Search hadith by
Hadith Book
Search Query
Search Language
English Arabic Urdu
Search Type Basic    Case Sensitive
 

Sahih Bukhari

Afflictions and the End of the World

كتاب الفتن

حَدَّثَنَا أَبُو النُّعْمَانِ، حَدَّثَنَا حَمَّادُ بْنُ زَيْدٍ، عَنِ الْجَعْدِ أَبِي عُثْمَانَ، حَدَّثَنِي أَبُو رَجَاءٍ الْعُطَارِدِيُّ، قَالَ سَمِعْتُ ابْنَ عَبَّاسٍ ـ رضى الله عنهما ـ عَنِ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم قَالَ ‏"‏ مَنْ رَأَى مِنْ أَمِيرِهِ شَيْئًا يَكْرَهُهُ فَلْيَصْبِرْ عَلَيْهِ، فَإِنَّهُ مَنْ فَارَقَ الْجَمَاعَةَ شِبْرًا فَمَاتَ، إِلاَّ مَاتَ مِيتَةً جَاهِلِيَّةً ‏"‏‏.‏

Narrated Ibn `Abbas: The Prophet (PBUH) said, "Whoever notices something which he dislikes done by his ruler, then he should be patient, for whoever becomes separate from the company of the Muslims even for a span and then dies, he will die as those who died in the Pre-lslamic period of Ignorance (as rebellious sinners). (Fath-ul-Bari page 112, Vol. 16) ھم سے ابوالنعمان نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے حماد بن زید نے بیان کیا ، ان سے جعد ابی عثمان نے بیان کیا ، ان سے ابورجاء العطاردی نے بیان کیا ، انھوں نے کھا کھ میں نے ابن عباس رضی اللھ عنھما سے سنا ، ان سے نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا جس نے اپنے امیر کی کوئی ناپسند چیز دیکھی تو اسے چاھے کھ صبر کرے اس لیے کھ جس نے جماعت سے ایک بالشت بھر جدائی اختیار کی اور اسی حال میں مرا تو وھ جاھلیت کی سی موت مرے گا ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 92 Hadith no 7054
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 88 Hadith no 177


حَدَّثَنَا إِسْمَاعِيلُ، حَدَّثَنِي ابْنُ وَهْبٍ، عَنْ عَمْرٍو، عَنْ بُكَيْرٍ، عَنْ بُسْرِ بْنِ سَعِيدٍ، عَنْ جُنَادَةَ بْنِ أَبِي أُمَيَّةَ، قَالَ دَخَلْنَا عَلَى عُبَادَةَ بْنِ الصَّامِتِ وَهْوَ مَرِيضٌ قُلْنَا أَصْلَحَكَ اللَّهُ حَدِّثْ بِحَدِيثٍ، يَنْفَعُكَ اللَّهُ بِهِ سَمِعْتَهُ مِنَ النَّبِيِّ، صلى الله عليه وسلم‏.‏ قَالَ دَعَانَا النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم فَبَايَعْنَاهُ فَقَالَ فِيمَا أَخَذَ عَلَيْنَا أَنْ بَايَعَنَا عَلَى السَّمْعِ وَالطَّاعَةِ، فِي مَنْشَطِنَا وَمَكْرَهِنَا، وَعُسْرِنَا، وَيُسْرِنَا، وَأَثَرَةٍ عَلَيْنَا، وَأَنْ لاَ نُنَازِعَ الأَمْرَ أَهْلَهُ، إِلاَّ أَنْ تَرَوْا كُفْرًا بَوَاحًا، عِنْدَكُمْ مِنَ اللَّهِ فِيهِ بُرْهَانٌ‏.‏

Narrated Junada bin Abi Umaiya: We entered upon 'Ubada bin As-Samit while he was sick. We said, "May Allah make you healthy. Will you tell us a Hadith you heard from the Prophet (PBUH) and by which Allah may make you benefit?" He said, "The Prophet (PBUH) called us and we gave him the Pledge of allegiance for Islam, and among the conditions on which he took the Pledge from us, was that we were to listen and obey (the orders) both at the time when we were active and at the time when we were tired, and at our difficult time and at our ease and to be obedient to the ruler and give him his right even if he did not give us our right, and not to fight against him unless we noticed him having open Kufr (disbelief) for which we would have a proof with us from Allah." ھم سے اسماعیل بن ابی اویس نے بیان کیا ، کھا مجھ سے عبداللھ بن وھب نے بیان کیا ، ان سے عمرو بن حارث نے ، ان سے بکیر بن عبداللھ نے ، ان سے بسر بن سعید نے ، ان سے جنادھ بن ابی امیھ نے بیان کیا کھ ھم عبادھ ابن صامت رضی اللھ عنھ کی خدمت میں پھنچے وھ مریض تھے اور ھم نے عرض کیا اللھ تعالیٰ آپ کو صحت عطا فرمائے ۔ کوئی حدیث بیان کیجئے جس کا نفع آپ کو اللھ تعالیٰ پھنچائے ۔ انھوں نے بیان کیا کھ میں نے نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم سے لیلۃالعقبھ میں سنا ھے کھ آپ نے ھمیں بلایا اور ھم نے آپ سے بیعت کی ۔ انھوں ( عبادھ بن صامت ) نے بیان کیا کھ جن باتوں کا آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے ھم سے عھد لیا تھا ان میں یھ بھی تھا کھ خوشی و ناگواری ، تنگی اور کشادگی اور اپنی حق تلفی میں بھی اطاعت و فرمانبرداری کریں اور یھ بھی کھ حکمرانوں کے ساتھ حکومت کے بارے میں اس وقت تک جھگڑا نھ کریں جب تک ان کو اعلانیھ کفر کرتے نھ دیکھ لیں ۔ اگر وھ اعلانیھ کفر کریں تو تم کو اللھ کے پاس سے دلیل مل جائے گی ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 92 Hadith no 7055, 7056
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 88 Hadith no 178


حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ عَرْعَرَةَ، حَدَّثَنَا شُعْبَةُ، عَنْ قَتَادَةَ، عَنْ أَنَسِ بْنِ مَالِكٍ، عَنْ أُسَيْدِ بْنِ حُضَيْرٍ، أَنَّ رَجُلاً، أَتَى النَّبِيَّ صلى الله عليه وسلم فَقَالَ يَا رَسُولَ اللَّهِ اسْتَعْمَلْتَ فُلاَنًا وَلَمْ تَسْتَعْمِلْنِي‏.‏ قَالَ ‏"‏ إِنَّكُمْ سَتَرَوْنَ بَعْدِي أَثَرَةً، فَاصْبِرُوا حَتَّى تَلْقَوْنِي ‏"‏‏.‏

Narrated Usaid bin Hudair: A man came to the Prophet (PBUH) and said, "O Allah's Messenger (PBUH)! You appointed such-and-such person and you did not appoint me?" The Prophet (PBUH) said, "After me you will see rulers not giving you your right (but you should give them their right) and be patient till you meet me." ھم سے محمد بن عرعرھ نے بیان کیا ، کھا ھم سے شعبھ نے بیان کیا ، ان سے قتادھ نے ، ان سے انس بن مالک رضی اللھ عنھ نے اور ان سے اسید بن حضیر رضی اللھ عنھ نے ، ایک صاحب ( خود اسید ) نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم کی خدمت میں حاضر ھوئے اور عرض کیا یا رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم ! آپ نے فلاں عمرو بن عاص کو حاکم بنا دیا اور مجھے نھیں بنایا ۔ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ تم لوگ انصاری میرے بعد اپنی حق تلفی دیکھو گے تو قیامت تک صبر کرنا یھاں تک کھ تم مجھ سے آ ملو ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 92 Hadith no 7057
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 88 Hadith no 179


حَدَّثَنَا مُوسَى بْنُ إِسْمَاعِيلَ، حَدَّثَنَا عَمْرُو بْنُ يَحْيَى بْنِ سَعِيدِ بْنِ عَمْرِو بْنِ سَعِيدٍ، قَالَ أَخْبَرَنِي جَدِّي، قَالَ كُنْتُ جَالِسًا مَعَ أَبِي هُرَيْرَةَ فِي مَسْجِدِ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم بِالْمَدِينَةِ وَمَعَنَا مَرْوَانُ قَالَ أَبُو هُرَيْرَةَ سَمِعْتُ الصَّادِقَ الْمَصْدُوقَ يَقُولُ ‏"‏ هَلَكَةُ أُمَّتِي عَلَى يَدَىْ غِلْمَةٍ مِنْ قُرَيْشٍ ‏"‏‏.‏ فَقَالَ مَرْوَانُ لَعْنَةُ اللَّهِ عَلَيْهِمْ غِلْمَةً‏.‏ فَقَالَ أَبُو هُرَيْرَةَ لَوْ شِئْتُ أَنْ أَقُولَ بَنِي فُلاَنٍ وَبَنِي فُلاَنٍ لَفَعَلْتُ‏.‏ فَكُنْتُ أَخْرُجُ مَعَ جَدِّي إِلَى بَنِي مَرْوَانَ حِينَ مَلَكُوا بِالشَّأْمِ، فَإِذَا رَآهُمْ غِلْمَانًا أَحْدَاثًا قَالَ لَنَا عَسَى هَؤُلاَءِ أَنْ يَكُونُوا مِنْهُمْ قُلْنَا أَنْتَ أَعْلَمُ‏.‏


Chapter: “The destruction of my followers will be through the hands of foolish young men.”

Narrated Abu Huraira: I heard the truthful and trusted by Allah (i.e., the Prophet (PBUH) ) saying, "The destruction of my followers will be through the hands of young men from Quraish." ھم سے موسیٰ بن اسماعیل نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے عمرو بن یحییٰ بن سعید نے بیان کیا ، انھوں نے کھا کھ مجھے میرے دادا سعید نے خبر دی ، کھا کھ میں ابوھریرھ رضی اللھ عنھ کے پاس مدینھ منورھ میں نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم کی مسجد میں بیٹھا تھا اور ھمارے ساتھ مروان بھی تھا ۔ ابوھریرھ رضی اللھ عنھ نے کھا کھ میں نے صادق و مصدوق سے سنا ھے آپ نے فرمایا کھ میری امت کی تباھی قریش کے چند لڑکوں کے ھاتھ سے ھو گی ۔ مروان نے اس پر کھا ان پر اللھ کی لعنت ھو ۔ ابوھریرھ رضی اللھ عنھ نے کھا کھ اگر میں ان کے خاندان کے نام لے کر بتلانا چاھوں تو بتلا سکتا ھوں ۔ پھر جب بنی مروان شام کی حکومت پر قابض ھو گئے تو میں اپنے دادا کے ساتھ ان کی طرف جاتا تھا ۔ جب وھاں انھوں نے نوجوان لڑکوں کو دیکھا تو کھا کھ شاید یھ انھی میں سے ھوں ۔ ھم نے کھا کھ آپ کو زیادھ علم ھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 92 Hadith no 7058
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 88 Hadith no 180


حَدَّثَنَا مَالِكُ بْنُ إِسْمَاعِيلَ، حَدَّثَنَا ابْنُ عُيَيْنَةَ، أَنَّهُ سَمِعَ الزُّهْرِيَّ، عَنْ عُرْوَةَ، عَنْ زَيْنَبَ بِنْتِ أُمِّ سَلَمَةَ، عَنْ أُمِّ حَبِيبَةَ، عَنْ زَيْنَبَ ابْنَةِ جَحْشٍ ـ رضى الله عنهن ـ أَنَّهَا قَالَتِ اسْتَيْقَظَ النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم مِنَ النَّوْمِ مُحْمَرًّا وَجْهُهُ يَقُولُ ‏"‏ لاَ إِلَهَ إِلاَّ اللَّهُ، وَيْلٌ لِلْعَرَبِ مِنْ شَرٍّ قَدِ اقْتَرَبَ، فُتِحَ الْيَوْمَ مِنْ رَدْمِ يَاجُوجَ وَمَاجُوجَ مِثْلُ هَذِهِ ‏"‏‏.‏ وَعَقَدَ سُفْيَانُ تِسْعِينَ أَوْ مِائَةً‏.‏ قِيلَ أَنَهْلِكُ وَفِينَا الصَّالِحُونَ قَالَ ‏"‏ نَعَمْ، إِذَا كَثُرَ الْخَبَثُ ‏"‏‏.‏


Chapter: “Woe to the Arabs from the great evil that is nearly, approaching them.”

Narrated Zainab bint Jahsh: The Prophet (PBUH) got up from his sleep with a flushed red face and said, "None has the right to be worshipped but Allah. Woe to the Arabs, from the Great evil that is nearly approaching them. Today a gap has been made in the wall of Gog and Magog like this." (Sufyan illustrated by this forming the number 90 or 100 with his fingers.) It was asked, "Shall we be destroyed though there are righteous people among us?" The Prophet (PBUH) said, "Yes, if evil increased." ھم سے مالک بن اسماعیل نے بیان کیا ‘ کھا ھم سے سفیان بن عیینھ نے بیان کیا ‘ انھوں نے زھری سے سنا ‘ انھوں نے عروھ سے ‘ انھوں نے زینب بنت ام سلمھ رضی اللھ عنھا سے ‘ انھوں نے ام حبیبھ رضی اللھ عنھا سے اور انھوں نے زینب بنت جحش رضی اللھ عنھا سے کھ انھوں نے بیان کیا نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نیند سے بیدار ھوئے تو آپ کا چھرھ سرخ تھا اور آپ فرما رھے تھے اللھ کے سوا کوئی معبود نھیں ۔ عربوں کی تباھی اس بلا سے ھو گی جو قریب ھی آلگی ھے ۔ آج یاجوج ماجوج کی دیوار میں سے اتنا سوراخ ھو گیا اور سفیان نے نوے یا سو کے عدد کے لئے انگلی باندھی پوچھا گیا کیا ھم ا سکے باوجود ھلاک ھو جائیں گے کھ ھم میں صالحین بھی ھوں گے ؟ فرمایا ھاں جب برائی بڑھ جائے گی ( تو ایسا ھی ھو گا ) ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 92 Hadith no 7059
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 88 Hadith no 181


حَدَّثَنَا أَبُو نُعَيْمٍ، حَدَّثَنَا ابْنُ عُيَيْنَةَ، عَنِ الزُّهْرِيِّ،‏.‏ وَحَدَّثَنِي مَحْمُودٌ، أَخْبَرَنَا عَبْدُ الرَّزَّاقِ، أَخْبَرَنَا مَعْمَرٌ، عَنِ الزُّهْرِيِّ، عَنْ عُرْوَةَ، عَنْ أُسَامَةَ بْنِ زَيْد ٍ ـ رضى الله عنهما ـ قَالَ أَشْرَفَ النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم عَلَى أُطُمٍ مِنْ آطَامِ الْمَدِينَةِ فَقَالَ ‏"‏ هَلْ تَرَوْنَ مَا أَرَى ‏"‏‏.‏ قَالُوا لاَ‏.‏ قَالَ ‏"‏ فَإِنِّي لأَرَى الْفِتَنَ تَقَعُ خِلاَلَ بُيُوتِكُمْ كَوَقْعِ الْقَطْرِ ‏"‏‏.‏

Narrated Usama bin Zaid: Once the Prophet (PBUH) stood over one of the high buildings of Medina and then said (to the people), "Do you see what I see?" They said, "No." He said, "I see afflictions falling among your houses as rain drops fall." ھم سے ابونعیم فضل بن دکین نے بیان کیا ‘ کھا ھم سے سفیان بن عیینھ نے بیان کیا ‘ ان سے زھری نے ( دوسری سند ) امام بخاری نے کھا کھ اور مجھ سے محمود بن غیلان نے بیان کیا ‘ کھا ھم کو عبدالرزاق نے خبر دی ‘ انھیں معمر نے خبر دی ‘ انھیں زھری نے ‘ انھیں عروھ نے اور ان سے اسامھ بن زید رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم مدینھ کے ٹیلوں میں سے ایک ٹیلے پر چڑھے پھر فرمایا کھ میں جو کچھ دیکھتا ھوں تم بھی دیکھتے ھو ؟ لوگوں نے کھا کھ نھیں ۔ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ میں فتنوں کو دیکھتا ھوں کھ وھ بارش کے قطروں کی طرح تمھارے گھروں میں داخل ھو رھے ھیں ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 92 Hadith no 7060
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 88 Hadith no 182



Copyrights: if you have any objection regarding any shared content on pdf9.com please click here.