Search hadith by
Hadith Book
Search Query
Search Language
English Arabic Urdu
Search Type Basic    Case Sensitive
 

Sahih Bukhari

Wedlock, Marriage (Nikaah)

كتاب النكاح

حَدَّثَنِي مَحْمُودٌ، حَدَّثَنَا عَبْدُ الرَّزَّاقِ، أَخْبَرَنَا مَعْمَرٌ، عَنِ ابْنِ طَاوُسٍ، عَنْ أَبِيهِ، عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ، قَالَ ‏"‏ قَالَ سُلَيْمَانُ بْنُ دَاوُدَ ـ عَلَيْهِمَا السَّلاَمُ ـ لأَطُوفَنَّ اللَّيْلَةَ بِمِائَةِ امْرَأَةٍ، تَلِدُ كُلُّ امْرَأَةٍ غُلاَمًا، يُقَاتِلُ فِي سَبِيلِ اللَّهِ، فَقَالَ لَهُ الْمَلَكُ قُلْ إِنْ شَاءَ اللَّهُ‏.‏ فَلَمْ يَقُلْ وَنَسِيَ، فَأَطَافَ بِهِنَّ، وَلَمْ تَلِدْ مِنْهُنَّ إِلاَّ امْرَأَةٌ نِصْفَ إِنْسَانٍ ‏"‏‏.‏ قَالَ النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ لَوْ قَالَ إِنْ شَاءَ اللَّهُ لَمْ يَحْنَثْ، وَكَانَ أَرْجَى لِحَاجَتِهِ ‏"‏‏.‏


Chapter: "I will go round all my wives tonight."

Narrated Abu Huraira: (The Prophet) Solomon son of (the Prophet) David said, "Tonight I will go round (i.e. have sexual relations with) one hundred women (my wives) everyone of whom will deliver a male child who will fight in Allah's Cause." On that an Angel said to him, "Say: 'If Allah will.' " But Solomon did not say it and forgot to say it. Then he had sexual relations with them but none of them delivered any child except one who delivered a half person. The Prophet (PBUH) said, "If Solomon had said: 'If Allah will,' Allah would have fulfilled his (above) desire and that saying would have made him more hopeful." مجھ سے محمود بن غیلان نے بیان کیا ، کھا ھم سے عبدالرزاق نے ، کھا ھم کو معمر نے خبر دی ، انھیں عبداللھ بن طاؤس نے ، انھیں ان کے والد نے اور ان سے ابوھریرھ رضی اللھ عنھ نے بیان کیاکھ سلیمان بن داؤد علیھاالسلام نے فرمایا کھ آج رات میں اپنی سو بیویوں کے پاس ھو آؤں گا ( اور اس قربت کے نتیجھ میں ) ھر عورت ایک لڑکا جنے گی تو سو لڑکے ایسے پیدا ھوں گے جو اللھ کے راستے میں جھاد کریں گے ۔ فرشتھ نے ان سے کھا کھ انشاءاللھ کھھ لیجئے لیکن انھوں نے نھیں کھا اور بھول گئے ۔ چنانچھ آپ تمام بیویوں کے پاس گئے لیکن ایک کے سوا کسی کے بھی بچھ پیدا نھ ھوا اور اس ایک کے یھاں بھی آدھا بچھ پیدا ھوا ۔ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ اگر انشاءاللھ کھھ لیتے تو ان کی مراد بر آتی اور ان کی خواھش پوری ھونے کی امید زیادھ ھوتی ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 67 Hadith no 5242
Web reference: Sahih Bukhari Volume 7 Book 62 Hadith no 169


حَدَّثَنَا آدَمُ، حَدَّثَنَا شُعْبَةُ، حَدَّثَنَا مُحَارِبُ بْنُ دِثَارٍ، قَالَ سَمِعْتُ جَابِرَ بْنَ عَبْدِ اللَّهِ ـ رضى الله عنه ـ قَالَ كَانَ النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم يَكْرَهُ أَنْ يَأْتِيَ الرَّجُلُ أَهْلَهُ طُرُوقًا‏.‏


Chapter: If a man is away for a long time, he should not enter his house at night.

Narrated Jabir bin `Abdullah: The Prophet (PBUH) disliked that one should go to one's family at night (on returning from a journey). ھم سے آدم بن ابی ایاس نے بیان کیا ، کھا ھم سے شعبھ نے بیان کیا ، کھا ھم سے محارب بن دثار نے بیان کیا ، کھا کھ میں نے حضرت جابر بن عبداللھ رضی اللھ عنھما سے سنا ، انھوں نے بیان کیا کھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم کسی شخص سے رات کے وقت اپنے گھر ( سفر سے اچانک ) آنے پر ناپسندیدگی کا اظھار فرماتے تھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 67 Hadith no 5243
Web reference: Sahih Bukhari Volume 7 Book 62 Hadith no 170


حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ مُقَاتِلٍ، أَخْبَرَنَا عَبْدُ اللَّهِ، أَخْبَرَنَا عَاصِمُ بْنُ سُلَيْمَانَ، عَنِ الشَّعْبِيِّ، أَنَّهُ سَمِعَ جَابِرَ بْنَ عَبْدِ اللَّهِ، يَقُولُ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ إِذَا أَطَالَ أَحَدُكُمُ الْغَيْبَةَ فَلاَ يَطْرُقْ أَهْلَهُ لَيْلاً ‏"‏‏.‏

Narrated Jabir bin `Abdullah: Allah's Messenger (PBUH) said, "When anyone of you is away from his house for a long time, he should not return to his family at night." ھم سے محمد بن مقاتل مروزی نے بیان کیا ، کھا ھم کو عبداللھ بن مبارک نے خبر دی ، کھا ھم کو عاصم بن سلیمان نے خبر دی ، انھیں عامر شعبی نے اور ان سے حضرت جابر بن عبداللھ انصاری رضی اللھ عنھما نے بیان کیا کھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا اگر تم میں سے کوئی شخص زیادھ دنوں تک اپنے گھر سے دور ھو تو یکا یک رات کو اپنے گھر میں نھ آ جائے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 67 Hadith no 5244
Web reference: Sahih Bukhari Volume 7 Book 62 Hadith no 171


حَدَّثَنَا مُسَدَّدٌ، عَنْ هُشَيْمٍ، عَنْ سَيَّارٍ، عَنِ الشَّعْبِيِّ، عَنْ جَابِرٍ، قَالَ كُنْتُ مَعَ رَسُولِ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم فِي غَزْوَةٍ، فَلَمَّا قَفَلْنَا تَعَجَّلْتُ عَلَى بَعِيرٍ قَطُوفٍ فَلَحِقَنِي رَاكِبٌ مِنْ خَلْفِي، فَالْتَفَتُّ فَإِذَا أَنَا بِرَسُولِ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم قَالَ ‏"‏ مَا يُعْجِلُكَ ‏"‏‏.‏ قُلْتُ إِنِّي حَدِيثُ عَهْدٍ بِعُرْسٍ‏.‏ قَالَ ‏"‏ فَبِكْرًا تَزَوَّجْتَ أَمْ ثَيِّبًا ‏"‏‏.‏ قُلْتُ بَلْ ثَيِّبًا‏.‏ قَالَ ‏"‏ فَهَلاَّ جَارِيَةً تُلاَعِبُهَا وَتُلاَعِبُكَ ‏"‏‏.‏ قَالَ فَلَمَّا قَدِمْنَا ذَهَبْنَا لِنَدْخُلَ فَقَالَ ‏"‏ أَمْهِلُوا حَتَّى تَدْخُلُوا لَيْلاً ـ أَىْ عِشَاءً ـ لِكَىْ تَمْتَشِطَ الشَّعِثَةُ وَتَسْتَحِدَّ الْمُغِيبَةُ ‏"‏‏.‏ قَالَ وَحَدَّثَنِي الثِّقَةُ أَنَّهُ قَالَ فِي هَذَا الْحَدِيثِ ‏"‏ الْكَيْسَ الْكَيْسَ يَا جَابِرُ ‏"‏‏.‏ يَعْنِي الْوَلَدَ‏.‏


Chapter: Seeking to beget children

Narrated Jabir: I was with Allah's Messenger (PBUH) in a Ghazwa, and when we returned, I wanted to hurry, while riding a slow camel. A rider came behind me. I looked back and saw that the rider was Allah's Messenger (PBUH) . He said (to me), "What makes you in such a hurry?" I replied, "I am newly married." He said, "Did you marry a virgin or a matron?" I replied, "(Not a virgin but) a matron." He said, "Why didn't you marry a young girl with whom you could play and who could play with you?" Then when we approached (Medina) and were going to enter (it), the Prophet (PBUH) said, "Wait till you enter (your homes) at night (in the first part of the night) so that the ladies with unkempt hair may comb their hair, and those whose husbands have been absent (for a long time) may shave their pubic hair." (The sub-narrator, Hashim said: A reliable narrator told me that the Prophet (PBUH) added in this Hadith: "(Seek to beget) children! Children, O Jabir!") ھم سے مسدد بن مسرھد نے بیان کیا ، ان سے ھشیم بن بشیر نے ، ان سے سیار بن دروان نے ، ان سے عامر شعبی نے اور ان سے حضرت جابر رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ میں رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم کے ساتھ ایک جھاد ( تبوک ) میں تھا ، جب ھم واپس ھو رھے تھے تو میں اپنے سست رفتار اونٹ کو تیز چلانے کی کوشش کر رھا تھا ۔ اتنے میں میرے پیچھے سے ایک سوار میرے قریب آئے ۔ میں نے مڑ کر دیکھا تو رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم تھے ۔ آپ نے فرمایا جلدی کیوں کر رھے ھو ؟ میں نے عرض کیا کھ میری شادی ابھی نئی ھوئی ھے ۔ آپ نے دریافت فرمایا ، کنواری عورت سے تم نے شادی کی یا بیوھ سے ؟ میں نے عرض کیا کھ بیوھ سے ۔ آپ نے اس پر فرمایا ، کنواری سے کیوں نھ کی ؟ تم اس کے ساتھ کھیلتے اور وھ تمھارے سا تھ کھیلتی ۔ جابر نے بیان کیا کھ پھر جب ھم مدینھ پھنچے تو ھم نے چاھا کھ شھر میں داخل ھو جائیں لیکن آپ نے فرمایا : ٹھھر جاؤ ۔ رات ھو جائے پھر داخل ھونا تاکھ تمھاری بیویاں جو پراگندھ بال ھیں وھ کنگھی چوٹی کر لیں اور جن کے خاوند غائب تھے وھ موئے زیر ناف صاف کر لیں ۔ ھشیم نے بیان کیا کھ مجھ سے ایک معتبر راوی نے بیان کیا کھ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے یھ بھی فرمایا کھ الکیس الکیس یعنی اے جابر ! جب تو گھر پھنچے تو خوب خوب کیس کیجؤ ( امام بخاری نے کھا ) کیس کا مطلب ھے کھ اولاد ھونے کی خواھش کیجؤ ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 67 Hadith no 5245
Web reference: Sahih Bukhari Volume 7 Book 62 Hadith no 172


حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ الْوَلِيدِ، حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ جَعْفَرٍ، حَدَّثَنَا شُعْبَةُ، عَنْ سَيَّارٍ، عَنِ الشَّعْبِيِّ، عَنْ جَابِرِ بْنِ عَبْدِ اللَّهِ ـ رضى الله عنهما ـ أَنَّ النَّبِيَّ صلى الله عليه وسلم قَالَ ‏"‏ إِذَا دَخَلْتَ لَيْلاً فَلاَ تَدْخُلْ عَلَى أَهْلِكَ حَتَّى تَسْتَحِدَّ الْمُغِيبَةُ وَتَمْتَشِطَ الشَّعِثَةُ ‏"‏‏.‏ قَالَ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ فَعَلَيْكَ بِالْكَيْسِ الْكَيْسِ ‏"‏‏.‏ تَابَعَهُ عُبَيْدُ اللَّهِ عَنْ وَهْبٍ عَنْ جَابِرٍ عَنِ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم فِي الْكَيْسِ‏.‏

Narrated Jabir bin `Abdullah: The Prophet (PBUH) said, "If you enter (your town) at night (after coming from a journey), do not enter upon your family till the woman whose husband was absent (from the house) shaves her pubic hair and the woman with unkempt hair, combs her hair" Allah's Messenger (PBUH) further said, "(O Jabir!) Seek to have offspring, seek to have offspring!" ھم سے محمد بن ولید نے بیان کیا ، کھا ھم سے محمد بن جعفر نے بیان کیا ، کھا ھم سے شعبھ نے بیان کیا ، ان سے سیار نے ، ان سے شعبی نے اور ان سے حضرت جابر بن عبداللھ رضی اللھ عنھما نے کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم ( غزوھ تبوک سے واپسی کے وقت ) فرمایا ، جب رات کے وقت تم مدینھ میں پھنچو تو اس وقت تک اپنے گھروں میں نھ جانا جب تک ان کی بیویاں جو مدینھ منورھ میں موجود نھیں تھے ، اپنا موئے زیر ناف صاف نھ کر لیں اورجن کے بال پراگندھ ھوں وھ کنگھا نھ کر لیں ۔ جابر رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا ، پھر ضروری ھے کھ جب تم گھر پھنچو تو خوب خوب کیس کیجےو ۔ شعبی کے ساتھ اس حدیث کو عبیداللھ نے بھی وھب بن کیسان سے ، انھوں نے جابر رضی اللھ عنھ سے ، انھوں نے آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم سے روایت کیا ، اس میں بھی کیس کا ذکر ھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 67 Hadith no 5246
Web reference: Sahih Bukhari Volume 7 Book 62 Hadith no 173


حَدَّثَنِي يَعْقُوبُ بْنُ إِبْرَاهِيمَ، حَدَّثَنَا هُشَيْمٌ، أَخْبَرَنَا سَيَّارٌ، عَنِ الشَّعْبِيِّ، عَنْ جَابِرِ بْنِ عَبْدِ اللَّهِ، قَالَ كُنَّا مَعَ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم فِي غَزْوَةٍ، فَلَمَّا قَفَلْنَا كُنَّا قَرِيبًا مِنَ الْمَدِينَةِ تَعَجَّلْتُ عَلَى بَعِيرٍ لِي قَطُوفٍ، فَلَحِقَنِي رَاكِبٌ مِنْ خَلْفِي فَنَخَسَ بَعِيرِي بِعَنَزَةٍ كَانَتْ مَعَهُ، فَسَارَ بَعِيرِي كَأَحْسَنِ مَا أَنْتَ رَاءٍ مِنَ الإِبِلِ، فَالْتَفَتُّ فَإِذَا أَنَا بِرَسُولِ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم فَقُلْتُ يَا رَسُولَ اللَّهِ إِنِّي حَدِيثُ عَهْدٍ بِعُرْسٍ‏.‏ قَالَ ‏"‏ أَتَزَوَّجْتَ ‏"‏‏.‏ قُلْتُ نَعَمْ‏.‏ قَالَ ‏"‏ أَبِكْرًا أَمْ ثَيِّبًا ‏"‏‏.‏ قَالَ قُلْتُ بَلْ ثَيِّبًا‏.‏ قَالَ ‏"‏ فَهَلاَّ بِكْرًا تُلاَعِبُهَا وَتُلاَعِبُكَ ‏"‏‏.‏ قَالَ فَلَمَّا قَدِمْنَا ذَهَبْنَا لِنَدْخُلَ، فَقَالَ ‏"‏ أَمْهِلُوا حَتَّى تَدْخُلُوا لَيْلاً ـ أَىْ عِشَاءً ـ لِكَىْ تَمْتَشِطَ الشَّعِثَةُ، وَتَسْتَحِدَّ الْمُغِيبَةُ ‏"‏‏.‏


Chapter: The woman should shave her pubic hair, and should comb the hair.

Narrated Jabir bin `Abdullah: We were with the Prophet (PBUH) in Ghazwa, and when we returned and approached Medina, I wanted to hurry while riding a slow camel. A rider overtook me and pricked my camel with a spear which he had, whereupon my camel started running as fast as any other fast camel you may see. I looked back, and behold, the rider was Allah's Messenger (PBUH) . I said, "O Allah's Messenger (PBUH)! I am newly married " He asked, "Have you got married?" I replied, "Yes." He said, "A virgin or a matron?" I replied, "(Not a virgin) but a matron" He said, "Why didn't you marry a young girl so that you could play with her and she with you?" When we reached (near Medina) and were going to enter it, the Prophet (PBUH) said, "Wait till you enter your home early in the night so that the lady whose hair is unkempt may comb her hair and that the lady whose husband has been away may shave her pubic hair." مجھ سے یعقوب بن ابراھیم نے بیان کیا ، کھا ھم سے ھشیم نے بیان کیا ، کھا ھم کو سیار نے خبر دی ، انھیں شعبی نے ، انھیں حضرت جابر بن عبداللھ رضی اللھ عنھما نے ، انھوں نے بیان کیا کھ ھم نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم کے ساتھ ایک غزوھ ( تبوک ) میں تھے ۔ واپس ھوتے ھوئے جب ھم مدینھ منورھ کے قریب پھنچے تو میں نے اپنے سست رفتار اونٹ کو تیز چلانے لگا ۔ ایک صاحب نے پیچھے سے میرے قریب پھنچ کر میرے اونٹ کو ایک چھڑی سے جو ان کے پاس تھی ، مارا ۔ اس سے اونٹ بڑی اچھی چال چلنے لگا ، جیسا کھ تم نے اچھے اونٹوں کو چلتے ھوئے دیکھا ھو گا ۔ میں نے مڑ کر دیکھا تو رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم تھے ۔ میں نے عرض کیا یا رسول اللھ ! میری شادی نئی ھوئی ھے ۔ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے اس پر پوچھا ، کیا تم نے شادی کر لی ؟ میں نے عرض کیا کھ جی ھاں ۔ دریافت فرمایا ، کنواری سے کی ھے یا بیوھ سے ؟ بیان کیا کھ میں نے عرض کیا کھ بیوھ سے کی ھے آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا ، کنواری سے کیوں نھ کی ؟ تم اس کے ساتھ کھیلتے اور وھ تمھارے ساتھ کھیلتی ۔ بیان کیا کھ پھر جب ھم مدینھ پھنچے تو شھر میں داخل ھونے لگے لیکن آپ نے فرمایا کھ ٹھھر جاؤ رات ھو جائے پھر داخل ھونا تاکھ پراگندھ بال عورت چوٹی کنگھا کر لے اور جس کا شوھر موجود نھ رھا ھو ، وھ موئے زیر ناف صاف کر لے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 67 Hadith no 5247
Web reference: Sahih Bukhari Volume 7 Book 62 Hadith no 174



@2019 Copyrights: if you have any objection regarding any shared content on pdf9.com please click here.