Search hadith by
Hadith Book
Search Query
Search Language
English Arabic Urdu
Search Type Basic    Case Sensitive
 

Sahih Bukhari

To make the Heart Tender (Ar-Riqaq)

كتاب الرقاق

حَدَّثَنَا سَعِيدُ بْنُ أَبِي مَرْيَمَ، عَنْ نَافِعِ بْنِ عُمَرَ، قَالَ حَدَّثَنِي ابْنُ أَبِي مُلَيْكَةَ، عَنْ أَسْمَاءَ بِنْتِ أَبِي بَكْرٍ ـ رضى الله عنهما ـ قَالَتْ قَالَ النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ إِنِّي عَلَى الْحَوْضِ حَتَّى أَنْظُرُ مَنْ يَرِدُ عَلَىَّ مِنْكُمْ، وَسَيُؤْخَذُ نَاسٌ دُونِي فَأَقُولُ يَا رَبِّ مِنِّي وَمِنْ أُمَّتِي‏.‏ فَيُقَالُ هَلْ شَعَرْتَ مَا عَمِلُوا بَعْدَكَ وَاللَّهِ مَا بَرِحُوا يَرْجِعُونَ عَلَى أَعْقَابِهِمْ ‏"‏‏.‏ فَكَانَ ابْنُ أَبِي مُلَيْكَةَ يَقُولُ اللَّهُمَّ إِنَّا نَعُوذُ بِكَ أَنْ نَرْجِعَ عَلَى أَعْقَابِنَا أَوْ نُفْتَنَ عَنْ دِينِنَا‏.‏ ‏{‏أَعْقَابِكُمْ تَنْكِصُونَ‏}‏ تَرْجِعُونَ عَلَى الْعَقِبِ‏.‏

Narrated Asma 'bint Abu Bakr: The Prophet (PBUH) said, "I will be standing at the Lake-Fount so that I will see whom among you will come to me; and some people will be taken away from me, and I will say, 'O Lord, (they are) from me and from my followers.' Then it will be said, 'Did you notice what they did after you? By Allah, they kept on turning on their heels (turned as renegades).' " The sub-narrator, Ibn Abi Mulaika said, "O Allah, we seek refuge with You from turning on our heels, or being put to trial in our religion." ھم سے سعید بن ابی مریم نے بیان کیا ، ان سے نافع بن عمر نے ، کھا کھ مجھ سے ابن ابی ملیکھ نے بیان کیا ، ان سے اسماء بنت ابی بکر رضی اللھ عنھا نے بیان کیا کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا ، میں حوض پر موجود رھوں گا اور دیکھوں گا کھ تم میں سے کون میرے پاس آتا ھے ۔ پھر کچھ لوگوں کو مجھ سے الگ کر دیا جائے گا ۔ میں عرض کروں گا کھ اے میرے رب ! یھ تو میرے ھی آدمی ھیں اور میری امت کے لوگ ھیں ۔ مجھ سے کھا جائے گا کھ تمھیں معلوم بھی ھے انھوں نے تمھارے بعد کیا کام کئے تھے ؟ واللھ یھ مسلسل الٹے پاؤں لوٹتے رھے ۔ ( دین اسلام سے پھر گئے ) ابن ابی ملیکھ ( جو کھ یھ حدیث اسماء سے روایت فرماتے ھیں ) کھا کرتے تھے کھ اے اللھ ! ھم اس بات سے تیری پناھ مانگتے ھیں کھ ھم الٹے پاؤں ( دین سے ) لوٹ جائیں یا اپنے دین کے بارے میں فتنھ میں ڈال دئیے جائیں ۔ ابوعبداللھ امام بخاری رحمھ اللھ نے کھا کھ سورۃ مومنون میں جو فرمان خداوندی ھے اعقابکم تنکصون اس کا معنی بھی یھی ھے کھ تم دین سے اپنی ایڑیوں کے بل الٹے پھر گئے تھے یعنی اسلام سے مرتد ھو گئے تھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 81 Hadith no 6593
Web reference: Sahih Bukhari Volume 8 Book 76 Hadith no 592



@2019 Copyrights: if you have any objection regarding any shared content on pdf9.com please click here.