ عَلَى رَأْسِهِ فَيُجْعَلُ نِصْفَيْنِ، وَيُمَشَّطُ بِأَمْشَاطِ الْحَدِيدِ مَا دُونَ لَحْمِهِ وَعَظْمِهِ، فَمَا يَصُدُّهُ ذَلِكَ عَنْ دِينِهِ، وَاللَّهِ لَيَتِمَّنَّ هَذَا الأَمْرُ، حَتَّى يَسِيرَ الرَّاكِبُ مِنْ صَنْعَاءَ إِلَى حَضْرَمَوْتَ لاَ يَخَافُ إِلاَّ اللَّهَ وَالذِّئْبَ عَلَى غَنَمِهِ، وَلَكِنَّكُمْ تَسْتَعْجِلُونَ ‏"‏‏.‏

Narrated Khabbab bin Al-Art: We complained to Allah's Messenger (PBUH) (about our state) while he was leaning against his sheet cloak in the shade of the Ka`ba. We said, "Will you ask Allah to help us? Will you invoke Allah for us?" He said, "Among those who were before you a (believer) used to be seized and, a pit used to be dug for him and then he used to be placed in it. Then a saw used to be brought and put on his head which would be split into two halves. His flesh might be combed with iron combs and removed from his bones, yet, all that did not cause him to revert from his religion. By Allah! This religion (Islam) will be completed (and triumph) till a rider (traveler) goes from San`a' (the capital of Yemen) to Hadramout fearing nobody except Allah and the wolf lest it should trouble his sheep, but you are impatient." (See Hadith No. 191, Vol. 5) ھم سے مسدد نے بیان کیا ، کھا ھم سے یحییٰ نے بیان کیا ، ان سے اسماعیل نے ، کھا ھم سے قیس نے بیان کیا ، ان سے خباب بن الارت رضی اللھ عنھ نے کھ ھم نے رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم سے اپنا حال زار بیان کیا ۔ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم اس وقت کعبھ کے سایھ میں اپنی چادر پر بیٹھے ھوئے تھے ۔ ھم نے عرض کیا کیوں نھیں آپ ھمارے لیے اللھ تعالیٰ سے مددمانگتے اور اللھ تعالیٰ سے دعا کرتے ۔ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا ۔ تم سے پھلے بھت سے نبیوں اور ان پر ایمان لانے والوں کا حال یھ ھوا کھ ان میں سے کسی ایک کو پکڑ لیا جاتا اور گڑھا کھود کر اس میں انھیں ڈال دیا جاتا پھر آرا لایا جاتا اور ان کے سر پر رکھ کر دو ٹکڑے کر دئیے جاتے اور لوھے کے کنگھے ان کے گوشت اور ھڈیوں میں دھنسا دئیے جاتے لیکن یھ آزمائشیں بھی انھیں اپنے دین سے نھیں روک سکتی تھیں ۔ اللھ کی قسم اس اسلام کا کام مکمل ھو گا اور ایک سوار صنعاء سے حضرموت تک اکیلا سفر کرے گا اور اسے اللھ کے سوا اور کسی کا خوف نھیں ھو گا اور بکریوں پر سوا بھیڑئیے کے خوف کے ( اور کسی لوٹ وغیرھ کا کوئی ڈر نھ ھو گا ) لیکن تم لوگ جلدی کرتے ھو ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 89 Hadith no 6943
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 85 Hadith no 76


حَدَّثَنَا عَبْدُ الْعَزِيزِ بْنُ عَبْدِ اللَّهِ، حَدَّثَنَا اللَّيْثُ، عَنْ سَعِيدٍ الْمَقْبُرِيِّ، عَنْ أَبِيهِ، عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ ـ رضى الله عنه ـ قَالَ بَيْنَمَا نَحْنُ فِي الْمَسْجِدِ إِذْ خَرَجَ عَلَيْنَا رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم فَقَالَ ‏"‏ انْطَلِقُوا إِلَى يَهُودَ ‏"‏‏.‏ فَخَرَجْنَا مَعَهُ حَتَّى جِئْنَا بَيْتَ الْمِدْرَاسِ فَقَامَ النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم فَنَادَاهُمْ ‏"‏ يَا مَعْشَرَ يَهُودَ أَسْلِمُوا تَسْلَمُوا ‏"‏‏.‏ فَقَالُوا قَدْ بَلَّغْتَ يَا أَبَا الْقَاسِمِ‏.‏ فَقَالَ ‏"‏ ذَلِكَ أُرِيدُ ‏"‏، ثُمَّ قَالَهَا الثَّانِيَةَ‏.‏ فَقَالُوا قَدْ بَلَّغْتَ يَا أَبَا الْقَاسِمِ‏.‏ ثُمَّ قَالَ الثَّالِثَةَ فَقَالَ ‏"‏ اعْلَمُوا أَنَّ الأَرْضَ لِلَّهِ وَرَسُولِهِ، وَإِنِّي أُرِيدُ أَنْ أُجْلِيَكُمْ، فَمَنْ وَجَدَ مِنْكُمْ بِمَالِهِ شَيْئًا فَلْيَبِعْهُ، وَإِلاَّ فَاعْلَمُوا أَنَّمَا الأَرْضُ لِلَّهِ وَرَسُولِهِ ‏"‏‏.‏


Chapter: Selling under coercion or other circumstances to repay a debt or the like

Narrated Abu Huraira: While we were in the mosque, Allah's Messenger (PBUH) came out to us and said, "Let us proceed to the Jews." So we went along with him till we reached Bait-al-Midras (a place where the Torah used to be recited and all the Jews of the town used to gather). The Prophet (PBUH) stood up and addressed them, "O Assembly of Jews! Embrace Islam and you will be safe!" The Jews replied, "O Aba-l-Qasim! You have conveyed Allah's message to us." The Prophet (PBUH) said, "That is what I want (from you)." He repeated his first statement for the second time, and they said, "You have conveyed Allah's message, O Aba-l- Qasim." Then he said it for the third time and added, "You should Know that the earth belongs to Allah and His Apostle, and I want to exile you fro,,, this land, so whoever among you owns some property, can sell it, otherwise you should know that the Earth belongs to Allah and His Apostle." (See Hadith No. 392, Vol. 4) ھم سے عبدالعزیز بن عبداللھ نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے لیث بن سعد نے بیان کیا ، ان سے سعید مقبری نے بیان کیا ، ان سے ان کے والد نے بیان کیا اور ان سے حضرت ابوھریرھ رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ ھم مسجدمیں تھے کھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم ھمارے پاس تشریف لائے اور فرمایا کھ یھودیوں کے پاس چلو ۔ ھم آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم کے ساتھ روانھ ھوئے اور جب ھم ” بیت المدراس “ کے پاس پھنچے تو آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے انھیں آواز دی اے قوم یھود ! اسلام لاؤ تم محفوظ ھو جاؤ گے ۔ یھودیوں نے کھا ابوالقاسم ! آپ نے پھنچا دیا ۔ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ میرا بھی یھی مقصد ھے پھر آپ نے دوبارھ یھی فرمایا اور یھودیوں نے کھا کھ ابوالقاسم آپ نے پھنچا دیا آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے تیسری مرتبھ یھی فرمایا ۔ اور پھر فرمایا تمھیں معلوم ھونا چاھئے کھ زمین اللھ اور اس کے رسول کی ھے اور میں تمھیں جلاوطن کرتا ھوں ۔ پس تم میں سے جس کے پاس مال ھو اسے چاھئے کھ جلاوطن ھونے سے پھلے اسے بیچ دے ورنھ جان لو کھ زمین اللھ اور اس کے رسول کی ھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 89 Hadith no 6944
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 85 Hadith no 77


حَدَّثَنَا يَحْيَى بْنُ قَزَعَةَ، حَدَّثَنَا مَالِكٌ، عَنْ عَبْدِ الرَّحْمَنِ بْنِ الْقَاسِمِ، عَنْ أَبِيهِ، عَنْ عَبْدِ الرَّحْمَنِ، وَمُجَمِّعٍ، ابْنَىْ يَزِيدَ بْنِ جَارِيَةَ الأَنْصَارِيِّ عَنْ خَنْسَاءَ بِنْتِ خِذَامٍ الأَنْصَارِيَّةِ، أَنَّ أَبَاهَا، زَوَّجَهَا وَهْىَ ثَيِّبٌ، فَكَرِهَتْ ذَلِكَ، فَأَتَتِ النَّبِيَّ صلى الله عليه وسلم فَرَدَّ نِكَاحَهَا‏.‏

Narrated Khansa' bint Khidam Al-Ansariya: That her father gave her in marriage when she was a matron and she disliked that marriage. So she came and (complained) to the Prophets and he declared that marriage invalid. (See Hadith No. 69, Vol. 7) ھم سے یحییٰ بن قزعھ نے بیان کیا ، کھا ھم سے امام مالک نے بیان کیا ، ان سے عبدالرحمٰن بن القاسم نے ، ان سے ان کے والد نے اور ان سے یزید بن حارثھ انصاری کے دو صاحبزادوں عبدالرحمٰن اور مجمع نے اور ان سے خنساء بنت خذام انصاریھ نے کھ ان کے والد نے ان کی شادی کر دی ان کی ایک شادی اس سے پھلے ھو چکی تھی ( اور اب بیوھ تھیں ) اس نکاح کو انھوں نے ناپسند کیا اور نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم کی خدمت میں حاضر ھو کر ( اپنی ناپسندیدگی ظاھر کر دی ) تو آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے اس نکاح کو فسخ کر دیا ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 89 Hadith no 6945
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 85 Hadith no 78



Copyrights: if you have any objection regarding any shared content on pdf9.com please click here.