Search hadith by
Hadith Book
Search Query
Search Language
English Arabic Urdu
Search Type Basic    Case Sensitive
 

Sahih Bukhari

Oaths and Vows

كتاب الأيمان والنذور

حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ مُقَاتِلٍ أَبُو الْحَسَنِ، أَخْبَرَنَا عَبْدُ اللَّهِ، أَخْبَرَنَا هِشَامُ بْنُ عُرْوَةَ، عَنْ أَبِيهِ، عَنْ عَائِشَةَ، أَنَّ أَبَا بَكْرٍ ـ رضى الله عنه ـ لَمْ يَكُنْ يَحْنَثُ فِي يَمِينٍ قَطُّ، حَتَّى أَنْزَلَ اللَّهُ كَفَّارَةَ الْيَمِينِ وَقَالَ لاَ أَحْلِفُ عَلَى يَمِينٍ فَرَأَيْتُ غَيْرَهَا خَيْرًا مِنْهَا، إِلاَّ أَتَيْتُ الَّذِي هُوَ خَيْرٌ، وَكَفَّرْتُ عَنْ يَمِينِي‏.‏


Chapter: "Allah will not punish you for what is unintentional in your oaths, but He will punish you for your deliberate oaths ..."

Narrated `Aisha: Abu Bakr As-Siddiq had never broken his oaths till Allah revealed the expiation for the oaths. Then he said, "If I take an oath to do something and later on I find something else better than the first one, then I do what is better and make expiation for my oath." ھم سے ابوالحسن محمد بن مقاتل مروزی نے بیان کیا ، کھا ھم کو عبداللھ بن مبارک نے خبر دی ، کھا ھم کو ھشام بن عروھ نے خبر دی ، انھیں ان کے والد نے اور انھیں حضرت عائشھ رضی اللھ عنھا نے کھ ابوبکر رضی اللھ عنھ کبھی اپنی قسم نھیں توڑتے تھے ، یھاں تک کھ اللھ تعالیٰ نے قسم کاکفارھ اتارا ۔ اس وقت انھوں نے کھا کھ اب اگر میں کوئی قسم کھاؤں گا اور اس کے سوا کوئی چیز بھلائی کی ھو گی تو میں وھی کام کروں گا جس میں بھلائی ھو اور اپنی قسم کا کفارھ دے دوں گا ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 83 Hadith no 6621
Web reference: Sahih Bukhari Volume 8 Book 78 Hadith no 618


حَدَّثَنَا أَبُو النُّعْمَانِ، مُحَمَّدُ بْنُ الْفَضْلِ حَدَّثَنَا جَرِيرُ بْنُ حَازِمٍ، حَدَّثَنَا الْحَسَنُ، حَدَّثَنَا عَبْدُ الرَّحْمَنِ بْنُ سَمُرَةَ، قَالَ قَالَ النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ يَا عَبْدَ الرَّحْمَنِ بْنَ سَمُرَةَ لاَ تَسْأَلِ الإِمَارَةَ، فَإِنَّكَ إِنْ أُوتِيتَهَا عَنْ مَسْأَلَةٍ وُكِلْتَ إِلَيْهَا، وَإِنْ أُوتِيتَهَا مِنْ غَيْرِ مَسْأَلَةٍ أُعِنْتَ عَلَيْهَا، وَإِذَا حَلَفْتَ عَلَى يَمِينٍ فَرَأَيْتَ غَيْرَهَا خَيْرًا مِنْهَا، فَكَفِّرْ عَنْ يَمِينِكَ، وَأْتِ الَّذِي هُوَ خَيْرٌ ‏"‏‏.‏

Narrated `Abdur-Rahman bin Samura: The Prophet (PBUH) said, "O `Abdur-Rahman bin Samura! Do not seek to be a ruler, because if you are given authority for it, then you will be held responsible for it, but if you are given it without asking for it, then you will be helped in it (by Allah): and whenever you take an oath to do something and later you find that something else is better than the first, then do the better one and make expiation for your oath." ھم سے ابونعمان محمد بن فضل سدوسی نے بیان کیا ، کھا ھم سے جریر بن حازم نے بیان کیا ، کھا ھم سے امام حسن بصری نے بیان کیا ، کھا ھم سے عبدالرحمٰن بن سمرھ رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا ، اے عبدالرحمٰن بن سمرھ ! کبھی کسی حکومت کے عھدھ کی درخواست نھ کرنا کیونکھ اگر تمھیں یھ مانگنے کے بعد ملے گا تو اللھ پاک اپنی مدد تجھ سے اٹھالے گا ۔ تو جان ، تیرا کام جانے اور اگر وھ عھدھ تمھیں بغیر مانگے مل گیا تو اس میں اللھ کی طرف سے تمھاری اعانت کی جائے گی اور جب تم کوئی قسم کھا لو اور اس کے سوا کسی اور چیز میں بھلائی دیکھو تو اپنی قسم کا کفارھ دے دو اور وھ کام کرو جو بھلائی کا ھو ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 83 Hadith no 6622
Web reference: Sahih Bukhari Volume 8 Book 78 Hadith no 619


حَدَّثَنَا أَبُو النُّعْمَانِ، حَدَّثَنَا حَمَّادُ بْنُ زَيْدٍ، عَنْ غَيْلاَنَ بْنِ جَرِيرٍ، عَنْ أَبِي بُرْدَةَ، عَنْ أَبِيهِ، قَالَ أَتَيْتُ النَّبِيَّ صلى الله عليه وسلم فِي رَهْطٍ مِنَ الأَشْعَرِيِّينَ أَسْتَحْمِلُهُ فَقَالَ ‏"‏ وَاللَّهِ لاَ أَحْمِلُكُمْ، وَمَا عِنْدِي مَا أَحْمِلُكُمْ عَلَيْهِ ‏"‏‏.‏ قَالَ ثُمَّ لَبِثْنَا مَا شَاءَ اللَّهُ أَنْ نَلْبَثَ، ثُمَّ أُتِيَ بِثَلاَثِ ذَوْدٍ غُرِّ الذُّرَى فَحَمَلَنَا عَلَيْهَا فَلَمَّا انْطَلَقْنَا قُلْنَا أَوْ قَالَ بَعْضُنَا وَاللَّهِ لاَ يُبَارَكُ لَنَا، أَتَيْنَا النَّبِيَّ صلى الله عليه وسلم نَسْتَحْمِلُهُ، فَحَلَفَ أَنْ لاَ يَحْمِلَنَا ثُمَّ حَمَلَنَا، فَارْجِعُوا بِنَا إِلَى النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم فَنُذَكِّرُهُ، فَأَتَيْنَاهُ فَقَالَ ‏"‏ مَا أَنَا حَمَلْتُكُمْ، بَلِ اللَّهُ حَمَلَكُمْ، وَإِنِّي وَاللَّهِ إِنْ شَاءَ اللَّهُ لاَ أَحْلِفُ عَلَى يَمِينٍ فَأَرَى غَيْرَهَا خَيْرًا مِنْهَا، إِلاَّ كَفَّرْتُ عَنْ يَمِينِي، وَأَتَيْتُ الَّذِي هُوَ خَيْرٌ ‏"‏‏.‏ أَوْ ‏"‏ أَتَيْتُ الَّذِي هُوَ خَيْرٌ وَكَفَّرْتُ عَنْ يَمِينِي ‏"‏‏.‏

Narrated Abu Musa: I went to the Prophet (PBUH) along with a group of Al-Ash`ariyin in order to request him to provide us with mounts. He said, "By Allah, I will not provide you with mounts and I haven't got anything to mount you on." Then we stayed there as long as Allah wished us to stay, and then three very nice looking she-camels were brought to him and he made us ride them. When we left, we, or some of us, said, "By Allah, we will not be blessed, as we came to the Prophet (PBUH) asking him for mounts, and he swore that he would not give us any mounts but then he did give us. So let us go back to the Prophet (PBUH) and remind him (of his oath)." When we returned to him (and reminded him of the fact), he said, "I did not give you mounts, but it is Allah Who gave you. By Allah, Allah willing, if I ever take an oath to do something and then I find something else than the first, I will make expiation for my oath and do the thing which is better (or do something which is better and give the expiation for my oath). ھم سے ابوالنعمان نے بیان کیا ، کھا ھم سے حماد بن زید نے بیان کیا ، ان سے غیلان بن جریر نے ، ان سے ابوھریرھ رضی اللھ عنھ نے ، ان سے ان کے والد نے بیان کیا کھ میں اشعری قبیلھ کی ایک جماعت کے ساتھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم کی خدمت میں حاضر ھوا اور آپ سے سواری مانگی ۔ آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ واللھ ، میں تمھارے لئے سواری کا کوئی انتظام نھیں کر سکتا اور نھ میرے پاس کوئی سواری کا جانور ھے ۔ بیان کیا پھر جتنے دنوں اللھ نے چاھا ھم یونھی ٹھھرے رھے ۔ اس کے بعد تین اچھی قسم کی اونٹنیاں لائی گئیں اور آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے انھیں ھمیں سواری کے لئے عنایت فرمایا ۔ جب ھم روانھ ھوئے تو ھم نے کھا یا ھم میں سے بعض نے کھا ، واللھ ! ھمیں اس میں برکت نھیں حاصل ھو گی ۔ ھم آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم کی خدمت میں سواری مانگنے آئے تھے تو آپ نے قسم کھا لی تھی کھ آپ ھمارے لئے سواری کا انتظام نھیں کر سکتے ۔ اور اب آپ نے ھمیں سواری عنایت فرمائی ھے ھمیں آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم کے پاس جانا چاھئے اور آپ کو قسم یاد دلانی چاھئے ۔ چنانچھ ھم آپ کی خدمت میں حاضر ھوئے تو آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ میں نے تمھاری سواری کا کوئی انتظام نھیں کیا ھے بلکھ اللھ تعالیٰ نے یھ انتظام کیا ھے اور میں ، واللھ ! کوئی بھی اگر قسم کھا لوں گا اور اس کے سوا کسی اور چیز میں بھلائی دیکھوں گا تو اپنی قسم کا کفارھ دے دوں گا ۔ جس میں بھلائی ھو گی یا آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے یوں فرمایا کھ وھی کروں گا جس میں بھلائی ھو گی اور اپنی قسم کا کفارھ ادا کر دوں گا ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 83 Hadith no 6623
Web reference: Sahih Bukhari Volume 8 Book 78 Hadith no 620


حَدَّثَنِي إِسْحَاقُ بْنُ إِبْرَاهِيمَ، أَخْبَرَنَا عَبْدُ الرَّزَّاقِ، أَخْبَرَنَا مَعْمَرٌ، عَنْ هَمَّامِ بْنِ مُنَبِّهٍ، قَالَ هَذَا مَا حَدَّثَنَا أَبُو هُرَيْرَةَ، عَنِ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم قَالَ ‏"‏ نَحْنُ الآخِرُونَ السَّابِقُونَ يَوْمَ الْقِيَامَةِ ‏"‏‏.‏

Narrated Abu Huraira: The Prophet (PBUH) said, "We (Muslims) are the last in the world, but will be foremost on the Day of Resurrection." مجھ سے اسحاق بن ابراھیم نے بیان کیا ، کھا ھم کو عبدالرزاق نے خبر دی ، کھا ھم کو معمر نے خبر دی ، ان سے ھمام بن منبھ نے بیان کیا کھ یھ وھ حدیث ھے جو ھم سے ابوھریرھ رضی اللھ عنھ نے بیان کی کھ نبی کریم صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ ” ھم آخری امت ھیں اور قیامت کے دن جنت میں سب سے پھلے داخل ھوں گے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 83 Hadith no 6624
Web reference: Sahih Bukhari Volume 8 Book 78 Hadith no 621


فَقَالَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ وَاللَّهِ لأَنْ يَلِجَّ أَحَدُكُمْ بِيَمِينِهِ فِي أَهْلِهِ آثَمُ لَهُ عِنْدَ اللَّهِ مِنْ أَنْ يُعْطِيَ كَفَّارَتَهُ الَّتِي افْتَرَضَ اللَّهُ عَلَيْهِ ‏"‏‏.‏

Allah's Messenger (PBUH) also said: "By Allah, if anyone of you insists on fulfilling an oath by which he may harm his family, he commits a greater sin in Allah's sight than that of dissolving his oath and making expiation for it." sanad پھر آنحضرت صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا کھ واللھ ( بسا اوقات ) اپنے گھر والوں کے معاملھ میں تمھارا اپنی قسموں پر اصرار کرتے رھنا اللھ کے نزدیک اس سے زیادھ گناھ کی بات ھوتی ھے کھ ( قسم توڑ کر ) اس کا وھ کفارھ ادا کر دیا جائے جو اللھ تعالیٰ نے اس پر فرض کیا ھے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 83 Hadith no 6625
Web reference: Sahih Bukhari Volume 8 Book 78 Hadith no 621


حَدَّثَنِي إِسْحَاقُ يَعْنِي ابْنَ إِبْرَاهِيمَ، حَدَّثَنَا يَحْيَى بْنُ صَالِحٍ، حَدَّثَنَا مُعَاوِيَةُ، عَنْ يَحْيَى، عَنْ عِكْرِمَةَ، عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ، قَالَ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ مَنِ اسْتَلَجَّ فِي أَهْلِهِ بِيَمِينٍ فَهْوَ أَعْظَمُ إِثْمًا، لِيَبَرَّ ‏"‏‏.‏ يَعْنِي الْكَفَّارَةَ‏.‏

Narrated Abu Huraira: Allah's Messenger (PBUH) said, "Anyone who takes an oath through which his family may be harmed, and insists on keeping it, he surely commits a sin greater (than that of dissolving his oath). He should rather compensate for that oath by making expiation." مجھ سے اسحاق یعنی ابن ابراھیم نے بیان کیا ، کھا ھم سے یحییٰ بن صالح نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے معاویھ نے بیان کیا ، انھوں نے کھا ھم سے یحییٰ نے ، ان سے عکرمھ نے اور ان سے ابوھریرھ رضی اللھ عنھ نے بیان کیا کھ رسول اللھ صلی اللھ علیھ وسلم نے فرمایا ، وھ شخص جو اپنے گھر والوں کے معاملھ میں قسم پر اڑا رھتا ھے وھ اس سے بڑا گناھ کرتا ھے کھ اس قسم کا کفارھ ادا کر دے ۔

Share »

Book reference: Sahih Bukhari Book 83 Hadith no 6626
Web reference: Sahih Bukhari Volume 8 Book 78 Hadith no 622



Copyrights: if you have any objection regarding any shared content on pdf9.com please click here.