Search hadith by
Hadith Book
Search Query
Search Language
English Arabic Urdu
Search Type Basic    Case Sensitive
 

Sahih Bukhari

To make the Heart Tender (Ar-Riqaq)

كتاب الرقاق

حَدَّثَنَا الْمَكِّيُّ بْنُ إِبْرَاهِيمَ، أَخْبَرَنَا عَبْدُ اللَّهِ بْنُ سَعِيدٍ ـ هُوَ ابْنُ أَبِي هِنْدٍ ـ عَنْ أَبِيهِ، عَنِ ابْنِ عَبَّاسٍ ـ رضى الله عنهما ـ قَالَ قَالَ النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ نِعْمَتَانِ مَغْبُونٌ فِيهِمَا كَثِيرٌ مِنَ النَّاسِ، الصِّحَّةُ وَالْفَرَاغُ ‏"‏‏.‏قَالَ عَبَّاسٌ الْعَنْبَرِيُّ حَدَّثَنَا صَفْوَانُ بْنُ عِيسَى، عَنْ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ سَعِيدِ بْنِ أَبِي هِنْدٍ، عَنْ أَبِيهِ، سَمِعْتُ ابْنَ عَبَّاسٍ، عَنِ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم مِثْلَهُ‏.‏


Chapter: Health and leisure

Narrated Ibn `Abbas: The Prophet (PBUH) said, "There are two blessings which many people lose: (They are) Health and free time for doing good." ھم سے مکی بن ابراھیم نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم کو عبداللھ بن سعید نے خبر دی ، وھ ابو ھندکے صاحب زادے ھیں ، انھیں ان کے والد نے اور ان سے حضرت عبداللھ بن عباس رضی اللھ عنھما نے بیان کیا کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا دو نعمتیں ایسی ھیں کھ اکثر لوگ ان کی قدر نھیں کرتے ، صحت اور فراغت ۔ عباس عنبری نے بیان کیا کھ ھم سے صفوان بن عیسیٰ نے بیان کیا ، ان سے عبداللھ بن ابی ھند نے ، ان سے ان کے والد نے کھ میں نے عبداللھ بن عباس رضی اللھ عنھما سے سنا ، انھوں نے نبی کریم صلی اللھ علیھ و سلم سے اسی حدیث کی طرح ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 81 Hadith no 6412
Web reference: Sahih Bukhari Volume 8 Book 76 Hadith no 421


حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ بَشَّارٍ، حَدَّثَنَا غُنْدَرٌ، حَدَّثَنَا شُعْبَةُ، عَنْ مُعَاوِيَةَ بْنِ قُرَّةَ، عَنْ أَنَسٍ، عَنِ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم قَالَ ‏"‏ اللَّهُمَّ لاَ عَيْشَ إِلاَّ عَيْشُ الآخِرَة، فَأَصْلِحِ الأَنْصَارَ وَالْمُهَاجِرَة ‏"‏‏.‏

Narrated Anas: The Prophet (PBUH) said, "O Allah! There is no life worth living except the life of the Hereafter, so (please) make righteous the Ansar and the Emigrants." ھم سے محمد بن بشار نے بیان کیا ، کھا ھم سے غندر نے بیان کیا ، کھا ھم سے شعبھ نے بیان کیا ، ان سے معاویھ بن قرھ نے اور ان سے حضرت انس رضی اللھ عنھ نے کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا اللهم لا عيش إلا عيش الآخره ، ‏‏‏‏ فأصلح الأنصار والمهاجره ” اے اللھ ! آخرت کی زندگی کے سوا اور کوئی زندگی نھیں ۔ پس تو انصار و مھاجرین میں صلاح کو باقی رکھ ۔ “

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 81 Hadith no 6413
Web reference: Sahih Bukhari Volume 8 Book 76 Hadith no 422


حَدَّثَنِي أَحْمَدُ بْنُ الْمِقْدَامِ، حَدَّثَنَا الْفُضَيْلُ بْنُ سُلَيْمَانَ، حَدَّثَنَا أَبُو حَازِمٍ، حَدَّثَنَا سَهْلُ بْنُ سَعْدٍ السَّاعِدِيُّ، كُنَّا مَعَ رَسُولِ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم فِي الْخَنْدَقِ وَهْوَ يَحْفِرُ وَنَحْنُ نَنْقُلُ التُّرَابَ وَيَمُرُّ بِنَا فَقَالَ ‏"‏ اللَّهُمَّ لاَ عَيْشَ إِلاَّ عَيْشُ الآخِرَهْ، فَاغْفِرْ لِلأَنْصَارِ وَالْمُهَاجِرَهْ ‏"‏‏.‏ تَابَعَهُ سَهْلُ بْنُ سَعْدٍ عَنِ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم مِثْلَهُ‏.‏

Narrated Sahl bin Sa`d As-Sa`idi: We were in the company of Allah's Messenger (PBUH) in (the battle of) Al-Khandaq, and he was digging the trench while we were carrying the earth away. He looked at us and said, "O Allah! There is no life worth living except the life of the Hereafter, so (please) forgive the Ansar and the Emigrants." ھم سے احمدبن مقدام نے بیان کیا ، کھا ھم سے فضیل بن سلیمان نے بیان کیا ، کھا ھم سے ابوحازم نے بیان کیا ، ان سے حضرت سھل بن سعد ساعدی رضی اللھ عنھ نے کھ ھم رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم کے ساتھ غزوھ خندق کے موقع پر موجو د تھے ، آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم بھی خندق کھودتے جاتے تھے اور ھم مٹی کو اٹھاتے جاتے اور آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم ھمارے قریب سے گزر تے ھوئے فرماتے ” اے اللھ ! زندگی تو بس آخرت ھی کی زندگی ھے ، پس تو انصار و مھاجرین کی مغفرت کر ۔ “ اس روایت کی متابعت سھل بن سعد رضی اللھ عنھ نے بھی نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم سے کی ھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 81 Hadith no 6414
Web reference: Sahih Bukhari Volume 8 Book 76 Hadith no 423


حَدَّثَنَا عَبْدُ اللَّهِ بْنُ مَسْلَمَةَ، حَدَّثَنَا عَبْدُ الْعَزِيزِ بْنُ أَبِي حَازِمٍ، عَنْ أَبِيهِ، عَنْ سَهْلٍ، قَالَ سَمِعْتُ النَّبِيَّ صلى الله عليه وسلم يَقُولُ ‏"‏ مَوْضِعُ سَوْطٍ فِي الْجَنَّةِ خَيْرٌ مِنَ الدُّنْيَا وَمَا فِيهَا، وَلَغَدْوَةٌ فِي سَبِيلِ اللَّهِ أَوْ رَوْحَةٌ خَيْرٌ مِنَ الدُّنْيَا وَمَا فِيهَا ‏"‏‏.‏

Narrated Sahl: I heard the Prophet (PBUH) saying, "A (small) place equal to an area occupied by a whip in Paradise is better than the (whole) world and whatever is in it; and an undertaking (journey) in the forenoon or in the afternoon for Allah's Cause, is better than the whole world and whatever is in it." ھم سے عبداللھ بن مسلمھ نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے عبد العزیز بن ابی حازم نے بیان کیا ، ان سے ان کے والد نے اور ان سے سھل رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ میں نے آپ کو یھ فرماتے ھوئے سنا کھ جنت میں ایک کوڑے جتنی جگھ دنیا اور اس میں جو کچھ ھے سب سے بھتر ھے اور اللھ کے راستے میں صبح کو یا شام کو تھوڑا سا چلنا بھی الدنيا وما فيها سے بھتر ھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 81 Hadith no 6415
Web reference: Sahih Bukhari Volume 8 Book 76 Hadith no 424


حَدَّثَنَا عَلِيُّ بْنُ عَبْدِ اللَّهِ، حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ عَبْدِ الرَّحْمَنِ أَبُو الْمُنْذِرِ الطُّفَاوِيُّ، عَنْ سُلَيْمَانَ الأَعْمَشِ، قَالَ حَدَّثَنِي مُجَاهِدٌ، عَنْ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ عُمَرَ ـ رضى الله عنهما ـ قَالَ أَخَذَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم بِمَنْكِبِي فَقَالَ ‏"‏ كُنْ فِي الدُّنْيَا كَأَنَّكَ غَرِيبٌ، أَوْ عَابِرُ سَبِيلٍ ‏"‏‏.‏ وَكَانَ ابْنُ عُمَرَ يَقُولُ إِذَا أَمْسَيْتَ فَلاَ تَنْتَظِرِ الصَّبَاحَ، وَإِذَا أَصْبَحْتَ فَلاَ تَنْتَظِرِ الْمَسَاءَ، وَخُذْ مِنْ صِحَّتِكَ لِمَرَضِكَ، وَمِنْ حَيَاتِكَ لِمَوْتِكَ‏.‏


Chapter: "Be in this world as if you were a stranger."

Narrated Mujahid: `Abdullah bin `Umar said, "Allah's Messenger (PBUH) took hold of my shoulder and said, 'Be in this world as if you were a stranger or a traveler." The sub-narrator added: Ibn `Umar used to say, "If you survive till the evening, do not expect to be alive in the morning, and if you survive till the morning, do not expect to be alive in the evening, and take from your health for your sickness, and (take) from your life for your death." ھم سے علی بن عبداللھ نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے محمد بن عبدالرحمٰن ابومنذر طفاوی نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے سلیمان اعمش نے بیان کیا ، انھوں نے کھا مجھ سے مجاھد نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے حضرت عبداللھ بن عمر رضی اللھ عنھما نے بیان کیا کھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم نے میرا شانھ پکڑ کر فرمایا ” دنیا میں اس طرح ھو جا جیسے تو مسافر یا راستھ چلنے والا ھو “ حضرت عبداللھ بن عمر رضی اللھ عنھما فرمایا کرتے تھے شام ھو جائے تو صبح کے منتظر نھ رھو اورصبح کے وقت شام کے منتظر نھ رھو ۔ اپنی صحت کو مرض سے پھلے غنیمت جانو اور زندگی کوموت سے پھلے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 81 Hadith no 6416
Web reference: Sahih Bukhari Volume 8 Book 76 Hadith no 425


حَدَّثَنَا صَدَقَةُ بْنُ الْفَضْلِ، أَخْبَرَنَا يَحْيَى، عَنْ سُفْيَانَ، قَالَ حَدَّثَنِي أَبِي، عَنْ مُنْذِرٍ، عَنْ رَبِيعِ بْنِ خُثَيْمٍ، عَنْ عَبْدِ اللَّهِ ـ رضى الله عنه ـ قَالَ خَطَّ النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم خَطًّا مُرَبَّعًا، وَخَطَّ خَطًّا فِي الْوَسَطِ خَارِجًا مِنْهُ، وَخَطَّ خُطُطًا صِغَارًا إِلَى هَذَا الَّذِي فِي الْوَسَطِ، مِنْ جَانِبِهِ الَّذِي فِي الْوَسَطِ وَقَالَ ‏"‏ هَذَا الإِنْسَانُ، وَهَذَا أَجَلُهُ مُحِيطٌ بِهِ ـ أَوْ قَدْ أَحَاطَ بِهِ ـ وَهَذَا الَّذِي هُوَ خَارِجٌ أَمَلُهُ، وَهَذِهِ الْخُطُطُ الصِّغَارُ الأَعْرَاضُ، فَإِنْ أَخْطَأَهُ هَذَا نَهَشَهُ هَذَا، وَإِنْ أَخْطَأَهُ هَذَا نَهَشَهُ هَذَا ‏"‏‏.‏

Narrated `Abdullah: The Prophet (PBUH) drew a square and then drew a line in the middle of it and let it extend outside the square and then drew several small lines attached to that central line, and said, "This is the human being, and this, (the square) in his lease of life, encircles him from all sides (or has encircled him), and this (line), which is outside (the square), is his hope, and these small lines are the calamities and troubles (which may befall him), and if one misses him, an-other will snap (i.e. overtake) him, and if the other misses him, a third will snap (i.e. overtake) him." ھم سے صدقھ بن فضل نے بیان کیا ، کھا ھم کو یحییٰ قطان نے خبر دی ، ان سے سفیان ثوری نے بیان کیا ، کھا کھ مجھ سے میرے والد نے بیان کیا ، ان سے منذر بن یعلیٰ نے ، ان سے ربیع بن خثیم نے اور ان سے عبداللھ بن مسعود رضی اللھ عنھما نے بیان کیا کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے چوکھٹا خط کھینچا ۔ پھر اس کے درمیان ایک خط کھینچا جو چوکھٹے کے درمیان میں تھا ۔ اس کے بعد درمیان والے خط کے اس حصے میں جو چوکھٹے کے درمیان میں تھا چھوٹے چھوٹے بھت سے خطوط کھینچے اور پھر فرمایا کھ یھ انسان ھے اور یھ اس کی موت ھے جو اسے گھیر ے ھوئے ھے اور یھ جو ( بیچ کا ) خط باھر نکلا ھوا ھے وھ اس کی امید ھے اور چھوٹے چھوٹے خطوط اس کی دنیا وی مشکلات ھیں ۔ پس انسان جب ایک ( مشکل ) سے بچ کر نکلتا ھے تو دوسری میں پھنس جاتا ھے اور دوسری سے نکلتا ھے تو تیسری میں پھنس جاتا ھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 81 Hadith no 6417
Web reference: Sahih Bukhari Volume 8 Book 76 Hadith no 426



Copyrights: if you have any objection regarding any shared content on pdf9.com please click here.