Search hadith by
Hadith Book
Search Query
Search Language
English Arabic Urdu
Search Type Basic    Case Sensitive
 

Sahih Bukhari

Wedlock, Marriage (Nikaah)

كتاب النكاح

حَدَّثَنَا قُتَيْبَةُ، حَدَّثَنَا اللَّيْثُ، عَنِ ابْنِ أَبِي مُلَيْكَةَ، عَنِ الْمِسْوَرِ بْنِ مَخْرَمَةَ، قَالَ سَمِعْتُ رَسُولَ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم يَقُولُ وَهْوَ عَلَى الْمِنْبَرِ ‏"‏ إِنَّ بَنِي هِشَامِ بْنِ الْمُغِيرَةِ اسْتَأْذَنُوا فِي أَنْ يُنْكِحُوا ابْنَتَهُمْ عَلِيَّ بْنَ أَبِي طَالِبٍ فَلاَ آذَنُ، ثُمَّ لاَ آذَنُ، ثُمَّ لاَ آذَنُ، إِلاَّ أَنْ يُرِيدَ ابْنُ أَبِي طَالِبٍ أَنْ يُطَلِّقَ ابْنَتِي وَيَنْكِحَ ابْنَتَهُمْ، فَإِنَّمَا هِيَ بَضْعَةٌ مِنِّي، يُرِيبُنِي مَا أَرَابَهَا وَيُؤْذِينِي مَا آذَاهَا ‏"‏‏.‏ هَكَذَا قَالَ‏.‏


Chapter: Attempt to prevent the daughter's jealousy

Narrated Al-Miswar bin Makhrama: I heard Allah's Messenger (PBUH) who was on the pulpit, saying, "Banu Hisham bin Al-Mughira have requested me to allow them to marry their daughter to `Ali bin Abu Talib, but I don't give permission, and will not give permission unless `Ali bin Abi Talib divorces my daughter in order to marry their daughter, because Fatima is a part of my body, and I hate what she hates to see, and what hurts her, hurts me." ھم سے قتیبھ بن سعید نے بیان کیا ، کھا ھم سے لیث بن سعد نے بیان کیا ، ان سے ابن ابی ملیکھ نے اور ان سے مسور بن مخرمھ رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ میں نے رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم سے سنا ، آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم ممبر پر فرما رھے تھے کھ ھشام بن مغیرھ جو ابوجھل کا باپ تھا اس کی اولاد ( حارث بن ھشام اورسلم بن ھشام ) نے اپنی بیٹی کا نکاح علی بن ابی طالب سے کرنے کی مجھ سے اجازت مانگی ھے لیکن میں انھیں ھرگز اجازت نھیں دوں گا یقیناً میں اس کی اجازت نھیں دوں گا ھرگز میں اس کی اجازت نھیں دوں گا ۔ البتھ اگر علی بن ابی طالب میری بیٹی کو طلاق دے کر ان کی بیٹی سے نکاح کرنا چاھیں ( تو میں اس میں رکاوٹ نھیں بنوں گا ) کیونکھ وھ ( فاطمھ رضی اللھ عنھا ) میرے جگر کا ایک ٹکڑا ھے جو اس کو برا لگے وھ مجھ کو بھی برا لگتا ھے اور جس چیز سے اسے تکلیف پھنچتی ھے اس سے مجھے بھی تکلیف پھنچتی ھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 67 Hadith no 5230
Web reference: Sahih Bukhari Volume 7 Book 62 Hadith no 157


حَدَّثَنَا حَفْصُ بْنُ عُمَرَ الْحَوْضِيُّ، حَدَّثَنَا هِشَامٌ، عَنْ قَتَادَةَ، عَنْ أَنَسٍ ـ رضى الله عنه ـ قَالَ لأُحَدِّثَنَّكُمْ حَدِيثًا سَمِعْتُهُ مِنْ رَسُولِ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم لاَ يُحَدِّثُكُمْ بِهِ أَحَدٌ غَيْرِي، سَمِعْتُ رَسُولَ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم يَقُولُ ‏"‏ إِنَّ مِنْ أَشْرَاطِ السَّاعَةِ أَنْ يُرْفَعَ الْعِلْمُ، وَيَكْثُرَ الْجَهْلُ وَيَكْثُرَ الزِّنَا، وَيَكْثُرَ شُرْبُ الْخَمْرِ، وَيَقِلَّ الرِّجَالُ، وَيَكْثُرَ النِّسَاءُ حَتَّى يَكُونَ لِخَمْسِينَ امْرَأَةً الْقَيِّمُ الْوَاحِدُ ‏"‏‏.‏

Narrated Anas: I will narrate to you a Habith I heard from Allah's Messenger (PBUH) and none other than I will tell you of it. I heard Allah's Messenger (PBUH) saying, "From among the portents of the Hour are the following: Religious knowledge will be taken away; General ignorance (in religious matters) will increase; illegal Sexual intercourse will prevail: Drinking of alcoholic drinks will prevail. Men will decrease in number, and women will increase in number, so much so that fifty women will be looked after by one man." ھم سے حفص بن عمر حوضی نے بیان کیا ، کھا ھم سے ھشام بن عروھ نے بیان کیا ، ان سے قتادھ نے اور ان سے حضرت انس رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ میں تم سے وھ حدیث بیان کروں گا جو میں نے رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم سے سنی ھے ، میرے سوا یھ حدیث تم سے کوئی اور نھیں بیان کرنے والا ھے ۔ میں نے حضور اکرم صلی اللھ علیھ وسلم سے سنا ، آپ فرما رھے تھے کھ قیامت کی نشانیوں میں سے یھ بھی ھے کھ قرآن و حدیث کا علم اٹھا لیا جائے گا اور جھالت بڑھ جائے گی ۔ زنا کی کثرت ھو جائے گی اور شراب لوگ زیادھ پینے لگیں گے ۔ مرد کم ھو جائیں گے اور عورتوں کی تعداد زیادھ ھو جائے گی ۔ حالت یھ ھو جائے گی کھ پچاس پچاس عورتوں کا سنبھالنے والا ( خبر گیر ) ایک مرد ھو گا ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 67 Hadith no 5231
Web reference: Sahih Bukhari Volume 7 Book 62 Hadith no 158


حَدَّثَنَا قُتَيْبَةُ بْنُ سَعِيدٍ، حَدَّثَنَا لَيْثٌ، عَنْ يَزِيدَ بْنِ أَبِي حَبِيبٍ، عَنْ أَبِي الْخَيْرِ، عَنْ عُقْبَةَ بْنِ عَامِرٍ، أَنَّ رَسُولَ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم قَالَ ‏"‏ إِيَّاكُمْ وَالدُّخُولَ عَلَى النِّسَاءِ ‏"‏‏.‏ فَقَالَ رَجُلٌ مِنَ الأَنْصَارِ يَا رَسُولَ اللَّهِ أَفَرَأَيْتَ الْحَمْوَ‏.‏ قَالَ ‏"‏ الْحَمْوُ الْمَوْتُ ‏"‏‏.‏


Chapter: A man should not stay with a woman in seclusion

Narrated `Uqba bin 'Amir: Allah's Messenger (PBUH) said, "Beware of entering upon the ladies." A man from the Ansar said, "Allah's Apostle! What about Al-Hamu the in-laws of the wife (the brothers of her husband or his nephews etc.)?" The Prophet (PBUH) replied: The in-laws of the wife are death itself. ھم سے قتیبھ بن سعید نے بیان کیا ، کھا ھم سے لیث بن سعد نے بیان کیا ، ان سے یزید بن ابی حبیب نے ، ان سے ابو الخیر نے اور ان سے عقبھ بن عامر نے کھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا عورتوں میں جانے سے بچتے رھو اس پر قبیلھ انصار کے ایک صحابی نے عرض کیا یا رسول اللھ ! دیور کے متعلق آپ کی کیا رائے ھے ؟ ( وھ اپنی بھاوج کے ساتھ جا سکتا ھے یا نھیں ؟ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ دیور یا ( جیٹھ ) کا جانا ھی تو ھلاکت ھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 67 Hadith no 5232
Web reference: Sahih Bukhari Volume 7 Book 62 Hadith no 159


حَدَّثَنَا عَلِيُّ بْنُ عَبْدِ اللَّهِ، حَدَّثَنَا سُفْيَانُ، حَدَّثَنَا عَمْرٌو، عَنْ أَبِي مَعْبَدٍ، عَنِ ابْنِ عَبَّاسٍ، عَنِ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم قَالَ ‏"‏ لاَ يَخْلُوَنَّ رَجُلٌ بِامْرَأَةٍ إِلاَّ مَعَ ذِي مَحْرَمٍ ‏"‏‏.‏ فَقَامَ رَجُلٌ فَقَالَ يَا رَسُولَ اللَّهِ امْرَأَتِي خَرَجَتْ حَاجَّةً وَاكْتُتِبْتُ فِي غَزْوَةِ كَذَا وَكَذَا‏.‏ قَالَ ‏"‏ ارْجِعْ فَحُجَّ مَعَ امْرَأَتِكَ ‏"‏‏.‏

Narrated Ibn `Abbas: The Prophet (PBUH) said, "No man should stay with a lady in seclusion except in the presence of a Dhu- Muhram." A man stood up and said, "O Allah's Messenger (PBUH)! My wife has gone out intending to perform the Hajj and I have been enrolled (in the army) for such-and-such campaign." The Prophet (PBUH) said, "Return and perform the Hajj with your wife." ھم سے علی بن عبداللھ مدینی نے بیان کیا ، کھ ھم سے سفیان بن عیینھ نے بیان کیا ، ان سے عمرو بن دینار نے بیان کیا ، ان سے ابو معبد نے اور ان سے حضرت عبداللھ بن عباس رضی اللھ عنھما نے بیان کیا کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا محرم کے سوا کوئی مرد کسی عورت کے ساتھ تنھائی میں نھ بیٹھے ۔ اس پر ایک صحابی نے عرض کیا یا رسول اللھ ! میری بیوی حج کرنے گئی ھے اور میرا نام فلاں غزوھ میں لکھا گیا ھے ۔ آنحضور صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا پھر تو واپس جا اور اپنی بیوی کے ساتھ حج کر ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 67 Hadith no 5233
Web reference: Sahih Bukhari Volume 7 Book 62 Hadith no 160


حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ بَشَّارٍ، حَدَّثَنَا غُنْدَرٌ، حَدَّثَنَا شُعْبَةُ، عَنْ هِشَامٍ، قَالَ سَمِعْتُ أَنَسَ بْنَ مَالِكٍ ـ رضى الله عنه ـ قَالَ جَاءَتِ امْرَأَةٌ مِنَ الأَنْصَارِ إِلَى النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم فَخَلاَ بِهَا فَقَالَ ‏"‏ وَاللَّهِ إِنَّكُنَّ لأَحَبُّ النَّاسِ إِلَىَّ ‏"‏‏.‏


Chapter: Private meeting between a man and a woman not secluded from the people

Narrated Anas bin Malik: An Ansari woman came to the Prophet (PBUH) and he took her aside and said (to her). "By Allah, you (Ansar) are the most beloved people to me." ھم سے محمد بن بشار نے حدیث بیان کی ، ان سے غندر نے حدیث بیان کی ، ان سے شعبھ نے حدیث بیان کی ، ان سے ھشام نے بیان کیا ، انھوں نے حضرت انس بن مالک رضی اللھ عنھ سے سنا ، انھوں نے بیان کیا کھ قبیلھ انصار کی ایک خاتون نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم کے پاس آئیں اور آنحضور صلی اللھ علیھ وسلم نے اس سے لوگوں سے ایک طرف ھو کر تنھائی میں گفتگو کی ۔ اس کے بعد آنحضور صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ تم لوگ ( یعنی انصار ) مجھے سب لوگوں سے زیادھ عزیز ھو ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 67 Hadith no 5234
Web reference: Sahih Bukhari Volume 7 Book 62 Hadith no 161


حَدَّثَنَا عُثْمَانُ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ، حَدَّثَنَا عَبْدَةُ، عَنْ هِشَامِ بْنِ عُرْوَةَ، عَنْ أَبِيهِ، عَنْ زَيْنَبَ ابْنَةِ أُمِّ سَلَمَةَ، عَنْ أُمِّ سَلَمَةَ، أَنَّ النَّبِيَّ صلى الله عليه وسلم كَانَ عِنْدَهَا وَفِي الْبَيْتِ مُخَنَّثٌ، فَقَالَ الْمُخَنَّثُ لأَخِي أُمِّ سَلَمَةَ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ أَبِي أُمَيَّةَ إِنْ فَتَحَ اللَّهُ عَلَيْكُمُ الطَّائِفَ غَدًا أَدُلُّكَ عَلَى ابْنَةِ غَيْلاَنَ، فَإِنَّهَا تُقْبِلُ بِأَرْبَعٍ وَتُدْبِرُ بِثَمَانٍ‏.‏ فَقَالَ النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ لاَ يَدْخُلَنَّ هَذَا عَلَيْكُنَّ ‏"‏‏.‏


Chapter: Effeminate men should not enter upon women

Narrated Um Salama: that while the Prophet (PBUH) was with her, there was an effeminate man in the house. The effeminate man said to Um Salama's brother, `Abdullah bin Abi Umaiyya, "If Allah should make you conquer Ta'if tomorrow, I recommend that you take the daughter of Ghailan (in marriage) for (she is so fat) that she shows four folds of flesh when facing you and eight when she turns her back." Thereupon the Prophet (PBUH) said (to us), "This (effeminate man) should not enter upon you (anymore). ھم سے عثمان بن ابی شیبھ نے بیان کیا ، کھا ھم سے عبدھ بن سلیمان نے بیان کیا ، ان سے ھشام بن عروھ نے ، ان سے ان کے والد نے ، ان سے زینب بنت ام سلمھ رضی اللھ عنھا نے اور ان سے ام المؤمنین حضرت ام سلمھ نے کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم ان کے یھاں تشریف رکھتے تھے ، گھر میں ایک مغیث نامی مخنث بھی تھا ۔ اس مخنث ( ھیجڑے ) نے حضرت ام سلمھ کے بھائی عبداللھ بن ابی امیھ رضی اللھ عنھ سے کھا کھ اگر کل اللھ نے تمھیں طائف پر فتح عنایت فرمائی تو میں تمھیں غیلان کی بیٹی کو دکھلاؤں گا کیونکھ وھ سامنے آتی ھے تو ( مٹاپے کی وجھ سے ) اس کے چار شکنیں پڑجاتی ھیں اور جب پیچھے پھرتی ھے تو آٹھ ھو جاتی ھیں ۔ اس کے بعد آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے ( ام سلمھ سے ) فرمایا کھ یھ ( مخنث ) تمھارے پاس اب نھ آیا کرے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 67 Hadith no 5235
Web reference: Sahih Bukhari Volume 7 Book 62 Hadith no 162



@2019 Copyrights: if you have any objection regarding any shared content on pdf9.com please click here.