Search hadith by
Hadith Book
Search Query
Search Language
English Arabic Urdu
Search Type Basic    Case Sensitive
 

Sahih Bukhari

Judgments (Ahkaam)

كتاب الأحكام

حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ الْعَلاَءِ، حَدَّثَنَا أَبُو أُسَامَةَ، عَنْ بُرَيْدٍ، عَنْ أَبِي بُرْدَةَ، عَنْ أَبِي مُوسَى ـ رضى الله عنه ـ قَالَ دَخَلْتُ عَلَى النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم أَنَا وَرَجُلاَنِ مِنْ قَوْمِي فَقَالَ أَحَدُ الرَّجُلَيْنِ أَمِّرْنَا يَا رَسُولَ اللَّهِ‏.‏ وَقَالَ الآخَرُ مِثْلَهُ‏.‏ فَقَالَ ‏"‏ إِنَّا لاَ نُوَلِّي هَذَا مَنْ سَأَلَهُ، وَلاَ مَنْ حَرَصَ عَلَيْهِ ‏"‏‏.‏

Narrated Abu Musa: Two men from my tribe and I entered upon the Prophet. One of the two men said to the Prophet, "O Allah's Messenger (PBUH)! Appoint me as a governor," and so did the second. The Prophet (PBUH) said, "We do not assign the authority of ruling to those who ask for it, nor to those who are keen to have it." ھم سے محمد بن علاء نے بیان کیا ، کھا ھم سے ابواسامھ نے بیان کیا ، ان سے بریدھ نے ، ان سے ابوبردھ نے اور ان سے ابوموسیٰ رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ میں نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم کی خدمت میں اپنی قوم کے دو آدمیوں کو لے کر حاضر ھوا ۔ ان میں سے ایک نے کھا کھ یا رسول اللھ ! ھمیں کھیں کا حاکم بنا دیجئیے اور دوسرے بھی یھی خواھش ظاھر کی ۔ اس پر آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ ھم ایسے شخص کو یھ ذمھ داری نھیں سونپتے جو اسے طلب کرے اور نھ اسے دیتے ھیں جو اس کا حریص ھو ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 93 Hadith no 7149
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 89 Hadith no 263


حَدَّثَنَا أَبُو نُعَيْمٍ، حَدَّثَنَا أَبُو الأَشْهَبِ، عَنِ الْحَسَنِ، أَنَّ عُبَيْدَ اللَّهِ بْنَ زِيَادٍ، عَادَ مَعْقِلَ بْنَ يَسَارٍ فِي مَرَضِهِ الَّذِي مَاتَ فِيهِ فَقَالَ لَهُ مَعْقِلٌ إِنِّي مُحَدِّثُكَ حَدِيثًا سَمِعْتُهُ مِنْ رَسُولِ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم سَمِعْتُ النَّبِيَّ صلى الله عليه وسلم يَقُولُ ‏"‏ مَا مِنْ عَبْدٍ اسْتَرْعَاهُ اللَّهُ رَعِيَّةً، فَلَمْ يَحُطْهَا بِنَصِيحَةٍ، إِلاَّ لَمْ يَجِدْ رَائِحَةَ الْجَنَّةِ ‏"‏‏.‏


Chapter: The ruler not ruling in an honest manner

Narrated Ma'qil: I heard the Prophet (PBUH) saying, "Any man whom Allah has given the authority of ruling some people and he does not look after them in an honest manner, will never feel even the smell of Paradise." ھم سے ابونعیم نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے ابوالاشھب نے بیان کیا ، ان سے حسن نے کھ عبیداللھ بن زیاد معقل بن یسار رضی اللھ عنھ کی عیادت کے لیے اس مرض میں آئے جس میں ان کا انتقال ھوا ، تو معقل بن یسار رضی اللھ عنھ نے ان سے کھا کھ میں تمھیں ایک حدیث سناتا ھوں جو میں نے رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم سے سنی تھی ۔ آپ نے فرمایا تھا ، جب اللھ تعالیٰ کسی بندھ کو کسی رعیت کا حاکم بناتا ھے اور وھ خیرخواھی کے ساتھ اس کی حفاظت نھیں کرتا تو وھ جنت کی خوشبو بھی نھیں پائے گا ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 93 Hadith no 7150
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 89 Hadith no 264


حَدَّثَنَا إِسْحَاقُ بْنُ مَنْصُورٍ، أَخْبَرَنَا حُسَيْنٌ الْجُعْفِيُّ، قَالَ زَائِدَةُ ذَكَرَهُ عَنْ هِشَامٍ، عَنِ الْحَسَنِ، قَالَ أَتَيْنَا مَعْقِلَ بْنَ يَسَارٍ نَعُودُهُ فَدَخَلَ عُبَيْدُ اللَّهِ فَقَالَ لَهُ مَعْقِلٌ أُحَدِّثُكَ حَدِيثًا سَمِعْتُهُ مِنْ رَسُولِ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم فَقَالَ ‏"‏ مَا مِنْ وَالٍ يَلِي رَعِيَّةً مِنَ الْمُسْلِمِينَ، فَيَمُوتُ وَهْوَ غَاشٌّ لَهُمْ، إِلاَّ حَرَّمَ اللَّهُ عَلَيْهِ الْجَنَّةَ ‏"‏‏.‏

Narrated Ma'qil: Allah's Messenger (PBUH) said, "If any ruler having the authority to rule Muslim subjects dies while he is deceiving them, Allah will forbid Paradise for him." ھم سے اسحاق بن منصور نے بیان کیا ، کھا ھم کو حسین الجعفی نے خبر دی کھ زائدھ نے بیان کیا ، ان سے ھشام نے اور ان سے حسن نے بیان کیا کھ ھم معقل بن یسار رضی اللھ عنھ کی عیادت کے لیے ان کے پاس گئے پھر عبیداللھ بھی آئے تو معقل رضی اللھ عنھ نے ان سے کھا کھ میں تم سے ایک ایسی حدیث بیان کرتا ھوں جسے میں نے رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم سے سنا تھا ۔ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ اگر کوئی شخص مسلمانوں کا حاکم بنایاگیا اور اس نے ان کے معاملھ میں خیانت کی اور اسی حالت میں مرگیا تو اللھ تعالیٰ اس پر جنت کو حرام کر دیتا ھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 93 Hadith no 7151
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 89 Hadith no 265


حَدَّثَنَا إِسْحَاقُ الْوَاسِطِيُّ، حَدَّثَنَا خَالِدٌ، عَنِ الْجُرَيْرِيِّ، عَنِ طَرِيفٍ أَبِي تَمِيمَةَ، قَالَ شَهِدْتُ صَفْوَانَ وَجُنْدَبًا وَأَصْحَابَهُ وَهْوَ يُوصِيهِمْ فَقَالُوا هَلْ سَمِعْتَ مِنْ رَسُولِ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم شَيْئًا قَالَ سَمِعْتُهُ يَقُولُ ‏"‏ مَنْ سَمَّعَ سَمَّعَ اللَّهُ بِهِ يَوْمَ الْقِيَامَةِ ـ قَالَ ـ وَمَنْ يُشَاقِقْ يَشْقُقِ اللَّهُ عَلَيْهِ يَوْمَ الْقِيَامَةِ ‏"‏‏.‏ فَقَالُوا أَوْصِنَا‏.‏ فَقَالَ‏"‏ إِنَّ أَوَّلَ مَا يُنْتِنُ مِنَ الإِنْسَانِ بَطْنُهُ، فَمَنِ اسْتَطَاعَ أَنْ لاَ يَأْكُلَ إِلاَّ طَيِّبًا فَلْيَفْعَلْ، وَمَنِ اسْتَطَاعَ أَنْ لاَ يُحَالَ بَيْنَهُ وَبَيْنَ الْجَنَّةِ بِمِلْءِ كَفِّهِ مِنْ دَمٍ أَهْرَاقَهُ فَلْيَفْعَلْ ‏"‏‏.‏ قُلْتُ لأَبِي عَبْدِ اللَّهِ مَنْ يَقُولُ سَمِعْتُ رَسُولَ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم جُنْدَبٌ قَالَ نَعَمْ جُنْدَبٌ‏.‏


Chapter: Causing people troubles and difficulties

Narrated Tarif Abi Tamima: I saw Safwan and Jundab and Safwan's companions when Jundab was advising. They said, "Did you hear something from Allah's Messenger (PBUH)?" Jundab said, "I heard him saying, 'Whoever does a good deed in order to show off, Allah will expose his intentions on the Day of Resurrection (before the people), and whoever puts the people into difficulties, Allah will put him into difficulties on the Day of Resurrection.'" The people said (to Jundab), "Advise us." He said, "The first thing of the human body to purify is the `Abdomen, so he who can eat nothing but good food (Halal and earned lawfully) should do so, and he who does as much as he can that nothing intervene between him and Paradise by not shedding even a handful of blood, (i.e. murdering) should do so." ھم سے اسحاق واسطی نے بیان کیا ، کھا ھم سے خالد نے ، ان سے جریری نے ، ان سے ظریف ابوتمیمھ نے بیان کیا کھ میں صفوان اور جندب اور ان کے ساتھیوں کے پاس موجود تھا ۔ صفوان اپنے ساتھیوں ( شاگردوں ) کو وصیت کر رھے تھے ، پھر ( صفوان اور ان کے ساتھیوں نے جندب رضی اللھ عنھ سے ) پوچھا ، کیا آپ نے رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم سے کچھ سنا ھے ؟ انھوں نے بیان کیا کھ میں نے آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم کو یھ کھتے سنا ھے کھ جو لوگوں کو ریاکاری کے طور پر دکھانے کے لیے کام کرے گا اللھ قیامت کے دن اس کی ریاکاری کا حال لوگوں کو سنا دے گا اور فرمایا کھ جو لوگوں کو تکلیف میں مبتلا کرے گا اللھ تعالیٰ قیامت کے دن اسے تکلیف میں مبتلا کرے گا ، پھر ان لوگوں نے کھا کھ ھمیں کوئی وصیت کیجئے ۔ انھوں نے کھا کھ سب سے پھلے انسان کے جسم میں اس کا پیٹ سڑتا ھے پس جو کوئی طاقت رکھتا ھو کھ پاک و طیب کے سوا اور کچھ نھ کھائے تو اسے ایسا ھی کرنا چاھئے اور جو کوئی طاقت رکھتا ھو وھ چلو بھر لھو بھاکر ( یعنی ناحق خون کر کے ) اپنے آپ کو بھشت میں جانے سے روکے ۔ جریری کھتے ھیں کھ میں نے ابوعبداللھ سے پوچھا ، کون صاحب اس حدیث میں یھ کھتے ھیں کھ میں نے رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم سے سنا ؟ کیا جندب کھتے ھیں ؟ انھوں نے کھا کھ ھاں وھی کھتے ھیں ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 93 Hadith no 7152
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 89 Hadith no 266


حَدَّثَنَا عُثْمَانُ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ، حَدَّثَنَا جَرِيرٌ، عَنْ مَنْصُورٍ، عَنْ سَالِمِ بْنِ أَبِي الْجَعْدِ، حَدَّثَنَا أَنَسُ بْنُ مَالِكٍ ـ رضى الله عنه ـ قَالَ بَيْنَمَا أَنَا وَالنَّبِيُّ، صلى الله عليه وسلم خَارِجَانِ مِنَ الْمَسْجِدِ فَلَقِيَنَا رَجُلٌ عِنْدَ سُدَّةِ الْمَسْجِدِ فَقَالَ يَا رَسُولَ اللَّهِ مَتَى السَّاعَةُ قَالَ النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ مَا أَعْدَدْتَ لَهَا ‏"‏ فَكَأَنَّ الرَّجُلَ اسْتَكَانَ ثُمَّ قَالَ يَا رَسُولَ اللَّهِ مَا أَعْدَدْتُ لَهَا كَبِيرَ صِيَامٍ وَلاَ صَلاَةٍ وَلاَ صَدَقَةٍ، وَلَكِنِّي أُحِبُّ اللَّهَ وَرَسُولَهُ‏.‏ قَالَ ‏"‏ أَنْتَ مَعَ مَنْ أَحْبَبْتَ ‏"‏‏.‏

Narrated Anas bin Malik: While the Prophet (PBUH) and I were coming out of the mosque, a man met us outside the gate. The man said, "O Allah's Messenger (PBUH)! When will be the Hour?" The Prophet (PBUH) asked him, "What have you prepared for it?" The man became afraid and ashamed and then said, "O Allah's Messenger (PBUH)! I haven't prepared for it much of fasts, prayers or charitable gifts but I love Allah and His Apostle." The Prophet (PBUH) said, "You will be with the one whom you love." ھم سے عثمان بن ابی شیبھ نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے جریر نے بیان کیا ، ان سے منصور نے ، ان سے سالم بن ابی الجعد نے بیان کیا اور ان سے انس بن مالک رضی اللھ عنھ نے کھا کھ میں اور نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم مسجد سے نکل رھے تھے کھ ایک شخص مسجد کی چوکھٹ پر آ کر ھم سے ملا اور دریافت کیا یا رسول اللھ ! قیامت کب ھے ؟ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا ، تم نے قیامت کے لیے کیا تیاری کی ھے ؟ اس پر وھ شخص خاموش سا ھو گیا ، پھر اس نے کھا یا رسول اللھ ! میں نے بھت زیادھ روزے ، نماز اور صدقھ قیامت کے لیے نھیں تیار کئے ھیں لیکن میں اللھ اور اس کے رسول سے محبت رکھتا ھوں ۔ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا تم اس کے ساتھ ھو گے جس سے تم محبت رکھتے ھو ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 93 Hadith no 7153
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 89 Hadith no 267


حَدَّثَنَا إِسْحَاقُ، أَخْبَرَنَا عَبْدُ الصَّمَدِ، حَدَّثَنَا شُعْبَةُ، حَدَّثَنَا ثَابِتٌ الْبُنَانِيُّ، عَنْ أَنَسِ بْنِ مَالِكٍ، يَقُولُ لاِمْرَأَةٍ مِنْ أَهْلِهِ تَعْرِفِينَ فُلاَنَةَ قَالَتْ نَعَمْ‏.‏ قَالَ فَإِنَّ النَّبِيَّ صلى الله عليه وسلم مَرَّ بِهَا وَهْىَ تَبْكِي عِنْدَ قَبْرٍ فَقَالَ ‏"‏ اتَّقِي اللَّهَ وَاصْبِرِي ‏"‏‏.‏ فَقَالَتْ إِلَيْكَ عَنِّي، فَإِنَّكَ خِلْوٌ مِنْ مُصِيبَتِي‏.‏ قَالَ فَجَاوَزَهَا وَمَضَى فَمَرَّ بِهَا رَجُلٌ فَقَالَ مَا قَالَ لَكِ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم‏.‏ قَالَتْ مَا عَرَفْتُهُ قَالَ إِنَّهُ لَرَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم قَالَ فَجَاءَتْ إِلَى بَابِهِ فَلَمْ تَجِدْ عَلَيْهِ بَوَّابًا فَقَالَتْ يَا رَسُولَ اللَّهِ وَاللَّهِ مَا عَرَفْتُكَ‏.‏ فَقَالَ النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ إِنَّ الصَّبْرَ عِنْدَ أَوَّلِ صَدْمَةٍ ‏"‏‏.‏


Chapter: There was no gatekeeper for the Prophet (saws)

Narrated Thabit Al-Bunani: Anas bin Malik said to a woman of his family, "Do you know such-and-such a woman?" She replied, "Yes." He said, "The Prophet (PBUH) passed by her while she was weeping over a grave, and he said to her, 'Be afraid of Allah and be patient.' The woman said (to the Prophet). 'Go away from me, for you do not know my calamity.'" Anas added, "The Prophet (PBUH) left her and proceeded. A man passed by her and asked her, 'What has Allah's Messenger (PBUH) said to you?' She replied, 'I did not recognize him.' The man said, 'He was Allah's Messenger (PBUH)."' Anas added, "So that woman came to the gate of the Prophet (PBUH) and she did not find a gate-keeper there, and she said, 'O Allah's Messenger (PBUH)! By Allah. I did not recognize you!' The Prophet said, 'No doubt, patience is at the first stroke of a calamity.'" ھم سے اسحاق نے بیان کیا ، کھا ھم کو عبدالصمد نے خبر دی ، کھا ھم سے شعبھ نے ، کھا ھم سے ثابت البنانی نے بیان کیا ، ان سے انس بن مالک رضی اللھ عنھ نے کھ وھ اپنے گھر کی ایک عورت سے کھھ رھے تھے فلانی کو پھچانتی ھو ؟ انھوں نے کھا کھ ھاں ۔ بتلایا کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم اس کے پاس سے گزرے اور وھ ایک قبر کے پاس رو رھی تھی ۔ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا اللھ سے ڈر اور صبر کر ۔ اس عورت نے جواب دیا ۔ آپ میرے پاس سے چلے جاؤ ، میری مصیبت آپ پر نھیں پڑی ھے ۔ بیان کیا کھ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم وھاں سے ھٹ گئے اور چلے گئے ۔ پھر ایک صاحب ادھر سے گزرے اور ان سے پوچھا کھ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے تم سے کیا کھا تھا ؟ اس عورت نے کھا کھ میں نے انھیں پھچانا نھیں ۔ ان صاحب نے کھا کھ وھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم تھے ۔ پھر وھ عورت آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم کی خدمت میں حاضر ھوئی ۔ انھوں نے آپ کے یھاں کوئی دربان نھیں پایا پھر عرض کیا یا رسول اللھ ! میں نے آپ کو پھچانا نھیں ۔ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ صبر تو صدمھ کے شروع میں ھی ھوتا ھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 93 Hadith no 7154
Web reference: Sahih Bukhari Volume 9 Book 89 Hadith no 268



@2019 Copyrights: if you have any objection regarding any shared content on pdf9.com please click here.